ڈیرہ: گھنٹوں بجلی غائب، گھروں میں قیدروزہ داروں کاکڑا امتحان

  ڈیرہ: گھنٹوں بجلی غائب، گھروں میں قیدروزہ داروں کاکڑا امتحان

  

ڈیرہ غازی خان (بیورورپورٹ)حکومت پنجاب ایک طرف لوگوں کو گھروں پر رہنے کے لیے پابند کر رہی ہے جبکہ دوسری جانب 24گھنٹے بجلی بند کرکے احتجاجاً گھروں سے باہر آنے پر مجبور کر رہی ہے۔ 24گھنٹے سے بجلی غائب ہونے پر روزہ دار شدید اذیت میں مبتلا ہو(بقیہ نمبر38صفحہ7پر)

گئے شہریوں کو واپڈا اور ضلعی انتظامیہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیاتفصیلات کے محمد محمد آصف صدیقی، محمد اسلم قریشی، محمد نوید حنیف، راشد، نومی، امجد، محمد احمد، لیاقت علی قریشی نے پر امن احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ سوموار کی شب کو بلاک نمبر5اور 1بلاک کی بجلی ٹرپ ہوئی جس کی اطلاع دینے کے باوجود کوئی اصلاح نہ ہوئی اگلے روز واپڈا کے چند اہلکاران ایکسٹرنل ٹرانسفارمر لائے اور سڑک پر رکھ کر چلے گئے لیکن بجلی کی بحالی کے لیے کوئی خاطر خواہ انتظامات نہ کیے مکینوں نے بتایا کہ پی ٹی آئی کی حکومت جو کہ ریاست مدینہ کے نظام کے دعویدار ہے اسی کی حکومت میں روزہ دار ماہ مقدس میں شدید گرمی میں بجلی کی معطلی کے باعث پریشانی اور شدید اذیت میں مبتلا ہیں انہوں نے کمشنر ڈیرہ اور ڈی جی میپکو سے اصلاح و حوال کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جلد از جلد بجلی بحال کی جائے بصورت دیگر وہ واپڈا آفس کے مین گیٹ پر احتجاج کرنے پر مجبور ہونگے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -