وزیر اعظم پارلیمان میں آ کر یہ کام کریں۔۔۔سینیٹر شیری رحمان نے شدید تنقید کرتے ہوئے ایسا مطالبہ کر دیا کہ عمران خان بھی سوچ میں پڑ جائیں گے

وزیر اعظم پارلیمان میں آ کر یہ کام کریں۔۔۔سینیٹر شیری رحمان نے شدید تنقید ...
وزیر اعظم پارلیمان میں آ کر یہ کام کریں۔۔۔سینیٹر شیری رحمان نے شدید تنقید کرتے ہوئے ایسا مطالبہ کر دیا کہ عمران خان بھی سوچ میں پڑ جائیں گے

  

اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان پیپلز پارٹی کی پارلیمانی لیڈر سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم کہاں ہیں؟ وزیراعظم اور اس کی پالیسی لاپتہ ہے، ملک کو کون چلا رہا ہے؟ وزیر اعظم کورونا سے نہیں ڈرتے آئینی فورم سے ڈرتے ہیں، وزیراعظم عمران خان  خود پارلیمان میں آئیں اور اپنی پالیسی بیان کریں۔

تفصیلات کے مطابق شیری رحمان نے  قومی اسمبلی اور سینیٹ میں وزیراعظم کی عدم موجودگی پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم لاپتہ افراد میں شامل ہیں اور ان کی پالیسی لا پتہ ہے،اس مشکل گھڑی میں وزیراعظم کیوں لاپتہ ہیں اور ملک کون چلا رہا ہے؟۔شیری رحمان نے کہا کے لاک ڈاؤن کھل گیا ہے لوگ عید کی خریداری کر رہے، لوگ ایس او پیز نہیں مان رہے کیوںکہ حکومت نے شروع سے ملا جلا ردعمل دیا ہے،حکومت کبھی کہتی ہے یہ سنجیدہ معاملہ ہے کبھی کہتے ہیں کوئی مسئلہ نہیں۔

سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ اس وقت ساری دنیا سندھ حکومت کی کارکردگی کو سرہا رہی ہے لیکن پی ٹی آئی حکومت کی جانب سے روز بد تمیزی کا طوفان برپا کیا جاتا ہے،ایسا لگتا ہے پیپلز پارٹی نے 18 ویں ترمیم دے کر کوئی گناہ کر دیاہے،طبی ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ ملک کی پچاس فیصد آبادی وائرس سے متاثر ہو سکتی ہے اور ہمارے پاس ہسپتالوں میں بیڈ اور وینٹی لیٹرز کم پڑ جائے گے،آپ امریکہ اور برطانیہ کی غلطیوں سے سیکھے۔ سینٹر شیری رحمان نے کہا کے 18ویں ترمیم پر ابھی بات کرنے کا وقت نہیں، اس وقت صرف کورونا پر بات کرنی چاہئے، ہماری بجٹ میں ہماری ترجیحات تبدیل ہونی چاہئے۔شیری رحمان نے کہا کے پارلیمانی پارٹی اجلاس میں وزیراعظم کچھ سنا کر چلے گئے اور قومی یکجہتی قائم نہیں کر سکے،وزیراعظم پیغام دے رہے کے پارلیمان غیر معنی ہے۔ شیری رحمان کا مطالبہ کیا کہ وزیر اعظم پارلیمان میں آ کر اپنی پالیسی بیان کریں۔

مزید :

قومی -