وفاق پر گہرے بادل منڈ لا رہے ہیں ، ریاست کر دار ادا کرے : رضا ربانی

وفاق پر گہرے بادل منڈ لا رہے ہیں ، ریاست کر دار ادا کرے : رضا ربانی

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر )چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے کہا ہے کہ جس نے ججوں کو جیلوں میں ڈالا وہ اب سیاسی اتحاد کی سربراہی کر رہا ہے۔آج اگر ریاست نے اپنا کردار ادا نہیں کیا تو وفاق پر گہرے بادل منڈلارہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز سوسائٹی فار سیکولر پاکستان کی جانب سے سماجی رہنما اقبال حیدر کی یاد میں تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر جسٹس ریٹائر ناصر اسلم زاہد، آئی اے رحمان، ڈاکٹر ہارون احمد، بیگم انیس ہارون اور علیزے اقبال حیدر نے خطاب کیا۔میاں رضا ربانی نے کہا کہ اقبال حیدر ایک وکیل سیاستدان انسانی حقوق کے علمبردار تھے۔اقبال حیدر نے قانون کی بالادستی کیلئے جدوجہد کی۔اقبال حیدر اصولوں کے پکے شخص تھے ۔اقبال حیدر نے قانون سازی کیلئے بھی بھرپور حصہ لیا۔ ملک کے اندر آئین کی حکمرانی ہونے چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ ملک میں چار قانون ہیں۔ ملک میں برابری کے قوانین نہیں ہے۔ اگر آپ اشرافیہ ہیں تو اطلاق الگ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس نے ججوں کو جیلوں میں ڈالا وہ اب سیاسی اتحاد کی سربراہی کر رہا ہے۔اقبال حیدر اگر زندہ ہوتا وہ کیا دیکھتا کہ ایک غدار خطاب کر رہا ہے۔ آج اگر ریاست نے اپنا کردار ادا نہیں کیا تو وفاق پر گہرے بادل منڈلا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج ملک میں صورتحال تشویشناک ہے اگر بلوچستان میں کوئی انسانی حقوق کا علمبردار آواز بلند کرے تو اس کے اہل خانہ اسے ڈھونڈتے پھریں گے۔ اسلام آباد میں طلبہ نے مظاہرہ کیا تو ان کے کیمپ بھی اکھاڑ دئیے گئے۔مقررین کا کہنا تھا کہ اقبال حیدر نے بحیثیت سینیٹر نہ صرف اہم قانون سازی میں حصہ لیا اور آئین کی بالادستی کے لئے کام کیا بلکہ تمام زندگی انسانی حقوق کے سرگرم رکن کے طور پر گذاری ۔ ان کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -