ایم ایم اے کا انتظامی ڈھانچہ تشکیل پانے کے بعد شریفانہ انداز میں حکومتیں چھوڑ دیں گے: سراج الحق

ایم ایم اے کا انتظامی ڈھانچہ تشکیل پانے کے بعد شریفانہ انداز میں حکومتیں ...
ایم ایم اے کا انتظامی ڈھانچہ تشکیل پانے کے بعد شریفانہ انداز میں حکومتیں چھوڑ دیں گے: سراج الحق

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ ابھی تک ایم ایم اے کی بحالی کا فیصلہ ہوا ہے ، جب اس کا باقاعدہ انتظامی ڈھانچہ تشکیل دیا جائے گا تو جماعت اسلامی خیبر پختونخوا اور جے یو آئی ف مرکز میں حکومت چھوڑنے کا فیصلہ کریں گی۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق نے ایم ایم اے کی بحالی کی ضرورت کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ مذہبی سیاسی جماعتیں جو الیکشن کے عمل پر یقین رکھتی ہیں انہوں نے اصولی طور پر مذہبی جماعتوں کے ووٹر کو ایک کرنے کا فیصلہ کیا ، اور اس مقصد کیلئے ایم ایم اے کو بحال کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ابھی صرف ایم ایم اے کو بحال کیا گیا ہے اس کا انتظامی ڈھانچہ تشکیل نہیں پایا ، جے یو آئی ف مرکز اور جماعت اسلامی خیبر پختونخوا کی حکومتوں میں شامل ہیں، جب ایم ایم اے باضابطہ طور پر بحال ہوجائے گی تو دونوں جماعتیں باقاعدہ اور شریفانہ انداز میں اپنی اپنی اتحادی حکومتیں چھوڑ دیں گی۔

سراج الحق نے کہا کہ اختلافات سب میں ہوتے ہیں لیکن جب بیٹھ کر بات چیت کی جاتی ہے تو اختلاف ختم بھی ہوجاتے ہیں۔ برہان مظفر وانی، روہنگیا اور کشمیر جیسے مسئلے پر جماعت اسلامی اور جے یو آئی نے مشترکہ جدو جہد کی ، اب بھی تمام اختلافات کا حل نکال لیا جائے گا۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -