عید سے قبل تھیٹر نہ کھلے توگرفتاریاں پیش کرینگے،فنکار

عید سے قبل تھیٹر نہ کھلے توگرفتاریاں پیش کرینگے،فنکار

  

لاہور(فلم رپورٹر)حکومت نے عید پر تھیٹرزکھولنے کی اجازت نہ دی تو ملک بھرکے فنکار گرفتاریاں پیش کریں گے۔ افسوس کی بات ہے کہ حکومت کورونا کی اس صورتحال میں دوکانداروں کی بات کرتی ہے مزدورں کی بات کرتی ہے لیکن فنکاروں کی ابھی تک کسی نے کوئی بات نہیں کی۔ وزیر اعلیٰ پنجاب کی جانب سے فنکاروں کی مدد کا صرف اعلان کیا گیا جبکہ عملی طور پر اس سلسلہ میں کسی بھی فنکارکو ابھی تک ایک روپیہ کی بھی مدد نہیں ملی۔ان خیالات کا اظہار سٹیج سے وابستہ سینئر فنکاروں‘پروڈیوسرزاوردیگر تیکنیک کاروں نے تماثیل تھیٹرمیں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ نسیم وکی‘قیصر ثناء اللہ،افتخار ٹھاکر،امانت چن،قیصر پیا،نوازانجم،طاہر انجم،شاہد خان،پرویز خان،طاہر انجم،راحیل شاہ وارثی،ظفر ارشاد،سرفرازوکی،شکیل چن اور ڈاکٹر اجمل ملک نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت تھیٹرانڈسٹری کو بری طرح نظرانداز کررہی ہے ہم کروڑوں روپے کا ٹیکس دیتے ہیں تمام حکومتی ایس اوپیز کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمیں بھی عید پر تھیٹرزکھولنے کی اجازت دی جائے۔ فنکاروں کے ساتھ ساتھ تھیٹر انڈسٹری سے وابستہ ہزاروں لوگ کرونا کی اس صورتحال میں بری طرح پریشانی سے دوچار ہے آج تک انہیں کسی نے نہیں پوچھا علی عیسیٰ اینڈ کمپنی کے سخی سرور بٹ واحد شخض ہیں جن کی وجہ سے ابھی تک فنکاروں اور تیکنیک کاروں کے چولہے جل رہے ہیں پروڈیوسر قیصر ثناء اللہ کا کہنا تھاکہ آج پورے ملک سے پروڈیوسرز اورفنکاریہاں اپناحق لینے کیلئے اکٹھے ہوئے ہیں اور ہم حکومت کو بتانا چاہتے ہیں کہ ہم بھی اس ملک کا ایک اہم طبقہ ہیں ہمیں نظر اندازکرنے کی پالیسی اب نہیں چلے گی ہم ہر صورت تمام حفاظتی ایس اوپیز کو مدنظر رکھتے ہوئے عید پر ڈرامہ کریں گے۔یاد رہے کہ عید پر تھیٹر کھولنے کے حوالے سے فنکار دو دھڑوں میں تقسیم ہوچکے ہیں مندرجہ بالا فنکاروں کے مخالف دھڑے کا کہنا ہے کہ جب تک ضابطہ اخلاق نہ بنایا جا ئے اس وقت تک تھیٹر نہ کھولے جائیں۔

مزید :

کلچر -