پرائیویٹ سکول ایسوسی ایشنز کا یکم جون سے سکولز کھولنے کا حتمی فیصلہ

  پرائیویٹ سکول ایسوسی ایشنز کا یکم جون سے سکولز کھولنے کا حتمی فیصلہ

  

ملتان (سٹاف رپورٹر)پرائیویٹ سکول ایسوسی ایشنز نے یکم جون سے سکولز کھولنے کا فیصلہ کرلیا، بتایا گیا ہے کہ پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن کے ایک اجلا س میں کورونا ایس او پیز کے تحت یکم جون سے سکول کھولنے پر غور کیا گیا، مشترکہ اجلاس میں ملک بھر کی ایسوسی ایشنز کا وبا سے پھیلاؤسے بچاؤکیلئے حکومتی اقدامات پر بھر پور تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی۔اجلاس(بقیہ نمبر52صفحہ6پر)

میں پرائیویٹ سکولز کے مالکان اور اساتذہ کے لئے وزیر تعلیم کی طرف سے مافیا کے الفاظ استعمال کرنے کی سختی سے مذمت کی گئی۔ اجلاس کے شرکا کا کہنا تھا کہ حکومت جو بھی ایس او پیز جاری کرے گی‘ تمام سکولز اس پر عمل پیرا ہونے کے پابند ہوں گے۔

سیکرٹری اوقاف کادربارسخی سرور کادورہ،ترقیاتی کاموں کاجائزہ

سخی سرور (نامہ نگار) سیکرٹری اوقاف پنجاب چیف ایڈمنسٹریٹرز اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد کے زونل ایڈمنسٹریٹر ایکسین ایس ڈی اوز ڈسٹرکٹ مینیجر اوقاف سمیت دیگر افسران کے ہمراہ دربار سخی سرور کا دورہ کیا۔سیکرٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے درگاہ پر جاری ترقیاتی کاموں کا جائزہ لیا۔زائرین کمپلیکس ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر آفس مقدس مقامات اور دیگر جگہوں (بقیہ نمبر53صفحہ6پر)

کا پیدل تفصیلی جائزہ لیا۔زونل ایڈمنسٹریٹرز اوقاف ایکسین ایس ڈی اوز نے ترقیاتی کاموں بارے میں سیکرٹری اوقاف پنجاب کو بریفنگ دی۔سیکرٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے زونل ایڈمنسٹریٹر اوقاف ڈیرہ غازی خان ڈویڑن چوہدری طاہر احمد خان ایکسین ایس ڈی اوز ڈسٹرکٹ مینیجر اوقاف شہباز احمد سمیت دیگر افسران کے ہمراہ جنوبی پنجاب کی بڑی دربار حضرت سخی سرور کا دورہ کرتے ہوئے درگاہ پر جاری ترقیاتی کاموں کا جائزہ لیتے ہوئے کوالٹی میٹریل اور کیے جانے والے کاموں کو تفصیلی چیک کیا۔وائٹ واش اور دیگر کاموں صحیح نہ ہونے سیکرٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے سخت برہمی کا اظہار کیاہے۔ ٹھیکیداروں کو کام معیاری بہتر اور تیزی سے کرنے کی ہدایت کی سیکریٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے مقامی مجاوروں کی شکایات پر مزار اقدس کے گرد جالی لگانے کی ہدایت کرتے ہوئے فوری طور اسٹیمٹ تیار کرکے صدر دفتر بھجوانے کی ہدایت دی۔ سیکریٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے دربار سخی سرور کا مکمل تفصیلی وزٹ کرنے کے بعد زائرین کمپلیکس ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر آفس اول مقام چلہ گاہ درگاہ کے عقبی حصے کا معائنہ کیا۔ سیکریٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے زائرین کمپلیکس میں ترقیاتی کام مناسب نہ ہونے پر ایکسین ایس ڈی اوز ٹھیکیدار کی سختی سے سرزنش کرتے ہوئے فوری طور معیاری کام کرنے کی ہدایت کی کہ کوالٹی اور معیاری کام نہ ہونے پر کاروائی ہوگی۔سیکرٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے ترقیاتی کاموں کو تیزی سے کرنے کی ہدایت کی۔ سیکریٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے دربار سخی سرور کے پانی کے بور کے لیے ٹربائن کے مختلف مقامات کا جائزہ لیا۔ سیکرٹری اوقاف پنجاب ڈاکٹر ارشاد احمد نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دربار سخی سرور جنوبی پنجاب کی بڑی دربار ہے۔زائرین کو ہر محکمہ اوقاف ہر ممکن سہولیات فراہم کرتے ہوئے درگاہ کو خوب صورت بنا رہا ہے۔وزیر اعلیٰ پنجاب کی بھی دربار سخی سرور پر خصوصی توجہ ہے۔درگاہ کے تمام مسائل حل کریں گے۔ مقامی مجاوروں کی جانب سے جو مسائل کی نشاندھی کی گئی ہے اس پر کام ہوگا۔

جائزہ

چیف جسٹس سپریم کورٹ از خود نوٹس لیکر الگ صوبے کامسئلہ حل کرائیں، سرائیکی رہنما

ملتان (سٹی رپورٹر)سرائیکستان صوبہ محاذ کے رہنماؤں کرنل عبدالجبار خان عباسی، خواجہ غلام فرید کوریجہ، اکبر خان ملکانی، پروفیسر شوکت مغل، عاشق بزدار، مہر مظہر کات، ظہور دھریجہ، ملک خضر حیات ڈیال نے کہا ہے کہ نشتر ہسپتال ملتان میں کورونا اموات میں اضافہ ہو رہا ہے، بیماری پھیل رہی ہے، بیرون ملک خصوصاً چین سے آنے والی طبی امداد براہ راست ملتان بھیجی(بقیہ نمبر33صفحہ7پر)

جائے کہ حکومت نے وسیب کے ساتھ زیادتی کرتے ہوئے ملک کا سب سے قرنطینہ سنٹر ملتان میں بنا دیا۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ وسائل اور مسائل کی برابر تقسیم ہونی چاہئے، وسیب کو بیگار کیمپ نہ بنایا جائے، بلکہ اسے بھی برابر حصہ دیا جائے۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ کتنے افسوس کی بات ہے کہ قلیل آبادی کے شہر گلگت اور مظفر آباد بگ سٹی بن چکے ہیں جبکہ ملتان، بہاولپور، ڈی جی خان، رحیم یار خان کو بگ سٹی نہیں بنایا جا رہا۔ انہوں نے کہا کہ حالانکہ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی اور سابق وزیراعلیٰ شہباز شریف نے ملتان آ کر مشترکہ طور پر ملتان کو بگ سٹی قرار دیا تھا اور اعلان کیا تھا کہ اب ملتان شہر کے ملازمین کو وہ تمام سہولتیں اور مراعات حاصل ہونگی جو کہ دوسرے بگ سٹی کو حاصل ہیں، مگر حکمرانوں کا ہر وعدہ جھوٹ کا پلندہ ثابت ہوتا آ رہا ہے۔ موجودہ حکمرانوں نے بھی سو دن میں صوبہ بنانے کا وعدہ کیا جو پورا نہ ہوا، پھر وہ سب سول سیکرٹریٹ کا لولی پاپ دے آئے، رواں مالی سال کے بجٹ میں تین ارب روپے رکھے گئے اور مالی سال ختم ہونے کے قریب ہے، ابھی تک ایک روپیہ بھی خرچ نہیں ہوا۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ وسیب کے لوگوں کے ساتھ مذاق بند کیا جائے، وسیب کے لوگ خیرات نہیں اپنا حق مانگتے ہیں اور ان کا مطالبہ الگ ملک کا نہیں بلکہ صوبے کا ہے، جس کے لیے سینیٹ سے دو تہائی اکثریت کے ساتھ بل پاس ہو چکا ہے۔ ہمارا چیف جسٹس سپریم کورٹ سے مطالبہ ہے کہ وہ از خود نوٹس لے کر سرائیکی صوبے کا مسئلہ حل کرائیں کہ آئین ساز ادارے ایوان بالا میں دو تہائی اکثریت کے ساتھ صوبے کا بل پاس کر کے صوبے کو آئینی تحفظ دے دیا ہے۔ سپریم کورٹ صوبے کا وعدہ کرنے والوں سے جواب طلب کرے کہ انہوں نے آئینی عمل کو آگے کیوں نہیں بڑھایا اور وہ کیوں لیت و لعل سے کام لے رہے ہیں۔ سرائیکی رہنماو?ں نے کہا کہ ہماری شناخت اور جغرافیے کے مطابق صوبہ نہ بنایا گیا تو عید کے بعد احتجاجی تحریک شروع کر دیں گے۔

