کوشش ہے کہ جلد ازجلد وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ کو قائل کر لوں کہ ایسے سرکاری افسران کے خلاف آرڈیننس لایا جائے جو ۔۔۔گورنر پنجاب نے بیوروکریسی میں کھلبلی مچا دی

کوشش ہے کہ جلد ازجلد وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ کو قائل کر لوں کہ ایسے سرکاری ...
کوشش ہے کہ جلد ازجلد وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ کو قائل کر لوں کہ ایسے سرکاری افسران کے خلاف آرڈیننس لایا جائے جو ۔۔۔گورنر پنجاب نے بیوروکریسی میں کھلبلی مچا دی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کسی بھی سر کاری فائل کو5دن سے زیادہ روکنے والے افسران کیخلاف کاروائی کیلئے وزیر اعظم اور وزیر اعلی پنجاب سے مشاورت کے ساتھ آرڈ ننس لانے کا عندیہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ میر ی بھر پو ر کوشش ہوگی کہ وزیر اعظم اور وزیر اعلی کو اس آرڈننس کیلئے جلد ازجلد قائل کر لوں، ملکی ترقی اور خوشحالی کیلئے بیوروکریسی کو اپنی ذمہ داری کو ہر صورت پورا کر نا ہوگا۔لاک ڈاؤن میں نر می کی وجہ سے کورونا مر یضوں کی تعداد میں اضا فہ ہونے پر دوبار ہ سخت لاک ڈاؤن لگانے کے سواہمارے پاس کوئی آپشن نہیں ہوگا۔غر یبوں کو صاف پانی کی فراہمی میری زندگی کا مشن ہے ہم نے اپنے غریبوں کو صاف پانی فراہم کر کے انکو مختلف خطر ناک بیماریوں سے بچانا ہے۔ 

گور نر ہاؤس لاہور میں کنگ سلمان ریلیف سنٹر اور حیات فاؤنڈیشن کے تعاون سے سینکڑوں غر یب رکشہ ڈرائیورز کوراشن دینے کی تقریب سے خطاب اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نےکہا کہ جب کورونا بحران کا آغاز ہوا ہے ہم اب تک لاہور سمیت پنجاب کے دیگر شہروں میں پنجاب ڈویلپمنٹ نیٹ ورک کے تحت 5لاکھ70ہزار سے زائد غر یب خاندانوں میں راشن فراہم کر چکے ہیں جسکے لیے اخوت فاؤنڈیشن،سر ورفاؤنڈیشن ،شیخ اعجاز ٹرسٹ سمیت 60کے قر یب فلاحی تنظیمیں کام کر رہی ہیں ہم مشکل کی اس گھڑی میں ان مخیر حضرات کا بھی شکر یہ ادا کرتے ہیں جو غر یب خاندانوں کو راشن کی فراہمی اور ڈاکٹرز کو کورونا سے بچاؤکیلئے حفاظتی سامان بھی فراہم کر رہے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کہا جب ہم بیوروکر یسی کے بارے میں کوئی بات کرتے ہیں تواس کا مطلب ساری بیوروکریسی نہیں ہوتا بلکہ وہ چند کالی بھیڑیں ہیں جن کی وجہ سے معاملات خراب ہوتے ہیں،مَیں وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلی پنجاب سے بہت جلد بات کر وں گا کہ ہم پنجاب میں ایک ایسا آرڈ ننس لائیں جسکے ذریعے سر کاری افسران کو اس بات کا پابند کرسکیں کہ وہ سر کاری امور کے حوالے سے فائلز کو مہینوں اپنے پاس نہ رکھیں بلکہ کسی بھی فائل کو زیادہ سے زیادہ پانچ دن میں متعلقہ محکمہ کو بجھوادیں۔ اُنہوں نے کہا کہ کوئی سرکاری فائل جب کسی بھی جگہ رک جاتی ہے تو اس سے کسی ایک فر د کو نہیں پورے محکمہ کو اس کا نقصا ن ہورہاہوتا ہے جو کسی بھی صورت قابل قبول نہیں ہوسکتا جب سے میں نے بیوروکر یسی کے حوالے سے اپنے تحفظات کا اظہار  کیا ہے اسکے بعد سے پنجاب آب پاک اتھارٹی کے حوالے سے متعلقہ افسران نے مجھے یقین دہانی کروائی ہے کہ مہینوں کا کام اب ہفتوں میں ہوگا اور پی سی ون سمیت دیگر معاملات کو جلد ازجلد مکمل کیا جائیگا جسکے بعد مجھے توقع ہے کہ لاہورسمیت پنجاب کے دیگر شہروں میں پینے کے صاف کی فراہمی کے حوالے سے ہم بہت جلد پنجاب آب پاک اتھارٹی کے زیر اہتمام فلٹر یشن پلانٹس لگانے سمیت اقدامات شروع کر دیں گے اوروعدے کے مطابق پنجاب کے عوام کو پینے کا صاف پانی فراہم کر یں گے۔

چوہدری سرور نے کہا کہ کورونا لاک ڈاؤن میں جب سے نر می ہوئی ہے بدقسمتی سے عوام سڑکوں اور بازاروں میں بغیر کسی حفاظتی اقدامات کے نظر آرہے ہیں اگر حالات یہی رہے تو یہ ملک وقوم کیلئے انتہائی خطر ناک ہوگا اور پھر حکومت کے پاس لاک ڈاؤن کو دوبارہ سخت تر ین کر نے کے سواکوئی آپشن نہیں ہوگاکیونکہ ہم نے ہر صورت اپنے عوام کو کورونا وباء سے بچانا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -