حکومتی احکامات بو کاٹا ، اتوارکی چھٹی پتنگ بازی کی نذر

حکومتی احکامات بو کاٹا ، اتوارکی چھٹی پتنگ بازی کی نذر

  

لاہور ( خبر نگار) صوبائی دارالحکومت میں سخت پا بندی کے با وجود بھی پتنگ بازی کا سلسلہ جاری رہا ۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں نوجوان پتنگ بازی پر پابندی کے باوجود بھی چھتوں پر چڑھ کر پتنگ بازی کرتے رہے ۔ واضع رہے کہ حکومت پنجاب کی جانب سے پتنگ بازی پر مکمل پابندی عائد کی گئی ہے مگر پولیس اس قاتل کھیل کو روکنے میں مکمل ناکام ہو چکی ہے ، پولیس خانہ پوری کرنے کے لئے بے قصور نوجوانوں کو گھروں سے اٹھا کر ان کے خلاف مقدمات درج کرکے افسران کو سب اچھا کی رپورٹ دے رہی ہے ۔ پتنگ بازی جن علاقوں میں عروج پر رہی ان میں تھا نہ بھاٹی گیٹ، شاہدرہ ٹاؤن شاہدرہ، شفیق آ باد ، راوی روڈ، لاڑی اڈا، بادامی باغ، اسلام پورہ ، داتا دربار،مستی گیٹ، نولکھا،گوالمنڈی، موچی گیٹ، مصر ی شاہ، اور شاد باغ، قلعہ گجر سنگھ، گڑھی شاہو،سول لائنز،لٹن روڈ،مزنگ، شالیمار، گجر پورہ، مغل پورہ، غازی آ باد ،ہر بنس پورہ ،باغبا نپورہ ،بر کی ، فیکٹری ایریا ، مناواں ، ڈیفنس سی ،لیاقت آ باد،فیصل ٹاؤن ،گارڈن ٹاؤن ، ،اچھرہ،غالب مارکیٹ ،گلبر ک ،کا ہنہ ،کوٹ لکھپت ، فیصل ٹاؤن ساندہ ، اقبال ٹاؤن ،مسلم ٹاؤن ،وحدت کالو نی ،گلشن اقبال ،گلشن راوی ،سمن آ باد،ملت پارک، نواں کوٹ، شیرا کوٹ،رائیونڈ سٹی،نواب ٹاؤن،چو ہنگ،گرین ٹاؤن ، ٹاؤن شپ، جوہر ٹاؤن، ستو کتلہ، ڈیفنس اے کے علاقوں میں پتنگ بازی ہوتی رہی۔ پولیس پتنگ بازوں کے سامنے بے بس دکھائی دینے لگی ۔

مزید :

علاقائی -