سعودی عرب یمن کے مرکزی بینک کو دو ارب رقم ڈپازٹ کی شکل میں ادا کریگا

سعودی عرب یمن کے مرکزی بینک کو دو ارب رقم ڈپازٹ کی شکل میں ادا کریگا

  

جدہ (ما نیٹر نگ ڈیسک)سعودی عرب یمن کے مرکزی بینک کو قومی کرنسی کے استحکام کے لیے دو ارب ڈالر کی رقم ڈپازٹ کی شکل میں ادا کرے گا۔سعودی دارالحکومت ریاض میں یمن کے وزیر اعظم اور اپنے مشیریوں کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے یمن کے صدر عبد ربہ منصور ھادی نے بتایا کہ سعودی حکومت کی طرف سے یمن کے مرکزی بنک کے لیے دو ارب ڈالر کی خطیر رقم کی ادائی کا فیصلہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب عالمی منڈی میں ڈالر کے مقابلے میں یمنی ریال کی قدر میں غیر معمولی کمی واقع ہوئی ہے۔اس وقت ایک ڈالر 440 یمنی ریال کے مساوی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کی طرف سے یمن کے مرکزی بنک کو دو ارب ڈالر کی رقم ادا کرنے سے یمن کی سرکاری کرنسی کی قیمت کو مستحکم کرنے میں مدد ملے گی۔یمن میں بغاوت کے بعد قومی کرنسی ریال کی قیمت میں 100 فی صد سے زائد کمی واقع ہو چکی ہے جس کے نتیجے میں ملک میں بنیادی ضرورت کی اشیاء4 بہت مہنگی ہوگئی ہیں۔

سعودی عرب

مزید :

علاقائی -