طبقاتی فرق کے حوالے سے ورلڈ بینک کی رپورٹ تشویشناک ہے،امیر العظیم

طبقاتی فرق کے حوالے سے ورلڈ بینک کی رپورٹ تشویشناک ہے،امیر العظیم

  

لاہور(نمائندہ خصوصی )امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیر العظیم نے پاکستان میں طبقاتی فرق کے حوالے سے ورلڈبنک کی تازہ رپورٹ کوتشویشناک قراردیتے ہوئے کہاہے کہ حکمرانوں کی ناکام معاشی پالیسیوں کی بدولت ملک میں امیر اور غریب کے درمیان طبقاتی فرق میں اضافہ تشویش ناک اور لمحہ فکریہ ہے۔ورلڈ بنک کی رپورٹ سے ظاہر ہوتاہے کہ حکمرانوں کے پاس کسی قسم کی کوئی معاشی پالیسی نہیں۔رپورٹ کے مطابق بلوچستان کی62فیصد،سندھ کی30،پنجاب کی13اور خیبرپختونخواہ کی15فیصد آباد ی خط غربت سے نیچے زندگی گزارنے پر مجبور ہے جبکہ اس حوالے سے حکومتی اقدامات غیر تسلی بخش ہیں۔انہوں نے کہاکہ ایک طرف وزیر خزانہ کہتے ہیں کہ12ارب ڈالر کی فوری امداد سے معاشی بحران ٹل چکا ہے اور آئی ایم ایف کے پاس جانے کی ضرورت نہیں دوسری طرف آئی ایم ایف کے حکام کے ساتھ قرض حاصل کرنے کے لیے مذاکرات کیے جارہے ہیں۔آئی ایم ایف کی سخت ترین شرائط پر قرض حاصل کرنے سے ملک میں مہنگائی کانیاطوفان آئے گا۔عوام کی زندگی پہلے ہی شدید مشکلات کاشکار ہے،موجودہ حکومت کی ناقص پالیسیوں کی بدولت ان میں اوراضافہ ہورہاہے۔انہوں نے کہاکہ عوام کوریلیف فراہم کرنے کے لیے حکومت فوری طورپر ایک بڑے ریلیف پیکیج کااعلان کرے ۔دکھاوے کے اقدامات اور محض بیانات سے کچھ نہیں ہوگا۔

امیر العظیم

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -