منشیات کی روک تھام کیلئے سٹوڈنٹس میدان میں آئیں ، صوبائی وزیر سوشل ویلفیئر

منشیات کی روک تھام کیلئے سٹوڈنٹس میدان میں آئیں ، صوبائی وزیر سوشل ویلفیئر

  

ملتان ( سٹی رپورٹر) صوبائی وزیر سوشل ویلفئیر و بیت المال پنجاب محمد اجمل چیمہ نے کہا ہے کہ طلباء و طالبات ہمارا سرمایہ ہیں وہ معاشرے میں بہتری اور انسداد منشیات کیلئے میدان عمل میں آئیں ۔پاکستان محفوظ ہاتھوں میں آچکا ہے اور اب ہمیں مل جل کر اسکی ترقی و خوشحالی کے لئے کام(بقیہ نمبر55صفحہ7پر )

کرنا ہے ،منشیات کے عادی افراد کا علاج و معالجہ ہماری ترجیح ہونی چاہیے اور انہیں حکومت کے مفت علاج بارے ترغیب بھی دینا ہوگی ،بے روزگاری ،گھروں میں تناؤ ،کاروبار میں اتار چڑھاؤ ،غلط سماجی رویوں کے باعث ہمارے معاشرے میں تشدد کے واقعات بڑھ رہے ہیں ان کی روک تھام کے لئے ہمیں درست سمت کو اپنانا ہوگا۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ سائنسز بہاء الدین زکریا یونیورسٹی ملتان کے زیر اہتمام انسداد منشیات کانفرنس سے خطاب اور انسداد تشدد مرکز برائے خواتین کے دورے کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔صوبائی وزیر محمد اجمل چیمہ نے کہا کہ نوجوان نسل کو منشیات کی لعنت سے دور رکھنے کے لئے ضروری ہے کہ ہم اہنے ارد گرد کے ماحول پر نظر رکھیں ہماری یونیورسٹیاں ہمیں علم و ادب کا درس دیتی ہیں ہمیں اپنی نئی نسل کو اخلاقی تربیت سے روشناس کرانا ہے ،طلباء و طالبات اپنے ساتھیوں سے مل کے منشیات کی روک تھام کے لئے آگے آئیں ان پر بھاری ذمہ داریاں عائد ہوتی ہیں ،وائس چانسلر بہاء الدین زکریا یونیورسٹی ملتان ڈاکٹر طاہر امین نے کہا کہ ہمیں اپنے سوچنے کا انداز فکر بھی تبدیل کرنا پڑے گا ،انسداد منشیات کے لئے مقامی سطح پر عملی اقدامات کی ضرورت ہے ۔انسداد منشیات کے لئے مقامی سطح پر عملی اقدامات کی ضرورت ہے ،اس اہم ایشو پر پیش رفت ہماری منزل ہونی چاہیے ۔صوبائی وزیر نے مزید کہا کہ ہم نے اپنے اداروں کو مزید مستحکم بنانا ہے ،مشاورت سے تمام معاملات میں بہتری لائیں گے ۔ممبر قومی اسمبلی ملک محمد عامر ڈوگر نے کہا کہ انسداد منشیات کانفرنس کا مقصد آگاہی دینا ہے ،ہمیں دین کی طرف راغب ہونا ہوگا تب ہی ہم معاشرتی برائیوں سے چھٹکارہ حاصل کرسکتے ہیں ۔انسداد منشیات کانفرنس سے ڈاکٹر امتیاز احمد وڑائچ ،ڈاکٹر کامران اشفاق ،ڈاکٹر فرزانہ کوثر ،شاہد گیلانی و دیگر نے بھی خطاب کیا ۔بعد ازاں صوبائی و زیر محمد اجمل چیمہ نے انسداد تشدد مرکز کا بھی دورہ کیا اس موقع پر ڈپٹی کمشنر ملتان مدثر ریاض ملک نے انہیں خواتین پر تشدد کے خاتمے بارے حکومتی اقدامات پر بریفنگ دی ،صوبائی وزیر نے اس موقع پر کہا کہ حکومت پنجاب سوشل ویلفئیر کے منصوبوں میں خصوصی دلچسپی رکھتی ہے ،انسداد تشدد مرکز کو مزید فعال اور اس کی ضروریات کو پورا کیا جارہا ہے حکومت پنجاب سے سوشل ویلفئیر اداروں اداروں کے لئے اضافی فنڈز طلب کیے جائیں گے ۔ڈپٹی کمشنر ملتان مدثر ریاض ملک نے کہا کہ انسداد تشدد مرکز برائے خواتین حکومت کا پائلٹ پراجیکٹ ہے یہاں ون ونڈو آپریشن کے ذ ریعے مظلوم خواتین کو تمام تر سہولیات دی جارہی ہیںیہ ادارہ تشدد زدہ خواتین کے لئے امید کی کرن بن چکا ہے ۔منیجر انسداد رتشدد مرکز ثناء جاوید اور مس فاطمہ خان نے کہا کہ اس مرکز میں 18ماہ کی قلیل مدت میں 2661سے زائد کیس رجسٹرہوئے ہیں ،تمام خواتین کو ایک چھت تلے انصاف فراہم کیا جارہا ہے ،اس موقع پر ممبر صوبائی اسمبلی سبین گل ،ڈائریکٹر سوشل ویلفئیر رانا جاوید محمود ،مزمل یار،محمد احمد چشتی ودیگر افسران بھی موجود تھے ۔بعد ازاں موبائی وزیر محمد اجمل چیمہ نے انسداد تشدد مرکز کے سرور روم ،فرسٹ ایڈ ،ایکسرے ،پراسیکیوشن ،میڈی ایشن ،ریکارڈ ،رپورٹنگ ،انوسٹگیشن ورمز اور سائیکالوجسٹ آفس کا بھی دورہ کیا ۔دریں اثناء صوبائی وزیر محمد اجمل چیمہ نے محکمہ سوشل ویلفئیر ملتان ڈویژن کے افسران سے بھی ملاقاتیں کی۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ افسران ایمانداری سے اپنے فرائض انجام دیں اور عوامی خدمت کو اپنا شعار بنائیں ،ادارہ میں بے ضابطگیوں کی نشاندہی کریں ،معاملات میں چیک اینڈ بیلنس لائیں ۔انہو ں نے کہا کہ ملک و قوم اور اپنے ادارہ کی بہتری کے لئے ہمیں اپنے پیٹ پر پتھر بھی باندھنا پڑیں گے ،وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے تحت ہمیں عوامی خدمت کو اپنا اولین ٹارگٹ بنانا چاہیے ،انہوں نے مزید کہا کہ آپ محنت ،ایمانداری سے فرائض انجام دیں ،آپکی ہر ضروریات کا خیا ل ر کھا جائے گا ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -