بیگم کوٹ اتوار بازار میں سٹال ہولڈرز کا راج ، سبزیاں اور پھل عوام کی پہنچ سے باہر

بیگم کوٹ اتوار بازار میں سٹال ہولڈرز کا راج ، سبزیاں اور پھل عوام کی پہنچ سے ...

  

لاہور (اپنے نمائندے سے)سردی کی شدید لہر کے ساتھ ہی مہنگائی کی لہر نے لاہوریوں کو ہلا دیا، بیگم کوٹ اتوار بازار بھی ضلعی انتظامیہ کی ناقص منصوبہ بندی کی بھینٹ چڑ ھ کر عوام الناس کا اعتماد حاصل کرنے میں ناکام ہو گیا ،من مانے نرخ ، سبزیاں اور پھل عوام کی پہنچ سے دور ہو گئے ،پارکنگ کے لئے مناسب سہولیات نہ ہونے کے باعث اتوار بازار کے باہر ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا ،گھریلو اشیاء خوردنوش،مصالحہ جات ،سبزیاں دالیں ،گوشت اور پولٹری کی مصنوعات درجہ سوئم اور عام بازار ے سے بھی کم تر درجہ پر فروخت ہوتی رہیں ،بیگم کوٹ اتوار بازار میں خریدار ی کے لئے شہری محمد سہیل ،چاند خان،سہل اصغر اور محمد ذوہیب نے کہا کہ داتا صاحب کے عرس مبارک اور چہلم امام حسینؓ کے بعد یہ پہلا اتوار ہے،ضلعی انتظامیہ کی ساری توجہ ان دو ایونٹ کی سیکیورٹی پرمعمور پر رہی ہے لیکن یہ دونوں ایونٹ کامیابی سے گزر جانے کے بعد ایسا لگ رہا ہے کہ ضلعی انتظامیہ لاہور کے افسران ابھی بھی آرام کرکے اپنی تھکاوٹ دور کررہے ہیں ،اس اتوار بازار میں جو اشیاء انسانی ضرورت کی چیزیں مہیا کی گئی ہیں وہ سب ہماری پہنچ سے باہر ہیں،کراکری کے سامان کے اتنے سٹال ہیں کہ لگتا ہے کہ اب کھانے پینے اور گھریلو استعمال کی چیزوں کو چھوڑ کر لوگ صرف کراکری استعمال کررہے ہیں ،ضلعی انتظامیہ کو اس طرف بھی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ محمد صابر ،جاوید محمود ،محمد یوسف ،جہانزیب خان نے کہا کہ ضلعی حکومت نے عوامی سہولت کے لئے جو اتوار بازار قائم کئے ہیں وہ بلا شبہ ان کی نیک نیتی کا ثبوت ہے لیکن افسوس نا ک امر یہ ہے کہ تمام اتوار بازار ضلعی افسران کی ناقص منصوبہ بندی کی نذر ہو کر صارفین کی توجہ حاصل کر نے میں ناکام ہو چکے ہیں ،آج ہم بیگم کوٹ اتوار بازار میں خریداری کے لئے آئے ہیں لیکن ادھر آکر بھی مایوسی اور مہنگی اشیا ء کے علاوہ کچھ نہیں ملا ، چیزوں کا معیار چہارم درجے سے بھی نیچے کا ہے ،سردیوں کی آمد کے ساتھ گراں فروش خشک میوہ جات کی قیمتوں میں من مانہ اضافہ کر دیتے ہیں لیکن حیرت کی بات یہ ہے کہ بیگم کوٹ اتوار بازار میں خشک میوہ جات جن میں چلغوزہ،مونگ پھلی،کھجور ،چھوہارہ اور کشمش کا بھی و ہی معیار اور نرخ ہیں جو عام بازار میں دستیاب ہیں ،اگر شہریوں کو اسی طرح کی چیزیں ملنی ہیں جس طرح کی عام بازاروں میں دستیاب ہیں تو حکومت کو چاہیے کہ اتوار بازاروں کے نام پر شہریوں کو بیوقوف بنانا چھوڑ د، ،شہری سجاد احمد،ملک منظور حسین ،ضمیر علی اور شاہدہ بی بی نے کہا کہ بیگم کوٹ اتوار بازار میں سردیوں کے آغاز کے ساتھ ہی گرمی آگئی ہے ،گرم ملبوسات سویٹر،جیکٹس اور لیڈیز جرسیوں کی قیمتوں میں 3گناتک اضافہ کر دیا ہے گیا ہے ،ہم جس سوچ کو لے کر ادھر خریداری کرنے آئیں ادھر آکر ہماری سوچ کے بالکل الٹ ہو رہا ہے ۔ دوسری جانب ضلع حکومت کے ترجمان نے کہا ہے کہ اتوار بازاروں میں بہترین منصوبہ کے ساتھ چل رہے ہیں ،کسی بھی قسم کی شکایت پر فوری کارروائی کرتے ہیں ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -