ہیلتھ سنٹرز لاوارث ، پرانے سرجیکل آلات سے آپریشن کا انکشاف

ہیلتھ سنٹرز لاوارث ، پرانے سرجیکل آلات سے آپریشن کا انکشاف

  

جام پور (نامہ نگار) ضلع راجن پور میں تمام ہیلتھ سنٹروں پر ایک پروگرام کے ذریعہ ڈلیوری کی غرض سے آنے والی خواتین کو جہاں مفت اپریشن کی سہولیات دی جاتی ہے وہاں پر ان کو گھر تک مفت ایمبولنس بھی فراہم کی جاتی ہے۔ ضلع بھر کے (بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

ہیلتھ سنٹروں پر سرجیکل الات کو گرم کرنے کا کوئی بندوبست نہ ہے۔ سنٹروں پر عملہ ایک ہی الات سے سارادن مریضوں کو چھیر پھاڑ کرتے ہیں۔ ڈلیوری کی غرض سے آنے والی خواتین کو بھی پرانے آلات سے اپریشن کرتے ہیں۔گزشتہ دنوں اپریشن کے بعد متعدد خواتین میں کالے یرقان کی موجود گی کا انکشاف ہوا ہے۔کئی خواتین ڈلیوری کے دوران کالا یرقان کی بیماری میں مبتلا ہو نے کی وجہ سے زندگی کی بازی ہا رچکی ہیں۔ ایک خاتون کے شوہر جمیل احمد نے کہا کہ ڈلیوری سے قبل ٹیسٹ کرائے میری بیوی کے تمام ٹیسٹ ٹھیک تھے۔لیکن بعد میں کالا یرقان ہو گیا۔ بڑا مہنگا علاج ہے کہاں سے علاج کرائیں ۔ دوسری طرف محکمہ صحت کے سب ڈویژن انچارج ڈاکٹر قاضی یاسر ہر ماہ حکومت کو سب اچھا کی رپورٹ دے رہے ہیں۔ ہر ماہ ڈلیوری ۔ ایمبولنس۔ بنیادی ادویات کی فراہمی۔ خسرہ ۔ دیگر املاک کے خاتمہ کے لیے تیل ۔اور دیگر اخراجات کی مد میں کروڑں کے روپے کے فنڈز افسران دورے ظاہر کر رہے ہیں۔ اس سلسلے میں ایم این سی ایچ پروگرام کے ضلع افسر ڈاکٹر جام خلیل خان نے رابطہ پر اس بیماری کی تصدیق کی ۔اور دعوی بھی کیا اگر حکومت ضلع کی ذمہ داریاں ایک ماہ کے لیے میرے سپرد کردیں تو ضلع راجنپور کو لاہور کے برابر لا کرکے دوں گا۔ اس بیماری کے پھیلانے میں عملہ کی غفلت ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -