آی سی سی نے شعیب اختر کو ٹرول کیوں کیا؟

آی سی سی نے شعیب اختر کو ٹرول کیوں کیا؟
آی سی سی نے شعیب اختر کو ٹرول کیوں کیا؟

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان کے سابق فاسٹ باولر شعیب اختر ایک بار پھر سوشل میڈیا پر زیربحث ہیں اور اس بار معاملہ کسی قانونی کارروائی کا نہیں بلکہ ان کے اور آئی سی سی کے درمیان ہونے والا ٹویٹس کا تبادلہ ہے۔ 

بات کچھ یوں ہے کہ کرک انفو نےاپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ میں ایک پوسٹ شیئر کی جس میں 20 کھلاڑیوں کی تصویر موجود تھی اور اس پوسٹ میں کہا گیا کہ اگر سابق اور موجودہ دور کے یہ کھلاڑی عروج پر ہوں تو آپ ان میں سے کونسا مقابلہ دیکھنا پسند کریں گے۔

مذکورہ پوسٹ میں چار سابق اور موجودہ پاکستانی کھلاڑیوں کا انتخاب کیا گیا جس میں سعید انور، وسیم اکرم، شعیب اختر اور پاکستان کی موجودہ ٹی20 ٹیم کے کپتان بابر اعظم شامل ہیں۔

اس پوسٹ میں وسیم اکرم کا مقابلہ سابق جنوبی افریقہ کپتان اور مسٹر 360 کے نام سے مشہور اے بی ڈی ویلیئرز سے کرایا گیا۔اسی طرح سابق مایہ ناز اوپنر سعید انور کا مقابلہ موجودہ بھارتی فاست باؤلر جسپریت بمراہ اور بابر اعظم کا مقابلہ سابق آسٹریلین فاسٹ باؤلر گلین میک گرا سے کرایا گیا۔

اس ٹویٹ پر شعیب اختر نے تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ "میں آج بھی تین خطرناک باونسرز کرانے کے بعد چوتھی بال پر سمتھ کو آوٹ کرسکتا ہوں"۔

شعیب کا یہ دعویٰ آئی سی سی کو شاید  دلچسپ لگا جس پر اس نے ایک لفظ کہے بنا ہی سب کہہ ڈالا۔

p>آئی سی سی نے ہالی وڈ ایکٹر ونس ریمز کی تصاویر شیئر کیں جس میں انہیں بے ساختہ ہنستے ہو دیکھا جا سکتا ہے۔

آئی سی سی کے ردعمل پرلاکھوں لوگ پسندیدگی اور دلچسپ تبصروں کااظہارکرتے ہوئے شعیب اختر کو ٹرول کررہے ہیں۔

۔

۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -کھیل -