سندھ میں پہلے بھی کتنے ہی ناکام اتحاد بنے ، وزیر تعلیم سندھ

سندھ میں پہلے بھی کتنے ہی ناکام اتحاد بنے ، وزیر تعلیم سندھ

  

کراچی (این این آئی) سندھ کے وزیر برائے تعلیم جام مہتاب ڈھر نے کہا ہے کہ سندھ میں اس سے قبل بھی کتنے ہی ناکام اتحاد بنے اور اب پھر مردے گھوڑے اتحاد بنانے کی باتیں کر رہے ہیں مگر وہ احمقوں کی دنیا میں رہتے ہیں پیپلز پارٹی کے خلاف 100اتحاد بھی بنیں پھر بھی پیپلز پارٹی کچھ نہیں بگاڑ سکتے کیوں کہ پاکستان پیپلز پارٹی عوام کے دلوں میں سمائی ہوئی ہے اور وہ ایوانوں میں عوام کے حقوقون کی ترجمانی کرتی ہے تعلیم کی بھتری کے لئے سندھ میں ایمرجنسی نافذ کردی ہے تعلیم پرکوئی بھی سمجھوتا نہیں کیا جائے گا سندھ میں بند ہونے والے اسکولوں کو کھلوایا ہے جو بھی اساتذہ ڈیوٹی نہیں کرے گا اس کو کسی بھی صورت میں معاف نہیں کیا جائے گا ان خیالات کا اظہار انہوں نے گاؤں پپری میں پپری اتحاد کے جانب سے منعقدہ ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا جلسہ عام سے پ پ پ ایم این ای نواب خان وسان نے کہا کہ سندھ کی تقسیم کی باتیں کرنے والے سن لیں سندھ کسی کے باپ کی جاگیر نہیں جو سندھ تقسیم کریں گے، اگر سندھ کے حلالی بیتے سندھ میں رہنا چاہتے ہیں تو رہیں ورنہ اپنا بوریا بسترا گول کریں کراچی سندھ کا حصہ ہے جس کو کوئی بھی الگ نہیں کر سکتا انہوں نے کہا کہ آصف علی خان زرداری پر کرپشن کے جھوٹے الزامات لگانے والوں پر خود کرپشن کے الزامات ثابت ہو رہے ہیں اور عنقریب شریف خاندان کی سیاست میں سیاسی موت واقع ہوگی انہوں نے مزید کہا کہ آئندہ انتخابت میں پی ٹی آئی کو سندھ میں کوئی بھی امیدوار نہیں ملے گا کیوں کہ عمران خان دن میں کچھ اور رات میں کچھ بیانات دیتے ہیں ان کا مستقبل تاریک ہے جلسہ عام سے فدا حسین وسان، الطاف حسین پھلپوٹو، شوکت پھلپوٹو، منتظر پھلپوٹو، چوہدری بشیر آرائین دہ دیگر نے خطاب کیا۔

مزید :

صفحہ آخر -