سول ہسپتال عبدالحکیم میں 4834مریضوں

کاعلاج، 44کو لیب ٹیسٹ کی سہولت

فراہم،23افراددوسرے شہرمنتقل، سینئر

میڈیکل آفیسر ڈاکٹر امجد علی کی بریفنگ

عبدالحکیم(سٹی رپورٹر) سول ہسپتال عبدالحکیم میں گزشتہ ماہ4834مریضوں کا علاج کیا گیا،44 کولیب ٹیسٹ کی سہولیات،23مریضوں کو بڑے ہسپتال میں (بقیہ نمبر37صفحہ6پر)

ریفر کیا گیا،سینئرمیڈیکل آفیسر ڈاکٹرامجد علی کمبوہ نے بتایا کہ انہوں نے سول ہسپتال عبدالحکیم میں گزشتہ ماہ ڈاکٹرابوبکر،ڈاکٹر نورالصیام،لیڈی ڈاکٹرزہرہ اختر اورپیرامیڈیکس محمداعجاز،محمد یاسین،محمودطارق،نصرت علی،لیب ٹیکنیشن زاہد امین،ایکسرے ٹیکنیشن خضرعباس اور محمد حفیظ ارشد پرمشتمل ٹیم کے ہمراہ4834مریضوں کا علاج معالجہ کیا جس میں 4567مریض آؤٹ ڈور اور 267کوان ڈورمیں طبی سہولیات دی گئیں،194ایمبرجنسی مریض دیکھے گئے جس میں 34روڈ ایکسیڈنٹ کو فرسٹ ایڈ دی گئی،22افراد کتے کے کاٹے کے ہسپتال لائے گئے جبکہ4 جلنے کے واقعات رونما ہوئے،35خواتین مریضوں کی نارمل ڈلیوریاں کی گئیں، علاوہ ازیں ہسپتال ہٰذا میں 44لیبارٹری ٹیسٹ بھی کئے گئے ٹی بی کے 60مریضوں کے ٹیسٹ ہوئے 2کیسز پازیٹیو نکلے، 43مریضوں کا الٹراساؤنڈ ہوا،3مریضوں کو ای سی جی کی سہولت دی گئی،87 مریضوں کے ایکسرے ہوئے اور21مریضوں کو ڈینٹل فزیشن نے چیک کرکے علاج کی سہولیات دیں،24 فیملی پلاننگ جبکہ124حاملہ خواتین مریضوں کو ہسپتال میں چیک کیا گیا، 23مریضوں کو فرسٹ ایڈ دیکر ڈی ایچ کیو ہسپتال خانیوال اور نشتر ہسپتا ل ملتان شفٹ کیا گیا، انہوں نے مزید بتایا کہ محدود سوسائل کے باوجودحکومتی ہدایات کے تحت کورونا وباء سے بچاؤ کی حفاظتی تدابیر پر عمل پیراہوتے ہوئے مریضوں کا علاج جاری رکھا گیاہے اسکے علاوہ گزشتہ ماہ اسسٹنٹ کمشنر کبیروالااور ڈپٹی کمشنرخانیوال نے ہسپتال ہٰذا کے دوروں کے دوران مجموعی کارکردگی پر اظہارِاطمینان کیاہے۔

دھنوٹ: کرونا ایک اورکیس سامنے آنے پر شہری خوفزدہ، نمونے لیبارٹری روانہ

دھنوٹ(نمائندہ خصوصی) دھنوٹ میں کرونا کا ایک اور کیس سامنے آگیا۔شہری سہم گئے ہیں۔تفصیل کے مطابق کانسٹیبل شہباز ولد جمیل راجپوت جو کہ محلہ راجپوتاں (بقیہ نمبر38صفحہ6پر)

دھنوٹ شہر میں رہائش پذیر ہے۔ اس کی کرونا رپورٹ گزشتہ روز پازیٹیو آگئی تھی۔ ڈپٹی ڈی ایچ او رشید انجم،تحصیل کہروڑ پکافوکل پرسن اشتیاق احمد جام،ندیم عباس بھٹی،غلام حسین انجم اور فاروق رضا پر مشتمل محکمہ صحت کی ٹیم نے شہباز کی فیملی کے 12افراد کے نمونے حاصل کر کے ملتان لیبارٹری میں بھجوا دیئے ہیں۔دوسرا کیس سامنے آنے پر دھنوٹ کے شہری سہم گئے ہیں۔ کچھ لوگوں نے احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا شروع کر دیا ہے مگر بازار اور دکانوں پر بغیر ماسک استعمال کئے لوگوں کی آمد ورفت جاری ہے۔

روانہ

رحیم یارخان: کرونا وائرس کے

شبہ پر 53سالہ شخص ہسپتال منتقل

رحیم یار خان (بیورورپورٹ) کرونا وائرس کے شبہ پر 53 سالہ شخص ہسپتال منتقل کردیا گیاہے، تفصیل کے مطابق گلشن اقبال کے رہائشی 53 سالہ عبدالشکور کو کرونا وائرس کے(بقیہ نمبر39صفحہ6پر)

شبہ میں ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں انتظامیہ نے تصدیق کیلئے خون کے نمونہ جات لیبارٹری روانہ کرتے ہوئے عبدالشکور کو قرنطینہ سینٹر منتقل کر دیا۔

منتقل

چوری مقدمہ: ایس ایچ او جام پور اوردیگر اہلکاروں کو جرمانہ اداکرنیکا حکم

ملتان (خصو صی رپورٹر )ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج جسٹس چوہدری عبدالعزیز نے چوری کے مقدمہ میں ایس ایچ او جام پور سب انسپکٹر زبیر، اے ایس آئیز اللّٰہ وسایا(بقیہ نمبر40صفحہ6پر)

اور اختر کو ایک ایک لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کی سزا کا حکم دیا ہے چونکہ تینوں افسران عدالت کو مطمئن کرنے میں ناکام رہے۔ فاضل عدالت نے مقدمہ نمبر 8/20۔109/20.

بجرم 458_380_411تھانہ جام پور میں پیروی پر پیش ہونے والے پولیس اہلکاروں کو جرمانہ ادا کرنے کا حکم دیا ہے۔ یاد رہے کہ اس مقدمہ میں ملزمان غلام اصغر ولد صادق، ظفر ولد صادق اور عابد ولد صادق ملوث ہیں جن پر چوری کے مقدمات درج ہیں۔ عدالت عالیہ نے مندرجہ بالا افسران سے استفسار کیا تو مزکورہ افسران معزز عدالت کو مطمئن نہ کرسکے جس پر عدالت نے اظہار برہمی کرتے ہوئے تینوں افسران کو بالترتیب ایک ایک لاکھ روپے جرمانے کیے۔ سماعت پر ڈی پی او راجن پور کو طلب کیا گیا جنہوں نے پیش ہوکر معذرت کی لیکن پھر بھی جرمانہ معاف نہیں کیا گیا۔

خانقاہ شریف: کرونا کا خوف، ڈاکٹر

کامریضوں کوچیک کرنے سے انکار

سمہ سٹہ ( نامہ نگار) آر ایچ سی خانقاہ شریف سمہ سٹہ انچارج ڈاکٹر عامر ریاض خواجہ نے کرونا کی آڑ میں مریضوں کا چیک اپ کرنا چھوڑ دیا مریضوں کے ساتھ انتہائی ہتک آمیز(بقیہ نمبر41صفحہ6پر)

رویہ صرف چند مریض دیکھ کر کمرہ بند کر لیتا ہے دور دراز سے آنے والے مریضوں اور لواحقین سخت گرمی میں ذلیل و خوار وہ کرمایوس گھروں میں لوٹ جاتے ہیں مریضوں نے ڈاکٹر کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ صرف چند مریض چیک کرتا ہے۔کرونا خوف کی وجہ سے مریضوں کو ہاتھ تک نہیں لگاتا بلکہ بدتمیزی کرتا ہے۔

انکار

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج بہاولپور کا سنٹرل

جیل کادورہ، آئسولیشن سیل کامعائنہ

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر) چوہدری انوار الحق ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج بہاولپوراور پرویز اقبال سپرا ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لودھراں نے راؤ انیس احمد سینئر سول جج لودھراں کے ہمراہ عدالت عالیہ لاہور کے احکامات کی روشنی(بقیہ نمبر43صفحہ6پر)

میں نیو سنٹرل جیل بہاولپورکا ماہانہ دورہ کیا۔ معزز جج صاحبان کی آمد پر سنٹرل جیل بہاولپورکے چاک و چوبند دستے نے سلامی پیش کی۔ معزز ججز نے وویمن وارڈ‘ ہسپتال‘ کچن اسیران اور کورونا آئسولیشن سیل کا بھی وزٹ کیا۔ اس موقع پر اسیران سے انکے مسائل دریافت کئے اور جیل انتظامیہ کی طرف سے اسیران کو فراہم کی جانیوالی سہولیات پر اطمینان کا اظہار کیا۔ اس موقع پر سپرنٹنڈنٹ جیل شہرام توقیر خان اور ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ ایگزیکٹو اسد طارق بھی انکے ہمراہ تھے۔

معائنہ

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لودھراں کاجیل کادورہ

قیدیوں سے ملاقات،مسائل حل کرنیکا حکم

لودھراں (نمائندہ پاکستان) ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لودھراں پرویزاقبال سپرا نے ڈسٹرکٹ جیل لودھراں کا معائنہ کیا۔اس موقع پر سینئر سول جج لودھراں راؤ انیس احمداور سپریٹنڈنٹ جیل سید اسد کامران واجد بخاری بھی ان (بقیہ نمبر42صفحہ6پر)

کے ہمراہ تھے۔معزز جج نے عدالت عالیہ کے احکامات کی روشنی میں ڈسٹرکٹ جیل کا دورہ کیا۔ڈسٹرکٹ جیل آمد پر جیل کے چاک و چوبند دستے نے معزز ججزکو سلامی پیش کی۔معزز جج نے جیل کے مختلف حصوں کچن اسیران،کرونا آئسولیشن سیل اور جیل ہسپتال کا تفصیلی معائنہ کیاہے۔ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لودھراں پرویزاقبال سپرا نے معائنہ کے دوران اسیران سے ان کے مسائل دریافت کیے اور جیل انتظامیہ کو ان مسائل کے حل کے لیے فوری احکامات جاری کیے۔ انہوں نے جیل انتظامیہ کی جانب سے اسیران کو فراہم کی جانے والی سہولیات پر اطمینان کا اظہار کیاہے۔

ملاقات

شکاری سے نایاب نسل کے 6تیتر برآمد

رحیم یار خان (بیورورپورٹ)محکمہ وائلڈ لائفنیشکاری سے نایاب نسل کے چھ تیتر برآمد کر لئے،تفصیل کے مطابق خفیہ اطلاع پر محکمہ وائلڈ لائف میں تعینات انسپکٹر اختر حسین نے فوری کارروائی کرتے ہوئے(بقیہ نمبر46صفحہ6پر)

چولستان کے علاقہ میں جعل بچھا کر نایاب نسل کے بھورے تیتر کا شکار کرتے ہوئے شکاری ملزم محمداکبر کو رنگے ہاتھوں قابو کر لیااور اس کے قبضے سے نایاب نسل کے 6 قیمتی تیتر برآمد کر لئے، ملزم چولستانی علاقہ سے تیتر کا شکار کر کے مہنگے داموں فروخت کرتا ہے، برآمد ہونے والے تیتر قبضے میں لے کر کارروائی شروع کر دی۔

احتساب عدالت، شہباز شریف کو حاضری سے استثنی مل گیا

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کے نمائندے کے طور پر پیش ہونے والے نواز ایڈوکیٹ کرونا ٹیسٹ وائرس کا شکار ہوگئے۔ عدالت نے حاضری معافی کی درخواست منظور کرتے ہوئے ریفرنس پر سماعت 5 جون تک کے لیے ملتوی کردی۔ احتساب(بقیہ نمبر47صفحہ6پر)

عدالت کے جج امجد نذیر چودھری سابق وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف اوران کے صاحبزادے پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرحمزہ شہباز کے خلاف نیب کے مختلف مقدمات کی سماعت کی۔دوران سماعت وکیل نے بتایا کہ میاں شہبازشریف کے نمائندے کرونا وائرس کا شکار ہو گئے ہیں جس کی وجہ سے وہ عدالت میں پیش نہیں ہوسکتے جس پر عدالت نے شہباز شریف کے نمائندے کی حاضری معافی کی درخواست منظور کر لی اور آشیانہ کیس کی سماعت 5 دن تک کیلئے ملتوی کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر گواہوں کو بیانات کے لیے طلب کرلیا۔دوسری جانب رمضان شوگر ملز ریفرنس نے نامزد حمزہ شہباز کو عدالتی حکامات کے باوجود عدالت کے روبرو پیش نہ کیا جا سکا،جیل سپرئنڈنٹ نے عدالت کو بتایا کہ لاک ڈاؤن میں توسیع ہو چکی ہے،حمزہ شہباز کو عدالت میں پیش نہیں کرسکتے،عدالت نے رمضان شوگر مل کیس کی سماعت بھی5 جون پرملتوی کردی،اسی طرح عدالت نے حمزہ شہباز کے خلاف آمدنی سے زائد اثاثہ جات کیس کا ریفرنس جلد دائر کرنے کا حکم دیتے ہوئے مزید سماعت آئند پیشی تک ملتوی کردی۔

احتساب عدالت

عالمی سطح پر کشمیر کا مقدمہ تقویت پکڑ رہا ہے،سینیٹرانوار الحق

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سینیٹر انوار الحق کا کہنا ہے کہ عالمی سطح پر پاکستان کا کشمیر کے حوالے سے مقدمہ تقویت پکڑ رہا ہے۔ بھارتی کے اعصاب پر کشمیریوں کی مزاحمت چھا گئی ہے۔بھارتی ریٹائرڈ میجر گواروؤ آریا کے بلوچستان میں دہشت گردی اور مداخلت کے اعتراف پر سیاسی قوتوں نے شدید ردعمل کا اظہار کیا۔ بلوچستان عوامی پارٹی کے رہنما اور سابق صوبائی (بقیہ نمبر37صفحہ7پر)

ترجمان سینیٹر انوار کاکڑ نے کہا کہ بھارت کا بلوچستان میں ہونے والی دہشت گرد کارروائی کا اعتراف اور بلوچستان میں دہشت گردوں سے رابطوں کا دعویٰ مقبوضہ کشمیر سے عالمی توجہ ہٹانے کی کوشش ہے۔

سینیٹرانوار الحق

ڈیرہ: گھنٹوں بجلی غائب، گھروں میں قیدروزہ داروں کاکڑا امتحان

ڈیرہ غازی خان (بیورورپورٹ)حکومت پنجاب ایک طرف لوگوں کو گھروں پر رہنے کے لیے پابند کر رہی ہے جبکہ دوسری جانب 24گھنٹے بجلی بند کرکے احتجاجاً گھروں سے باہر آنے پر مجبور کر رہی ہے۔ 24گھنٹے سے بجلی غائب ہونے پر روزہ دار شدید اذیت میں مبتلا ہو(بقیہ نمبر38صفحہ7پر)

