کورونا وائرس، امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے نے چین پر انتہائی سنگین الزام لگادیا

کورونا وائرس، امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے نے چین پر انتہائی سنگین الزام ...
کورونا وائرس، امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے نے چین پر انتہائی سنگین الزام لگادیا

  

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کے حوالے سے چین پر الزام عائد کیا جا رہا ہے کہ اس نے موذی وباءکے متعلق معلومات چھپائیں جس کی وجہ سے دیگر ممالک اسے روکنے کے لیے بروقت مناسب اقدامات نہ کر سکے۔ گزشتہ ہفتے جرمن انٹیلی جنس ایجنسی نے بھی اس الزام کے حق میں اپنا وزن ڈال دیا تھا اور اب امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے کی طرف سے بھی اس کی تصدیق کر دی گئی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق سی آئی اے کا بھی ماننا ہے کہ چینی صدر شی جن پنگ نے کورونا وائرس پھیلنے کے بعد عالمی ادارہ صحت پر دباﺅ ڈالا اور اسے کورونا وائرس کو عالمی ایمرجنسی قراردینے میں تاخیر کرنے پر مجبور کیا۔

سی آئی اے نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ چینی صدر نے عالمی ادارہ صحت کو دھمکا کر وباءسے متعلق درست معلومات دنیا کو دینے سے روکا اور اس دوران خود کورونا وائرس سے متعلق حفاظتی سامان فیس ماسک، ہیزمٹ اور دیگر اشیاءذخیرہ کرتا رہا۔امریکہ اور دنیا میں جہاں کہیں حفاظتی سامان بنتا تھا چین نے درآمد کرکے اپنے ہاں ذخیرہ کر لیا اور اس کے بعد عالمی ادارہ صحت نے کوروناوائرس کو عالمی ایمرجنسی قرار دے دیا۔جرمن خفیہ ایجنسی بھی اپنی ایک رپورٹ میں چین پر ایسے ہی الزامات عائد کر چکی ہے۔ دوسری طرف گزشتہ دنوں چین کی طرف سے 30صفحات پر مشتمل ایک آرٹیکل جاری کیا گیا ہے جس میں مغربی دنیا کی طرف سے لگائے گئے تمام الزامات کا انتہائی سخت جواب دیا گیا ہے۔ عالمی ادارہ صحت کی طرف سے بھی ایک بیان میں ان الزامات کوبے بنیاد اور من گھڑت قرار دیا جا چکا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -