عالمی عدالت میں مستقل پانچویں جج کیلئے برطانیہ اور بھارت مدمقابل

عالمی عدالت میں مستقل پانچویں جج کیلئے برطانیہ اور بھارت مدمقابل

  

اسلام آباد(صباح نیوز)بین الاقوامی عدالت انصاف میں مستقل جج کی تعیناتی کیلئے چار ممالک فرانس، صومالیہ، برازیل اور لبنان کے امیدواروں پر اتفاق ہوگیاہے جبکہ پانچویں جج کیلئے برطانیہ اوربھارت مدمقابل ہیں،کلبھوشن کیس کے تناظر میں عالمی عدالت انصاف میں جج کاانتخاب پاکستان کیلئے کافی اہم ہے۔برطانیہ بین الاقوامی عدالت انصاف کے جج کاانتخاب1946سے کبھی نہیں ہارا تاہم اس بار بھارت بھی اپنے امیدوارکی کامیابی کیلئے لابنگ کر رہاہے۔ آئی سی جے کے 15مستقل جج نوسال کیلئے تعینات ہوتے ہیں اور ان میں سے ہر تین سال بعد پانچ جج رٹائر ہوجاتے ہیں۔بین الاقوامی عدالت انصاف میں تجربہ کے حامل ایک سینئر قانون دان نے کہا کہ پاکستان کے تناظر میں یہ انتخاب اہم ہے کیونکہ بین الاقوامی عدالت انصاف جلدکلبھوشن یادیو کا مقدمہ سننے والی ہے۔انھوں نے کہا بھارت کا امیدوار کامیاب ہونے سے پاکستان کے مفادات متاثرہوسکتے ہیں، دفترخارجہ اورامریکا میں پاکستان کے سفیرکو چاہیے برطانیہ کے امیدوارکی کامیابی کیلئے تمام کوششیں بروئے کارلائی جائیں۔یاد رہے کہ کلبھوشن کیس میں پاکستان نے 13دسمبر تک اپناجواب جمع کرانا ہے، جبکہ اس عہدے کیلئے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے193ارکان بھارت کے دل ویر بھنڈاری اوربرطانیہ کے کرسٹوفرگرین ووڈمیں سے ایک کاانتخاب کریں گے۔

مستقل جج

مزید :

علاقائی -