گئے شہریوں کو واپڈا اور ضلعی انتظامیہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیاتفصیلات کے محمد محمد آصف صدیقی، محمد اسلم قریشی، محمد نوید حنیف، راشد، نومی، امجد، محمد احمد، لیاقت علی قریشی نے پر امن احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ سوموار کی شب کو بلاک نمبر5اور 1بلاک کی بجلی ٹرپ ہوئی جس کی اطلاع دینے کے باوجود کوئی اصلاح نہ ہوئی اگلے روز واپڈا کے چند اہلکاران ایکسٹرنل ٹرانسفارمر لائے اور سڑک پر رکھ کر چلے گئے لیکن بجلی کی بحالی کے لیے کوئی خاطر خواہ انتظامات نہ کیے مکینوں نے بتایا کہ پی ٹی آئی کی حکومت جو کہ ریاست مدینہ کے نظام کے دعویدار ہے اسی کی حکومت میں روزہ دار ماہ مقدس میں شدید گرمی میں بجلی کی معطلی کے باعث پریشانی اور شدید اذیت میں مبتلا ہیں انہوں نے کمشنر ڈیرہ اور ڈی جی میپکو سے اصلاح و حوال کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جلد از جلد بجلی بحال کی جائے بصورت دیگر وہ واپڈا آفس کے مین گیٹ پر احتجاج کرنے پر مجبور ہونگے۔

میپکو ٹیمیں جنوبی پنجاب میں

سرگرم‘ 96 بجلی چوروں کا گھیرا تنگ

ملتان (نیوز رپورٹر)میپکو ٹیموں نے آپریشن کرتے ہوئے جنوبی پنجاب میں ایک روز میں 96بجلی چورپکڑلئے۔ایک لاکھ66ہزار یونٹس بجلی چوری کرنے پر25لا کھ26 ہزار روپے جرمانہ عائد۔ایک مقدمہ درج(بقیہ نمبر48صفحہ6پر)

۔11مئی 2020ء کو ملتان میں 13گھریلواورکمرشل صارفین کو23919یونٹس چوری کرنے پر432649 روپے جرمانہ عائدکیا گیا۔ ڈی جی خان میں 13گھریلوصارفین کو13292یونٹس چوری کرنے پر166378روپے جرمانہ،وہاڑی میں 10گھریلو صارفین کو8878یونٹس چوری کرنے پر131173روپے جرمانہ، بہاولپور میں 9گھریلواور ٹیوب ویل صارفین کو18731یونٹس چوری کرنے پر250249روپے جرمانہ،ساہیوال میں 15گھریلواورٹیوب ویل صارفین کو14799یونٹس چوری کرنے پر211483روپے جرمانہ، رحیم یار خان میں 7گھریلو صارفین کو9211یونٹس چوری کرنے پر140000روپے جرمانہ، مظفر گڑھ میں 17گھریلواورکمرشل صارفین کو21756 یونٹس چوری کرنے پر334000روپے جرمانہ،بہاولنگر میں 9گھریلوصارفین کو6989یونٹس چوری کرنے پر115937روپے جرمانہ جبکہ خانیوال میں 3 گھریلواورٹیوب ویل صارفین کو48972یونٹس چوری کرنے پر744737روپے جرمانہ عائد کیاگیااور ایک مقدمہ درج کروایاگیاہے۔

گھیرا تنگ

کشمیر ایشو: عالمی برادری کی بے حسی، جانبداری تاریخ کاالمیہ، لیاقت بلوچ

ملتان (سٹی رپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی اور ملی یکجہتی کونسل کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ عقیدہ ختم نبوت اہل ایمان کی وحدت، اتحاد اور روحانی سکون کا مرکزہے۔ اقتدار کے ایوانوں میں قادیانی وائرس گھسا ہواہے جو کرونا سے بھی بدتر ہے۔ اہل ایمان نے ہمیشہ استعمار کے آلہ کاروں کے وار ناکام بنائے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر اور ہندوستان میں نریندر مودی(بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

سرکار کا فاشزم ہولناک شکل اختیار کر گیاہے۔ عالمی برادری اور عالم اسلام کی بے حسی، جانبداری تاریخ کا بڑا المیہ ہے۔ کشمیر، فلسطین اور افغانستان کے مسائل کے حل کے ساتھ دنیا اور خطہ کا امن جڑا ہواہے۔ امریکہ، یورپ، انڈیا، اسرائیل اپنے جارحانہ سیاسی، اقتصادی ناجائز مفادات کے لیے پوری دنیا کو تباہ کر رہے ہیں۔ کرونا وبا نے پھر دنیا کو موقع دیاہے کہ استحصالی نظام بدلا جائے۔ انسانوں کو آزادی، خود مختاری کا بنیادی حق دیا جائے۔انہوں نے کہاہے کہ کرونا وبا نے ساری دنیا کو تلپٹ کردیاہے۔ دنیا بھر کا سماجی و اقتصادی نظام ڈھیر ہوگیاہے۔ یہ امر نوشتہ دیوا ر ہے کہ مغربی سرمایہ دارانہ نظام اور مغرب کی سیاسی تہذیبی بالادستی بے بنیاد ہے اور اب اس کے خاتمہ کا وقت آگیاہے۔ مغربی تہذیب اپنے تمام حوالوں سے اپنے انجام کی طرف ہے۔ مولانا مودودی ؒ نے اشتراکیت اور مغربی سرمایہ دارانہ استحصالی نظام کے خاتمہ کی نوید سنائی تھی۔ دونوں نظام بے نقاب ہوگئے ہیں۔ دنیا بھر کے انسانوں اور عالم اسلام کے لیے اسلام کی حکمرانی میں ہی امن، تحفظ، ترقی و استحکام اور فلاح ہے۔

لیاقت بلوچ

خاتون دم توڑ گئی، نشترہسپتال میں کرونا وائرس سے ہلاکتوں کی ففٹی

ملتان (نمائندہ خصوصی)نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا میں مبتلا خاتون دم توڑ گئی،نشتر ہسپتال میں کورونا کے باعث ہونے والی مجموعی اموات کی تعداد بڑھ کر 50 ہو گئی،شبہ میں زیر علاج دو افراد بھی دم توڑ گئے تفصیل کے مطابق نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈ میں زیر علاج کورونا میں مبتلا ملتان کی رہائشی 40 سالہ وحیدہ بی بی نے دم توڑ دیاجبکہ نشتر ہسپتال کے چھ آئی (بقیہ نمبر25صفحہ6پر)

سو لیشن وارڈز میں اس وقت کورونا میں مبتلا 49 مریض زیر علاج ہیں جبکہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 02 مزید افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ کورونا کے شبہ میں 11مریض زیر علاج ہیں,جن کی رپورٹس کا انتظار ہے،ادھر کورونا کے شبہ میں دم توڑنے والے 02مریضوں کی رپورٹس کا بھی انتظار ہے۔

کرونا وائرس: شہری سماجی فیصلوں کو یقینی بنائیں، سید فخر امام

کبیروالا(تحصیل رپورٹر) وزیر اعظم عام آدمی کی مشکلات کو مد نظر رکھتے ہوئے فیصلے کر رہے ہیں، حکومت نے محدود کاروباری سرگرمیوں کی اجازت دی گئی ہے،لہذا ضروری ہے کہ ہر فرد اپنی ذمہ داری کا احساس کرے،جہاں تک ممکن ہوسکے سماجی فاصلوں کو یقینی بنائیں اورجہاں زیادہ افراد جمع ہوں، وہاں ماسک اور دیگرتدابیر اختیار کی جائیں،ان خیالات کا (بقیہ نمبر26صفحہ6پر)

اظہاروفاقی وزیر نیشنل فوڈ سیکورٹی سید فخرامام نے سید گروپ کے رہنما ملک الطاف حسین سے ٹیلیفون پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ زرعی شعبے کو فروغ دینے کیلئے موجودہ حکومت زرعی شعبے میں ٹیکنالوجی اور جدید طریقوں کواپنانے کیلئے دوست ملک چین کے تجربات سے استفادہ کر رہی ہے،وزیراعظم عمران خان کی ہدایات پر حالیہ صورتحال خصوصا ماہ رمضان کے پیش نظر گندم اور دیگر اشیائے ضروریہ کی طلب و رسد پر گہری نظر رکھی جارہی ہے، تاکہ بر وقت فیصلے لیے جا سکیں اور ملک کے کسی حصے میں خوراک کی کمی درپیش نہ ہو۔

