ایک ماہ میں ، 150خطرناک ڈاکو گرفتار ، 21کروڑ 30لاکھ کا مسروقہ مال برآمد

ایک ماہ میں ، 150خطرناک ڈاکو گرفتار ، 21کروڑ 30لاکھ کا مسروقہ مال برآمد

  

لاہور(خبر نگار)ڈی آئی جی چوہدری سلطان احمد کی نگرانی میں انویسٹی گیشن ونگ نے گزشتہ ایک ماہ کی دوران 150خطرناک ڈاکوؤں کو گرفتار ،اور ان ملزمان کے قبضہ سے تقریبا 21 کروڑ 30لاکھ روپے مالیت برآمدگی ۔ایس ایس پی انویسٹی گیشن غلام مبشر میکن نے کہا کہ شہر میں ہونے والی ڈکیتی ،راہزنی ،ہاوس رابری،چوری ،قتل اور دیگر سنگین وارداتوں میں ملوث 66گینگز کے150خطرناک ممبران کو گرفتار کیااور605مقدمات ٹریس کیے جبکہ ملزمان سے 21کروڑ30لاکھ سے زائد مالیت کا مال مسروقہ برآمد۔اس کے علاوہ26مقدمات قتل خطرناک ملزمان کو چالان کئے گئے ،2مقدمات ڈکیتی رابری معہ قتل ،132 مقدمہ ڈکیتی،144مقدمات سرقہ بالجبر ،10 مقدمات وہیکل چھیننا،180مقدمات وہیکلز چوری،98مقدمات نقب زنی،655خطرناک مجرمان اشتہاری گرفتار۔ جن میں سے170 سنگین مقدمات کے خطرناک مجرمان اشتہاری تھے اور295 عدالتی مفرورگرفتار کل مقدمات 5181چالان کئے گئے۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن نے مزید کہا کہ انویسٹی گیشن آف ونگ کی تمام ٹیمیں جرائم پیشہ افراد کے خلاف شہر بھر میں دن رات سرگرم عمل ہے اور شہریوں کے ساتھ ڈکیتی اور چوری کی وارداتوں کی نہ صرف روک تھام بلکہ شہریوں سے لوٹے ہوئے مال کی برآمدگی پر بھی توجہ دی جارہی ہے۔ انویسٹی گیشن انچارجز کو شہر میں سرگرم ڈکیت اور چور گروہوں خاص کر کار اور موٹرسائیکل چوروں کے نیٹ ورک کو توڑنے کیلئے سپیشل ڈائریکشنز دی گئیں ہیں۔جبکہ اینٹی وہیکلز لفٹنگ سٹاف کو شہرسے چوری ہونے والی گاڑیوں کی بازیابی کیلئے سخت ہدایات جاری کی جا چکی ہے۔ جس کے بعد اینٹی کار لفٹنگ سٹاف کی سپیشل ٹیمیں شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر شب وروز مصروف عمل ہیں۔

مزید :

علاقائی -