اسمبلی میں اسرائیل کو تسلیم کئے جانے کی باتیں خطرے کی گھنٹی،مولانا حیدری

اسمبلی میں اسرائیل کو تسلیم کئے جانے کی باتیں خطرے کی گھنٹی،مولانا حیدری

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) جمعیت علمائے اسلام کے جنرل سیکرٹری و سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ جب ہم کہتے تھے تحریک انصاف حکومت عالمی ایجنڈہ پورا کر نے کے لئے اقتدار میں لائی گئی ہے اس وقت کہا جاتا تھا کہ مولویوں کا پروپیگنڈہ ہے اب ایوان میں اسرائیل کو تسلیم کیے جانے کی باتیں دو قومی نظریے کے لئے خطرے کی گھنٹی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مولانا عبدالغفور حیدری نے کہاکہ اسرائیلی طیارے کی ملک آمد اور اب اسمبلی میں اسرائیل کو تسلیم کیے جانے کی باتیں الارمنگ ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ جب مولانا فضل الرحمن کہتے تھے کہ موجودہ حکومت کو یہودی ایجنڈے کی تکمیل کیلئے لایا گیا ہے تو کہتے تھے مولویوں والی باتیں ہیں، اس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں لیکن تسلسل سے اسرائیل کے طیارے کی ملک آمد اور پھر تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے اسرائیل کو تسلیم کیے جانے اور اسرائیل کو مسلم دوست ظاہرکرنے کی باتیں کر کے آخر کس کو خوش کرنے کی کوششیں ہو رہی ہیں ۔ کیا یہ بات ان دوستوں کو بتانیکی ضرورت ہے کہ لاکھوں فلسطینوں کا قاتل اسرائیل ہے جس نے زبردستی قبلہ اول پر قبضہ جما رکھا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ کل تک یہی لوگ تھے جب انہوں نے لادینیت کے نام مشرقی پاکستان کو الگ کیا تھا آج وہی لوگ نئے سرے سے نئے نظریے پیش کر رہے ہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ نیب لوگوں کو بے عزت کرنے تک محدود رہ گیا ہے۔ ہمارے خیال میں جب ملک میں عدالتیں آزاد ہیں تو پھر نیب کی کیا ضرورت رہ جاتی ہے ۔ نیب کو ختم کردیا جانا چاہیے۔

مولانا حیدری

مزید :

صفحہ آخر -