فخر امام

مشیروزیر اعلیٰ آصف محمود کاڈیرہ،تونسہ کادورہ، ترقیاتی کاموں کاجائزہ

ڈیرہ غازیخان (سٹی رپورٹر):مشیر وزیر اعلی پنجاب پی ایچ اے اینڈ ٹورازم آصف محمود نے ڈی جی خان اور تونسہ کا دورہ کیا،ضلع میں جاری ترقیاتی کاموں کا جائزہ لیا تفصیلات کے مطابق مشیر وزیر اعلی پنجاب پی ایچ اے اینڈ ٹوریزم آصف محمود نے ڈی جی خان اور تونسہ کا دورہ کیا اس موقع پر مشیر صحت پنجاب محمد حنیف خان پتافی بھی ان کے ہمراہ تھے مشیر وزیر اعلی پنجاب (بقیہ نمبر27صفحہ6پر)

آصف محمود نے جناح پارک،سٹی پارک، کھوسہ پارک کا دورہ کیا جہاں ڈی جی پی ایچ اے ڈاکٹر عابد ملک نے مشیر وزیر اعلی پنجاب آصف محمود کو بریفنگ دی اس موقع پر خطاب کر تے ہو ئے مشیر وزیر اعلی پنجاب آصف محمود کا کہنا تھا کہ وزیر اعلی پنجاب کی خصوصی ہدایت پر ڈی جی خان کو خوبصورت بنانے کا کام تیزی سے جاری ہے، پارکس اور گرین بیلٹس پر کام جاری ہے،ساڑھے 8 کروڑ کے 14 چوکوں، سنٹرل ڈیوائڈر اور گرین بیلٹ کو خوبصورت کرنے جا رہے ہیں اگلے چند ماہ میں نیا ڈی جی خان اور تونسہ ملے گاچیئرمین پی ایچ اے و مشیر صحت حنیف خان پتافی اور مشیر پی ایچ اے پنجاب و ٹورزم آصف محمود نے وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان خان بزدار صاحب کے بھائی سردار عمر خان بزدار صاحب سے بھی ملاقات کی اور ڈی جی خان اور تونسہ کی موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا اور تونسہ میں پی ایچ اے کی طرف سے جاری ترقیاتی کاموں کو جلد از جلد پایہ تکمیل تک پہنچانے پہ اتفاق کیا۔مشیر وزیر اعلی پنجاب پی ایچ اے اینڈ ٹوریزم آصف محمود نے تونسہ کا بھی دورہ کیا کام کی رفتار کی سستی پہ ڈی جی پی ایچ اے لاہور سے برہمی کا بھی اظہار کیامشیر وزیر اعلی پنجاب آصف محمود نے کمال پارک پبلک پارک کا دورہ کیامشیر صحت و چئیرمین پی ایچ اے حنیف پتافی بھی مشیر وزیر اعلی پنجاب آصف محمود کے ہمراہ موجودچیئرمین پی ایچ اے محمد حنیف خان پتافی نے کمال پارک تونسہ میں جاری سول ورک کو ماہ رمضان میں مکمل کرنے کی ہدایت کی تونسہ میں جاری ترقیاتی کاموں کو جلد از جلد پایہ تکمیل پہنچائیں۔

ریکارڈ کمپیوٹرئزائزڈ نہ ہونے سے ریلوے ملازمین شدید مشکلات کا شکار

ملتان (نمائندہ خصوصی) جدید دور کے تقاضوں سے دور پاکستان ریلوے کے دفاتر اور ملازمین کے سروس ریکارڈ کو اب تک کمپیوٹرائزڈ نہیں کیا جا سکا ہے جس سے ملازمین دوہری مشکلات کا شکار ہو چکے ہیں اس حوالے سے ریلوے ٹریفک یارڈ ایسوسی ایشن کے مرکزی صدر منیر چھٹہ اور مرکزی جنرل سیکرٹری سید شجاعت حسین شاہ نے کہا کہ ریکارڈ کو فوری کمپیوٹرائزڈ کیا جائے کمپیوٹر سافٹ ویئر کے ذریعے ملازمین کو ان کی سروس بک اور ریکارڈ تک آن لائن رسائی دی جائے (بقیہ نمبر28صفحہ6پر)

جسطرح ملازمین کی تنخواہ بینک میں آن لائن کردی گئی ان سے ای میل ایڈریس لے کر ان کی تنخواہوں کی تفصیل ان کے ای میل پر ارسال کی جائیتاکہ ملازمین اپنی تنخواہوں کی تفصیل حاصل کرسکیں،انہوں نے کہا اس عمل سے جہاں ملازمین کو ان کے ریکارڈ تک رسائی آسان ہو جانیگی وہیں ریکارڈ میں ٹیمپرنگ اور کرپشن کا بھی خاتمہ ہوگا جبکہ حیرت انگیز طور پر کم سٹاف میں بہتر کام ہوگا۔انہوں نے مزید کہا کہ اگر آفیسران ای میل یا ریلوے کی ویب سائٹ کے سافٹ ویئر کے ذریعے فائلز ارسال کریں تو نہ صرف کام جلدی مکمل?وگا بلکہ ریکارڈ محفوظ بھی رہے گا اور اس میں ٹیمپرنگ کا کوئی اندیشہ نہ ہوگا،انہوں نے کہا کہ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید اور چیف ایگزیکٹیو آفیسر جہاں ای ٹکٹنگ اور آن لائن ریزرویشن سمیت دیگر منصوبہ جات میں جدت کے خواہشمند ہیں انہیں ریلوے کے دفاتر کے نظام اور ملازمین کے سروس ریکارڈ کو بھی کمپیوٹرائز کرنے کی طرف تو جہ دینی چاہیے۔

شکار

کھلاڑی بھی اپنی حکومت سے تنگ، حالات مزید بگڑ رہے ہیں، دوست محمد کھوسہ

ڈیرہ غازیخان (سٹی رپورٹر):اپنی زندگی میں ایسی نااہل ترین حکومت نہیں دیکھی جو بدقسمتی سے آج ہمارے ملک پر مسلط ہے انتہائی افسوس کے ساتھ کہتا ہوں تبدیلی سرکار نے ہمارے ملک کا بیڑا غرق کردیا ہے ان خیالات کا اظہار سابق وزیراعلی پنجاب و پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما سردار دوست محمد خان کھوسہ نے صحافیوں سے گفتگو کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ آج ملک کو بے دردی سے لوٹا جارہا (بقیہ نمبر29صفحہ6پر)

ہے جن سیاسی شخصیات کو عمران نیازی گالیاں دیتے تھے اور کرپٹ کہتے تھے آج ان ہی لوگوں کو حکومت میں شامل کر چکے ہیں میں سمجھتا ہوں یہ حکومت عوام دشمن سرکار ہے جو کہ عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی تو دور کی بات جو عوام کی زندگی بھر کی جمع پونجی ہے وہ بھی ختم کرنے پر تلے ہوئے ہیں عمران نیازی نے عوام سے جھوٹ پر جھوٹ بولا اور اس لیے آج ہر شخص ان سے نفرت کررہا ہے تحریک انصاف کے کارکنان کی کثیر تعداد عمران نیازی سے مایوس ہوکر کسی اور پارٹی کا رخ کر چکے ہے پاکستان میں بسنے والے تمام لوگ تبدیلی سرکار سے تنگ آچکے ہے موجودہ مشکل ترین حالات میں جہاں کرونا وائرس نے پوری دنیا سمیت ہمارے ملک کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے لیکن پھر بھی حکومت کو عوام پر زرا ترس نہیں آرہا اور کوئی ریلیف نہیں دیا جارہا سردار دوست محمد کھوسہ نے مزید کہا کہ اگر یہ حالات چند ماہ مزید رہے اور حکومت نے عوام کیلئے اچھے فیصلے نا کیے تو میں بہت بڑا نقصان دیکھ رہا ہوں ہر شہر میں بڑے احتجاج کیے جاسکتے ہیں جس میں ہر مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والا شخص آئے گا اور تبدیلی سرکار کو مجبور کردیا جائے گا وہ ملک کی حکمرانی چھوڑ دے اور نئے الیکشن کروائے جائیں۔

دوست کھوسہ

نشتر ہسپتال میں صرف 502نرسز، کاغذوں میں سب اوکے کی رپورٹس

ملتان(نمائندہ خصوصی)ینگ نرسز کی جانب سے کورونا وارڈز میں ڈیوٹیاں سر انجام دیتی نرسز کو خراج تحسین پیش کیا گیا،تفصیل کے مطابق دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی گزشتہ روز نرسز کا عالمی دن منایا گیا تاہم کورونا وائرس کے پھیلاو کے پیش نظر کوئی تقریب منعقد نہ ہو سکی تاہم اس مشکل گھڑی میں کورونا وارڈز میں ڈیوٹیاں سر انجام دیتی اور کورونا میں مبتلا ہونے والی نشتر(بقیہ نمبر30صفحہ6پر)

ہسپتال کی 07 نرسوں اور انکے اہل خانہ کو ینگ نرسز کی جانب سے خراج تحسین پیش کیا گیا،اس موقع پر ینگ نرسز ایسوسی ایشن کی عہدیداران صائمہ یامین،نورین اور شمیم سمیت دیگر کا کہنا تھا کہ یہ دن نرسز کے لیے بہت اہمیت کا حامل ہے بلخصوص اس لیے بھی کہWHOکی اور صدر پاکستان کی طرف سے یہ سال نرسز کا سال قرار دیا گیا ہے۔ نرسنگ کمیونٹی کے لیے یہ دن بہت ساری امیدیں لے کے آتا ہے۔ لیکن نرسز کے مسائل جوں کے توں ہیں، نشتر ہسپتال جوکہ 1700 بیڈز کا ہسپتال ہے اور 2300سے 2400 مریض نشتر میں ایک وقت میں ایڈمٹ ہوتے ہیں اور انکے لئے نرسز کی تعداد صرف اور صرف 502 ہے، WHO, PNCکی مریض اور نرس تناسب کو گورنمنٹ نے چینج کیا اپنے وسائل کے مطابق،اس تناسب کے مطابق بھی اس وقت نشتر میں 423 نرسز کی کمی ہے،جبکہ نرسز کی پروموشن نہ ہونا سوالیہ نشان ہے1997 میں بھرتی ہوئی نرسز ابھی تک پروموٹ نہیں ہو سکی اور ریٹائرمنٹ آنے والی ہے لیکن اپنے قیمتی سال اس پروفیشن کو دینے کے باوجود ان کے لیے کوئی پروموشن کی پالیسی نہیں بنائی جا سکی۔حکومت سے مطالبہ ہے کہ نرسز کے لئے ری فریشر کورسز کا انعقاد بھی کیا جائے جبکہ COVID_19 کےpandemic کے دوران نرسز کا کردار کسی سے ڈھکا چھپا نہیں ہے،پازیٹیو ہونے کے باوجود تمام نرسز مریضوں کی خدمت کے جذبے سے سرشار ہیں۔

ورثا کارروائی سے گریزاں،تلمبہ حادثہ اتفاقیہ قرار، پولیس ذمہ داری سے”سرخرو“

عبدالحکیم(سٹی رپورٹر) میلسی لنک نہر حادثہ کا شکار وین کے تمام متوفین کی تدفین کردی گئی تفصیل کے مطابق تلمبہ روڈعبدالحکیم پرواقع میلسی نہر میں وین ڈوبنے کے حادثہ میں ایک ہی خاندان کے 11افراد کی المناک موت پر عبدالحکیم،میاں چنوں،لیہ و دیگر علاقوں کے لوگوں نے گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے حادثہ کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے، ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ورثاء کاروائی سے گریزاں ہیں جس پر پولیس تھانہ تلمبہ نے واقعہ اتفاقیہ قراردیکر کاروائی(بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

نمٹا دی ہے جبکہ جائے حادثہ سے ملنے والے لاوارث موٹرسائیکل کامالک تاحال نہ مل سکا ہے پولیس تھانہ تلمبہ سائنسی بنیادوں پر تلاش کررہی ہے۔دوسری جانب محکمہ انہار نے متوفین کے لواحقین سے عدم تعاون کا مظاہر کیا اورحادثہ کے دوران و بعدضلعی انتظامیہ کی اطلاع کے باوجود نہر کا پانی بند نہ کیا جس کی وجہ سے ریسکیو1122اور پرائیویٹ غوطہ خوروں کو نعشوں کی تلاش میں مشکلات کا سامنا رہا،متذکرہ المناک حادثہ پر جہاں ہر آنکھ اشک بار پر وہاں متعددافراد تذبذب کا شکار بھی ہیں کہ نہر کے پل کے بڑے بڑے بیریئر ہیں ایکسیڈنٹ کے باوجود گاڑی نہر میں نہیں گر سکتی ضرورت اس امر کی ہے کہ ڈی پی او خانیوال محمد علی وسیم حادثے کی تحقیقات کراکر وجوحات کو منظر عام پر لائیں۔

سرخرو

ڈکیت گینگز کیخلاف آپریشن، 5خطر ناک ملزم گرفتار، نقدی، سامان برآمد

گگومنڈی(نامہ نگار)بین لااضلاعی لکھن اورپڈھیارڈکیت گینگزکے سرغنہ ساتھیوں سمیت گرفتار کرلیے گئے۔لکھن اورپڈھیارڈکیت گینگ کے5ملزمان کوگرفتارکرکے ان کے قبضہ سے ڈکیتی وراہزنی کی وارداتوں میں چھیناگیامال مویشی ونقدی برآمد کرلی گئی۔تفصیلات کے مطابق امین لکھوکانے لکھن ڈکیت گینگ جبکہ افتخارحسین نے پڈھیارڈکیت گینگ بناکرضلع وہاڑی، خانیوال، ساہیوال،لودھراں،بہاولنگراورپاکپتن کے علاقوں میں ڈکیتی وراہزنی کی (بقیہ نمبر32صفحہ6پر)

وارداتیں کرکے ات مچائی ہوئی تھی دونوں گینگزکے ڈاکو دن دیکھتے نہ رات جب چاہے لوگوں کولوٹ کرآسانی سے فرارہوجاتے تھے۔ڈی پی اووہاڑی احسان اللہ چوہان نے ایس ایچ اوتھانہ گگومنڈی مہرریاض سیال کوملزمان کی گرفتاری کاخصوصی ٹاسک دیاتھاجس پرایس ایچ اومہرریاض سیال نے اپنی ٹیم سب انسپکٹررمضان فاروق،اے ایس آئی محمدعمران کے ہمراہ کئی دنوں کی کوشش کے بعدلکھن ڈکیت گینگ کے سرغنہ امین ولدعبداللہ لکھوکاکواس کے ساتھیوں منظورولدعبدالستار،صدیق ولدعباس لکھوکاساکنان بلاڑہ لکھوکاکوگرفتارکرکے مختلف وارداتوں میں چھینی گئی ایک لاکھ82ہزارروپے نقدی اورناجائزاسلحہ جبکہ پڈھیارڈکیت گینگ کے سرغنہ افتخارحسین ولدشمیراورنورحسن ولدچاکرکوگرفتارکرکے لاکھوں روپے مالیت کے مویشی،موٹرسائیکل اورناجائزاسلحہ برآمدکرکے ملزمان کوحوالات میں بندکردیاہے۔ایس ایچ اوتھانہ گگومنڈی مہرریاض سیال نے کہاکہ ملزمان کی گرفتاری کسی چیلنج سے کم نہ تھی لیکن ہماری کوشش اورمحنت سے اللہ تعالی نے ہمیں اس مشن میں سرخروکیاہے۔ملزمان کی گرفتاری کے ساتھ ہی تھانہ گگومنڈی کے علاوہ ضلع بھرمیں ڈکیتی وراہزنی کی وارداتوں میں خاطرخواح کمی دیکھنے میں آرہی ہے۔

ڈاکو

سی پی او کا یوٹرن‘ معطل خاتون سب انسپکٹر3 دن بعد بحال

ملتان (نیوز رپورٹر) لاکھوں روپے غبن کے الزامات پر معطل ہونے والی خاتون سب انسپکٹر 3 روز بعد دوبارہ بحال ہوگئی۔سٹی پولیس ا?فیسر ملتان حسن رضا نے سب انسپکٹر مریم فیض کو بحال کرتے ہوئے محکمانہ انکوائری التوا میں رکھنے کا "شاہی" حکم نامہ جاری کردیا۔ باوثوق ذرائع کے مطابق مذکورہ خاتون سب انسپکٹر کو بحال کرنے کے لئے ایک ڈی آئی جی نے سی پی او ملتان کو سفارش کی۔اس سے قبل بھی مذکورہ خاتون افسر کے خلاف محکمانہ کاروائی تین سال التواء میں (بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

رہی تھیں۔واضح رہے کہ تین سال قبل سب انسپکٹر مریم فیض کو ایم ٹی او تعینات کیا تھا سرکاری گاڑیوں کی فیولنگ کی مد میں 30 لاکھ روپے خورد برد کرنے کے الزام پر اسے تبدیل کر دیا گیا تھا تاہم تین سال تک مریم نے مبینہ طور پر کلرک مافیا سے ساز باز کرکے تحقیقات کو حتمی نتیجے تک نہ پہنچنے دیا۔ایس ایس پی انویسٹیگیشن رب نواز تلہ نے سابق ایم ٹی او سب انسپکٹر مریم اور ہیڈ کانسٹیبل مظہر کے خلاف لاکھوں روپے غبن کرنے اور اپنی کرپشن چھپانے کے لیے سرکاری ریکارڈ میں ردوبدل کرنے جیسے الزامات ثابت ہونے پر اس کے خلاف نوکری سے برخاستگی کی سزا تجویز کی تھی اس رپورٹ کی روشنی میں سی پی او ملتان حسن رضا نے 8 مئی کو مریم فیض کو معطل کر دیا گیا ہے۔۔جبکہ رقم کی ریکوری کے لیے معاملہ اینٹی کرپشن بھیجنے پر بھی غور کیا جارہا تھا۔۔ تاہم معاملے کی کایا اس وقت پلٹی جب ایک ڈی آئی جی رینک کے افسر نے انہیں خاتون افسر کو بحال کرنے کی سفارش کی۔۔ جس پر سی پی او ملتان حسن رضا خان نے گزشتہ روز خاتون سب انسپکٹر مریم کو بحال کرنے کا حکم دیتے ہوئے اس کے خلاف محکمانہ انکوائری پینڈنگ رکھنے کا حکم دیا ہے۔

بحالی

ہائیکورٹ ڈویژن بینچ کاچودھری برادران کی درخواست پر سماعت سے انکار

لاہور(نامہ نگار)چیئرمین نیب کے اختیارات کے خلاف دائردرخواست پر نئے تشکیل دیئے گئے دو رکنی بنچ نے بھی چودھری برادران کی درخواست پر سماعت سے معذرت کرلی، مسٹرجسٹس سید شہباز رضوی اورمسٹر جسٹس اسجد جاوید گرال نے چودھری شجاعت حسین(بقیہ نمبر34صفحہ6پر)

اور چودھری پرویز الہٰی کی درخواستوں پر ابتدائی سماعت کی،درخواست گزاروں کا موقف ہے کہ چیئرمین نیب کو 19 سال پرانے اور بند کی جانے والی انکوائری دوبارہ کھولنے کا اختیار نہیں۔فاضل بنچ کے رکن مسٹرجسٹس اسجد جاوید گرال کی جانب سے درخواست پرسماعت سے معذرت کی گئی ہے،معلوم ہواہے کہ جسٹس اسجد جاوید گرال کے چودھری برادران سے خاندانی تعلقات ہیں جس کی بنا پر انہوں نے سماعت سے معذرت کی ہے۔

سماعت انکار

چودھری شجاعت سے جی ڈی اے کے رہنماء سردار غوث بخش کی ملاقات

لاہور(این این آئی) پاکستان مسلم لیگ کے صدر و سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین اور رکن قومی اسمبلی چودھری سالک حسین سے گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس (جی ڈی اے) کے رکن قومی اسمبلی سردار غوث بخش مہر نے ملاقات کی اور ان کی خیریت دریافت کی۔(بقیہ نمبر35صفحہ6پر)

ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال خصوصاً ملک میں تیزی سے پھیلنے والی وبا کورونا سے بچاؤ کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ غوث بخش مہر نے چودھری شجاعت حسین کو سندھ کی سیاسی صورتحال، کورونا سے متاثرین کی بڑھتی ہوئی تعداد اور راشن کی تقسیم جیسے مسائل سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس بدلتی ہوئی صورتحال میں ایک نئی بین الاقوامی یکجہتی کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے، کورونا کا مقابلہ اکیلا کوئی ملک نہیں کر سکتا، اس وبا سے بچنے کیلئے پوری دنیا کو ایک نقطہ نظر پر اکتفا کرنا ہو گا۔

چودھری شجاعت

سپریم کورٹ نے ڈاکٹرعبدالقدیر کو عدالت آنے کی اجازت دیدی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے سفری پابندیوں سے متعلق کیس میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان کو عدالت آنے کی اجازت دیتے ہوئے حکومت کی ان کیمرا سماعت کی استدعا مسترد کر دی۔سفری پابندیوں کے خلاف ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی درخواست پر جسٹس(بقیہ نمبر36صفحہ6پر)

مشیرعالم کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے سماعت کی۔ ڈاکٹرعبدالقدیرخان کے وکیل نے دلائل دیئے کہ ان کے موکل کو آج عدالت نہیں آنے دیا گیا، عدالت آنا ان کا بنیادی حق ہے۔ وفاقی حکومت کے وکیل احمر بلال صوفی کا کہنا تھا کہ ڈاکٹرصاحب کے عدالت آنے سے مسائل ہوں گے۔ بہتر ہے عدالت ان کیمرہ سماعت رکھ لے۔جسٹس مشیرعالم نے کہا کہ ایسی کوئی وجہ نہیں کہ سماعت ان کیمرہ کی جائے۔ جسٹس یحییٰ خان آفریدی نے ریمارکس دیئے کہ ڈاکٹرعبدالقدیرخان کی قوم کیلئے خدمات کو تسلیم کرتے ہیں۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے فریقین کی رضا مندی سے 2009 میں فیصلہ دیا،جسے 10 سال تک کہیں چیلنج نہیں کیا گیا۔ ڈاکٹرعبدالقدیرخان نے اب لاہور ہائیکورٹ میں نئی درخواست دائر کر دی، اگر سپریم کورٹ معاملے میں براہ راست مداخلت کرے توکیا یہ مناسب ہو گا، عدالت کو مطمئن کیا جائے۔ ڈاکٹرعبدالقدیر خان اسلام آباد ہائیکورٹ دوبارہ کیوں نہیں گئے۔ڈاکٹر عبدالقدیرخان کے وکیل نے کہا کہ بنیادی حقوق کے معاملے میں سپریم کورٹ براہ راست مداخلت کر سکتی ہے۔ جسٹس یحییٰ خان آفریدی نے ریمارکس دیئے کہ عدالت سے غیر مناسب حکم کیلئے اصرار نہ کریں۔ درخواست پر اپنے موکل سے مشاورت کر کے موقف بتا دیں۔ عدالت نے سماعت 13 مئی تک ملتوی کر دی۔

ڈاکٹر عبدلقدیر خان

معاوضہ نہ امداد کاشتکار سہولتوں سے محروم، کاٹن ریسرچ انسٹیٹیوٹ سفید ہاتھی، سیڈ کارپوریشن میں بھی بے ضابطگیاں

ملتان (نیوز رپورٹر) چیئرمین ملتان ڈرائی پورٹ ٹریسٹ و سابق صوبائی وزیر خواجہ جلال الدین رومی نے گذشتہ روز پریس

(بقیہ نمبر12صفحہ6پر)

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ کپاس برآمد کرنے والا ملک پاکستان آج 2 ارب ڈالر سے زائد کی کپاس باہر سے منگوارہاہے جو ایک خطرناک ترین صورتحال ہے۔ ہمیں اپنے کاشتکار کو دوبارہ اپنے پاؤں پر کھڑا کرکے اسے دوبارہ کپاس کی کاشت پر راغب کرنا ہوگا۔ کھادوں میں جوسبسڈی فراہم کی جارہی ہے وہ شاید ان تک صحیح نہیں پہنچ پا رہی۔اس لیے 50 ایکڑ تک کے کاشتکاروں کو ڈائریکٹ کیش کی صورت میں امداد دی جائے۔انہوں نے کہاکہ کپاس کی چنائی کرنے والی خواتین کو ہر سال سوا ارب روپے سے زائد معاوضہ دیا جاتا ہے،زیادہ فصل ہونے پر ان دیہی خواتین کو زیادہ معاوضہ مل سکتا ہے۔کاٹن ریسرچ انسٹی ٹیوٹ اس وقت سفید ہاتھی ہے اس کوفعال کرکے ریسرچ اور نئے بیج متعارف کرانے والوں کوخصوصی مراعات دی جائیں۔اسی طرح سیڈ کارپوریشن کا مکمل آڈٹ کرایاجائے۔ اس ادارے کا کام ہے کہ وہ نئے بیچ متعارف کرانے کے لیے کام کرے۔اس کوبہت زیاہ فنڈز دیئے جاتے ہیں لیکن اس کی کارکردگی کچھ نہیں ہے۔ خواجہ جلال الدین رومی نے کہاکہ فضلوں کی زونگ کی خلاف ورزی کرکے کپاس ک فصل کوتباہ کردیاگیا۔کپاس کے علاقوں میں گنے کی پیداوار کو جان بوجھ کر ترقی دی گئی جو نہ صرف پانی زیادہ استعمال کرتا ہے بلکہ کاشتکار وں کو بروقت ادائیگی بھی نہیں ہوتی اور پھرحکومت کو گنے کے استعمال کرنے والوں کو سبسڈی بھی دیناپڑتی ہے۔ہماری وزیراعظم عمران خان سے درخواست ہے کہ کاشتکاروں کو بچانے کے لیے کپاس کا ایک ابمرجنسی پروگرام شروع کریں۔اس کے علاوہ بلوچستان پرتوجہ دے کر اس کارقبہ کاشت کرائیں۔ لوگوں کوسکیورٹی دیں۔وہاں اگنے والی کپاس کا ریشہ بھی بڑا اور فصل بھی زیادہ ہوتی ہے۔کورونا کی وجہ سے پاکستان اور بیرون ملک بے روزگار ہونے والوں کو روزگار دینے کے لیے سمال اینڈ میڈیم انٹرپرائز کوہدایت کرکے کم شرح منافع پر نوجوانوں کو قرضے دے کر ٹاول اور ہوم میڈٹیکسٹائل کے یونٹ لگائے جائیں۔ انہوں نے کہاکہ حکومت پنجاب بہت اچھا کام کررہی ہے۔وزیراعلی پنجاب بھی زراعت پرتوجہ دے رہے ہیں۔ ہم بھی حکومت سے ہرطرح کا تعاون کرنے کوتیارہیں۔ آپ معیاری بیج کی فراہمی کے اقدامات اٹھائیں۔ 40فیصد لیبر ٹیکسٹائل سیکٹرسے وابستہ جبکہ 90فیصد برآمدات ٹیکسٹائل سیکٹر کی ہیں۔ ماضی میں حکومت کے تعاون کی وجہ سے سپننگ ملزم کوفروغ ملا۔اب ترجیحات بدلنا ہوگی اور گارمنٹس اور تیار کپڑے کوترجیحات میں شامل کرنا ہوگا۔ اپٹما اور دیگر سیکٹرز کو کاٹن سیس کے بقایا جات اور ریگولر ادائیگی کرنی چاہیے۔ حکومت کوبھی میچنگ گرانٹ دے کر ریسرچ کے اداروں کواہداف دینے چاہیے۔حکومت کے ساتھ زراعت کی ترقی خصوصاً کپاس کی پیداواربڑھانے پر بہت سی میٹنگز ہوئی ہیں اب وقت آگیا ہے کہ ان میٹنگز کے فیصلوں کا اعلان اور فوری عملدرآمد کرایا جائے۔ اسی طرح چیف منسٹر ٹڈل دل کے خاتمے کے لیے بھرپور کام کررہے ہیں اس کے خاتمے کیلئے ہمیں اس پر مزیدفوکس کرناہوگا۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ریسرچ کرنے والے اداروں اور زرعی یونیورسٹیز کو فعال کیاجائے۔ 15ملین گانٹھ سے زیادہ پیداوار کا ہدف مقرر کرکے اس کا حاصل کرنے کی جنگی بنیادوں پر کام کیا جائے۔ زرعی ادویات کے مضر اثرات سے انسانوں کو محفوظ رکھنے کے لیے لائحہ عمل ترتیب دیا جائے۔زرعی سائنسدانوں کو نئے ماحول کے مطابق نئی ورائٹیوں پر کام کرنے کے لیے سہولیات دی جائیں۔ وزارت فوڈ سکیورٹی کپاس کی فصلوں کی خودنگرانی کرے اور کپاس کی فصل کو وزیراعظم ایمرجنسی پروگرام میں شامل کیا جائے۔گلابی سنڈی کے خلاف آف سیزن منیجمنٹ کرکے اس پر کام کیا جائے۔زرعی ادویات پر کم سے کم انحصار کرنے کی پالیسی بنا کر اس پر عمل کیا جائے۔ کراپ زون ڈیکلیئر کرکے اس کی پابندی کی جائے اور وہاں پر مراعات کااعلان کیا جائے۔اچھی کوالٹی کی کپاس کار یٹ الگ ہوناچاہیے۔ پانی کی کمی اور گرمی برداشت کرنے والی ورائٹی متعارف کروائی جائے۔اپٹما کے عہدیداران کپاس کی ہر قسم کی فصل کو مارکیٹ کے مطابق خریدنے کے پابند اور اپٹما کوالٹی کاٹن کی کاشت کے لیے مل کر کام کرے اور کاشتکاروں کو مراعات بھی دے۔ملکی معیشت کے لیے اپٹما کو اب قربانی دینا ہوگی۔ کاشتکار کو زندہ رکھنے کے لیے ٹیکسٹائل سیکٹر کو قربانی دینے کے ساتھ ساتھ ”کپاس اگا?، معیشت بچا?“ کے نعرے پرکام کرنا ہوگا۔

جماعت اسلامی کے رہنما سید ذیشان اختر کی وفد کے ہمراہ آرپی او زبیردریشک سے ملاقات

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)نائب امیر صوبہ جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر کی قیادت میں وفد نے نئے تعینات ہونے والے ریجنل پولیس آفیسر زبیر دریشک سے ملاقات کی،وفد میں امیر پی پی (بقیہ نمبر13صفحہ6پر)

246 نصراللہ ناصر،الخدمت فاؤنڈیشن کے نائب صدر سید مقصود الحسن بخاری شامل تھے۔ملاقات میں سید ذیشان اختر نے آر پی او زبیر دریشک کی بہاولپور تعیناتی پر نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے ملک میں غیر معمولی حالات میں پولیس کی کارکردگی کوسراہا اور کہا کہ پولیس بھی اس وقت ڈاکٹرز کی طرح فرنٹ لائن پر لڑنے والے قوم کے ہیرو ہے جس کی مثال یہ ہے کہ بہاولپورمیں 23 پولیس جوان اپنی فرائض سرانجام دیتے ہوئے کرونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں جس پر ہم ان جوانوں کو سلام پیش کرتے ہیں اور جلد صحتیابی کی دعا کرتے ہیں اور شہریوں سے اپیل کرتے ہ?

مزید :

ملتان صفحہ آخر -