نوشہرہ‘ فریقین میں آمدو رفت کا راستہ بند ہونے سے مسئلہ گھمبیر

نوشہرہ‘ فریقین میں آمدو رفت کا راستہ بند ہونے سے مسئلہ گھمبیر

  

نوشہرہ(بیورورپورٹ)نوشہرہ اکوڑہ خٹک میں رہائشیوں کے لئے آمدورفت کا راستہ بند کرنے کا مسئلہ گھمبیر ایک فریق راستہ کھلا رکھنے کیلئے اور دوسرا بند کرنے پر بضد کئی بار جرگے ہوئے لیکن مسئلہ حل نہ ہوسکا اسلامی اور اخلاقی طورپر کسی کو راستہ بندنہیں کرنا چاہیے اس سلسلے میں نوشہرہ کے علاقہ اکوڑہ خٹک کے رہائشیوں محمدنصیر، سید احسان شاہ، ممتاز، رفیق اور نیاز ولی نے نوشہرہ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہم اور میاں حضران باچا اکوڑہ خٹک تھانے کے نزدیک رہائش پزیر اور ہم گزشتہ کئی سالوں سے اپنے ذاتی مکانات میں رہ ہیں لیکن گزشتہ کئی سالوں سے میاں حضران اور ان کے عزیز واقارب ہمارے دس سے بارہ گھرانوں کے آمدورفت کا راستہ بند کرنا چاہتے ہیں جس سے ہمیں انتہائی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑے گا جس میں بچوں کی تعلیم متاثر ہوگی انہوں نے کہا کہ اسی راستے پر سوئی گیس اور واٹر سپلائی کی مین پائپ لائن گزری ہے اوررولز 133CRPC کے مطابق یہ راستہ ملکیت ریاست تصور ہوتی ہے لیکن اس کے باوجود ہمیں تنگ کیاجارہا ہے انہوں نے کہا کہ اس سلسلے ڈی سی نوشہرہ کی تشکیل کردہ کمیٹی جس میں ڈی پی او نوشہرہ اے سی جہانگیرہ تحصیلدار جہانگیرہ حلقہ پٹوار نے فیصلہ دے دیا ہے کہ راستہ بند نہ کیاجائے اور اگر فریقین اس فیصلے پر متفق نہ ہوتو عدالت سے رجوع کریں انہوں نے کہا کہ ہم میاں حضران باچا، ضلعی انتظامیہ اور حکومت وقت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ہمارے مسئلے کو حل کریں کیونکہ ہمارے گھروں کے ساتھ متصل راستہ تھانہ اکوڑہ خٹک کا ہے جو پہلے سے بلاک لگاکر بند کردیاگیا ہے اس لئے اگر ہمیں آمدورفت کیلئے راستہ نہ دیاگیا تو ہم بچوں اور اہل خانہ کے ہمراہ خود سوزی پر مجبور ہوجائیں گے ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -