تاپی گیس پائپ لائن منصوبہ سنگ بنیاد مارچ2018 میں رکھے جانے کا امکان

تاپی گیس پائپ لائن منصوبہ سنگ بنیاد مارچ2018 میں رکھے جانے کا امکان

  

لاہور(آن لائن)تاپی گیس پائپ لائن منصوبے کا سنگ بنیاد آئندہ سال مارچ میں رکھے جانے کا امکان ہے تاپی منصوبے میں ترکمانستان ،افغانستان ،پاکستان اور بھارت شامل ہیں اور منصوبے کی کل لاگت10ارب ڈالر ہے اس منصوبے کی مجموعی لاگت کا 85 فیصد ترکمانستان ادا کریگا جبکہ باقی تینوں ممالک پانچ پانچ فیصد اپنا حصہ اس منصوبے میں ڈالیں گے منصوبے سے پاکستان یومیہ ایک ارب 32 مکعب فٹ گیس حاصل کرسکے گا منصوبے سے مجموعی طور پر 3ارب20کروڑ مکعب فٹ یومیہ حاصل ہو گی ۔تر کمانستان میں تاپی منصوبے کا سنگ بنیاد 13دسمبر 2015کو رکھا گیا تھا ۔ حکام کے مطابق پاکستان میں بھی سنگ بنیاد رکھنے کی تیاریاں جاری ہیں اورپاکستان میں مارچ میں اس کا سنگ بنیا درکھنے کی تقریب متوقع ہے اوراس کا افتتاح اگلے دو سالوں میں متوقع ہے افغانستان میں اس روٹ کا سروے ، بارودی سرنگوں کی صفائی کا کام مکمل ہو چکا ہے اور وہاںآئندہ برس فروری میں اس منصوبے کا سنگ بنیادرکھا جارہا ہے ۔ترکمانستان اپنی گیس فیلڈ سے افغانستان باڈر تک گیس پائپ لائن مکمل کر چکاہے ۔ تاپی منصوبے سے پاکستان کو ملنے والی گیس مقامی مجموعی پیداوار کے 33فیصد کے برابر ہو گی پاکستان پر اس کا خرچہ 200ملین ڈالر ہے اور یہ بی او ٹی کی بنیاد پر منصوبہ مکمل ہوگااور پاکستان اس کا ٹیرف دینے کا ذمہ دار ہوگا۔

تاپی منصوبہ

مزید :

علاقائی -