قیدیوں کی ضمانتیں، اپیل، سزاء کی درخواستوں پر جلد سماعت کاحکم،مراسلہ روانہ

  قیدیوں کی ضمانتیں، اپیل، سزاء کی درخواستوں پر جلد سماعت کاحکم،مراسلہ ...

  

ملتان،مظفرگڑھ(خصوصی رپورٹر،نامہ نگار) چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے صوبہ بھر کی جیلوں میں قید افراد کی مقدمات میں ضمانت, معطلی سزا,اپیل سزا و دیگر نوعیت بارے(بقیہ نمبر16صفحہ6پر)

درخواستیں فوری طور پر طلب کر لی ہیں اور ضلعی سیشن ججز کو حکم دیا ہے کہ ان تمام درخواستوں کو متعلقہ جیل سپرنٹنڈنٹس کے ذریعے لیکر ان کی خود اور متعلقہ عدالتوں میں سماعت کر کے فوری فیصلے کئے جائیں. یہ اقدام جیلوں میں قید افراد کی سہولت کے لئے اٹھایا گیا ہے جو کورونا لاک ڈاؤن کی وجہ سے وکلاء کی خدمات حاصل نہ کئے جانے کے باعث اپنی اس نوعیت کی درخواستیں دائر نہیں کر پا رہے اور جیل میں بند پڑے ہیں. اس سلسلے میں مشتاق احمد اوجلہ ڈائریکٹر جنرل ڈسٹرکٹ جوڈیشری نے مراسلہ جاری کر دیا ہے. جس میں شق وار ہدایت کی گئی ہے کہ خواتین اور جیونائیل کی درخواست ہائے ضمانت, 10 سال تک کی سزا کے مقدمات میں قید افراد کی ضمانت اور سزا معطل کر کے ضمانت پر رہا کئے جانے کی درخواستیں لی جائیں.جبکہ مراسلہ کی روشنی میں ڈسٹرکٹ سیشن ججز نے اپنے اپنے اضلاع میں واقع جیلوں کے سربراہوں سے درخواستیں فوری طور پر طلب کر لی ہیں اور متعلقہ جیل سپرنٹنڈنٹس کو نوٹس جاری کر دئیے ہیں.

مزید :

ملتان صفحہ آخر -