سی پی او کا یوٹرن‘ معطل خاتون سب انسپکٹر3 دن بعد بحال

  سی پی او کا یوٹرن‘ معطل خاتون سب انسپکٹر3 دن بعد بحال

  

ملتان (نیوز رپورٹر) لاکھوں روپے غبن کے الزامات پر معطل ہونے والی خاتون سب انسپکٹر 3 روز بعد دوبارہ بحال ہوگئی۔سٹی پولیس ا?فیسر ملتان حسن رضا نے سب انسپکٹر مریم فیض کو بحال کرتے ہوئے محکمانہ انکوائری التوا میں رکھنے کا "شاہی" حکم نامہ جاری کردیا۔ باوثوق ذرائع کے مطابق مذکورہ خاتون سب انسپکٹر کو بحال کرنے کے لئے ایک ڈی آئی جی نے سی پی او ملتان کو سفارش کی۔اس سے قبل بھی مذکورہ خاتون افسر کے خلاف محکمانہ کاروائی تین سال التواء میں (بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

رہی تھیں۔واضح رہے کہ تین سال قبل سب انسپکٹر مریم فیض کو ایم ٹی او تعینات کیا تھا سرکاری گاڑیوں کی فیولنگ کی مد میں 30 لاکھ روپے خورد برد کرنے کے الزام پر اسے تبدیل کر دیا گیا تھا تاہم تین سال تک مریم نے مبینہ طور پر کلرک مافیا سے ساز باز کرکے تحقیقات کو حتمی نتیجے تک نہ پہنچنے دیا۔ایس ایس پی انویسٹیگیشن رب نواز تلہ نے سابق ایم ٹی او سب انسپکٹر مریم اور ہیڈ کانسٹیبل مظہر کے خلاف لاکھوں روپے غبن کرنے اور اپنی کرپشن چھپانے کے لیے سرکاری ریکارڈ میں ردوبدل کرنے جیسے الزامات ثابت ہونے پر اس کے خلاف نوکری سے برخاستگی کی سزا تجویز کی تھی اس رپورٹ کی روشنی میں سی پی او ملتان حسن رضا نے 8 مئی کو مریم فیض کو معطل کر دیا گیا ہے۔۔جبکہ رقم کی ریکوری کے لیے معاملہ اینٹی کرپشن بھیجنے پر بھی غور کیا جارہا تھا۔۔ تاہم معاملے کی کایا اس وقت پلٹی جب ایک ڈی آئی جی رینک کے افسر نے انہیں خاتون افسر کو بحال کرنے کی سفارش کی۔۔ جس پر سی پی او ملتان حسن رضا خان نے گزشتہ روز خاتون سب انسپکٹر مریم کو بحال کرنے کا حکم دیتے ہوئے اس کے خلاف محکمانہ انکوائری پینڈنگ رکھنے کا حکم دیا ہے۔

بحالی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -