مظفر گڑھ : سب انسپکٹر بے لگام ‘ پولیس پیٹی بھائی پر مہربان ‘ ڈی پی او سے رپورٹ طلب

مظفر گڑھ : سب انسپکٹر بے لگام ‘ پولیس پیٹی بھائی پر مہربان ‘ ڈی پی او سے رپورٹ ...

  

مظفرگڑھ (نمائندہ خصوصی‘نامہ نگار) نجی ٹارچر سیل میں دو بھائیوں کو تشدد کا نشانہ بنانے پر تھانہ خان گڑھ کے سب انسپکٹر کمیل رضا کے خلاف ایڈیشنل سیشن جج مظفرگڑھ کے حکم پر مقدمہ درج کرنے کا ہائی کورٹ نے بھی فیصلہ دیدیا, تھانہ خان گڑھ کے سب انسپکٹر کی طرف سے جعلی پولیس مقابلے(بقیہ نمبر54صفحہ7پر )

میں بھٹہ مزدور کو فائر مار کر زخمی کرنے پر بھی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج مظفرگڑھ نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر مظفرگڑھ سے رپورٹ طلب کرلی. تفصیل کے مطابق تھانہ خان گڑھ میں تعینات رہنے والے سب انسپکٹر کمیل رضا نے پولیس گردی کی انتہا کرتے ہوئے رقبہ نور خان کے دو بھائیوں غلام مصطفی اور زوار حسین کو ناجائز گرفتار کرکے نجی ٹارچر سیل میں بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جس پر عدالت نے تشدد کا شکار دونوں بھائیوں کا میڈیکل کرانے کا حکم دیا تو میڈیکل میں پولیس تشدد ثابت ہوگیا جس ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج مظفرگڑھ رانا محمد عارف نے 13 اگست کو سب انسپکٹر کمیل رضا کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جس پر پولیس نے مقدمہ درج کرنے میں جان بوجھ کر تاخیر کی اور سب انسپکٹر کمیل رضا نے ہائیکورٹ ملتان بینچ سے مقدمہ درج کرنے کے حکم کے خلاف حکم امتناعی حاصل کرلیا تھا جس ملتان ہائیکورٹ بینچ نے کمیل رضا سب انسپکٹر کے حکم امتناعی کو خارج کرتے ہوئے مقدمہ درج کرنے کا حکم برقرار رکھا ہے جس پر پولیس گردی کا شکار غلام مصطفی اور زوار حسین نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر مظفرگڑھ سے فوری سب انسپکٹر کمیل رضا کے خلاف عدالت کے حکم پر مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے جبکہ دوسری طرف سب انسپکٹر کمیل رضا کی طرف سے جعلی پولیس مقابلے میں بھٹہ مزدور نیاز ولد غلام یسین کو فائرنگ کرکے اسکے بھائی مشتاق کے خلاف پولیس مقابلے کا جھوٹا مقدمہ درج کرنے پر متاثرہ مزدور نیاز کے والد غلام یسین نے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج مظفرگڑھ سے سب انسپکٹر کمیل رضا کے خلاف مقدمہ درج کرنے کے لیے درخواست دائر کی ہے جس پر عدالت نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر مظفرگڑھ سے 15 نومبر تک رپورٹ طلب کرلی ہے. تھانہ خان گڑھ کے سب انسپکٹر کمیل رضا نے جعلی پولیس مقابلے کے جھوٹے مقدمہ میں بھی نجی ٹارچر سیل میں تشدد کا شکار دو بھائیوں غلام مصطفی اور زوار حسین کے بھائی مختار حسین کو بھی ملزم نامزد کردیا جبکہ اس کے علاوہ 5 دیگر جھوٹے مقدمات میں بھی مختار حسین کو ناجائز طور پر ملزم بناکر انتقامی کروائی کررہا ہے.

مزید :

ملتان صفحہ آخر -