فراڈ کیس میں ڈی جی مائنز 14نومبر کو ذاتی حیثیت میں ہائیکورٹ طلب

فراڈ کیس میں ڈی جی مائنز 14نومبر کو ذاتی حیثیت میں ہائیکورٹ طلب

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے سیالکوٹ سے ریت نکالنے کا ٹھیکہ دینے کے باوجود کنٹریکٹر کو کام سے روکنے کے خلاف درخواست پر ڈی جی مائینز کوذاتی حیثیت میں14نومبرکو طلب کرلیاہے۔مسٹر جسٹس امیر بھٹی نے اس سلسلے میں متعلقہ ٹھییکدار کی درخواست کی سماعت کے دوران ریمارکس دیئے کہ قانون کی خلاف ورزی کسی صورت بھی برداشت نہیں کی جائے گی۔درخواست گزار کے وکیل عمران چدھڑنے موقف اختیار کیا کہ ان کے موکل نے 8کروڑ روپے کا ٹھیکہ لیا ،اب ضلعی انتظامیہ ریت نہیں نکالنے دے رہی ،فاضل جج نے ڈی سی سیالکوٹ اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر پربرہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ آپ لوگوں نے شہریوں کو پھنسا کر رکھ دیا ہے ،قانون کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی،کس قانون کے تحت آپ نے کنٹریکٹر کے کام میں رکاوٹ ڈالی ؟آپ نے لوگوں کے ساتھ فراڈ کیا ہے ،آپ کے خلاف سخت کاروائی ہوگی ،پہلے ٹھیکہ دیتے ہیں پھر ان کے کاموں میں رکاوٹ پیدا کرتے ہیں۔عدالت نے مزیدکارروائی 14 نومبر تک ملتوی کرتے ہوئے ڈی جی مائنیز کو ذاتی طور پر پیش ہونے کا حکم جاری کردیا۔

ڈی جی مائنزطلب

مزید :

علاقائی -