آج کے حکمرانوں کیلئے مجددالف ثانی کی تعلیمات مشعلِ راہ ہیں،علماء ،مشائخ

آج کے حکمرانوں کیلئے مجددالف ثانی کی تعلیمات مشعلِ راہ ہیں،علماء ،مشائخ

  

لاہور(پ ر)حضرت مجددالف ثانی ؒ نے اکبر شہنشاہ کے ایک قومی نظریہ کے خلاف دوقومی نظریہ پیش کرکے فکری سطح پر پاکستان کی بنیادرکھی اور یہ تاریخی حقیقت واضح کی کہ کفراوراسلام دوعلیحدہ علیحدہ حقیقتیں ہیں جوکسی طرح یکجانہیں ہوسکتیں۔ ان کے مزاحمتی کردار کے باعث جہانگیرشہنشاہ نے امورمذہب وسیاست میں مشورہ کے لیے علماء کاکمیشن مقررکیا، کامیاب حکومت چلانے کے لیے آج کے حکمرانوں کے لیے حضرت مجددالف ثانی کی تعلیمات اورکردار مشعلِ راہ ہیں ۔ ان خیالات کااظہار علماء ،مشائخ اورسکالرز نے مجددالف ثانی وشیرِربانی اسلامک سوسائٹی کے زیرِاہتمام امامِ ربانی مجددالف ثانی قومی کانفرنس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ہمدردسنٹر میں ہونے والی اس قومی کانفرنس کی صدارت پیرنثاراحمدجان سرہندی نے کی۔ کانفرنس ابوالسرورمحمدمسروراحمد کی زیرِسرپرستی ہوئی جبکہ مہمانانِ خصوصی ڈائریکٹرجنرل محکمہ اوقاف پنجاب ڈاکٹرسیدطاہررضابخاری،علامہ مفتی محمدصدیق ہزاروی،علامہ مفتی محمدظہوراحمدجلالی،علامہ عرفان اللہ اشرفی، علامہ دل محمدچشتی، مولانامحمدرفیق احمدمسعودی تھے۔ اس موقع پر شیخ طریقت صاحبزادہ محمدرفیق احمدمجددی، ڈاکٹر سلطان شاہ ،ڈاکٹرغلام شمس الرحمن،پروفیسرمحمدمحفوظ،ڈاکٹرسعیداحمدسعیدی، پروفیسر ڈاکٹر محمدنعیم انور ، پروفیسرمحمداقبال مجددی ، صاحبزادہ غلام مصطفی نقشبندی مجددی سجادہ نشین آستانہ عالیہ سرورِ ملت حضرت صوفی غلام سرور نقشبندی مجددی ، صاحبزادہ جنیدسرور نقشبندی مجددی،ڈاکٹرطاہر حمید تنولی، ڈاکٹر نویدازہر،ڈاکٹرآفتاب احمد، پروفیسر محمد نواز، پروفیسر حامدفاروق بخاری، پروفیسرشعیب عارف، ڈاکٹر ارشد نقشبندی، پروفیسرظہوراللہ ازہری ، علامہ غلام رسول قاسمی، پروفیسر راغب الیاس شاہ نقشبندی مجددی صدر مجددالف ثانی وشیرِربانی اسلامک سنٹر، شیخ غلام رسول نقشبندی مجددی اورملک بھرسے آئے ہوئے دیگر علماء ومشائخ اورمؤرخین نے خطاب کیا اور حضرت مجددالف ثانی کی دینی اورملی خدمات کو اجاگرکیا۔سٹیج سیکرٹری کے فرائض ڈاکٹرمنظورحسین اختر نے سرانجام دئیے۔ اس موقع پرڈاکٹرسیدطاہررضابخاری نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ حضرت مجددالف ثانی کی علمی اورروحانی شخصیت کو پاک وہند کے اکثرعلماء اورصوفیاء نے نہ صرف سراہا ہے بلکہ اسے قابل تقلیدقراردیاہے۔ انہوں نے کہاکہ انہیں مجددکاخطاب تاریخی شخصیت ملاں عبدالحکیم سیالکوٹی نے دیا۔ انہوں نے کہاکہ عوام وخواص شریعت سے بیگانہ ہوتے جارہے تھے اورگمراہی کے بادل منڈلارہے تھے ۔ حضرت مجددالف ثانی نے اپنے علمی مکالمات اور مکتوبات کے ذریعے عوام کو آشنائے شریعت کیا۔ ڈاکٹرسلطان شاہ نے کہاکہ حضرت مجددالف ثانی نے مشکل اورنازک حالا ت میں دینی اقدارکاتحفظ کیا پروفیسرمحمدنعیم انور ،پروفیسر محمداقبال مجددی نے بھی خطاب کیا۔

علماء

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -