’’ لٹ پئی اے، لوٹ کر لے جاؤ، بنی گالہ میں ان لوگوں کے گھر ریگولرائز نہیں ہوسکتے کیونکہ ۔ ۔ ۔ ‘‘ چیف جسٹس نے یہ بات کن لوگوں کیلئے کہی؟ کمرہ عدالت سے خبرآگئی

’’ لٹ پئی اے، لوٹ کر لے جاؤ، بنی گالہ میں ان لوگوں کے گھر ریگولرائز نہیں ...
’’ لٹ پئی اے، لوٹ کر لے جاؤ، بنی گالہ میں ان لوگوں کے گھر ریگولرائز نہیں ہوسکتے کیونکہ ۔ ۔ ۔ ‘‘ چیف جسٹس نے یہ بات کن لوگوں کیلئے کہی؟ کمرہ عدالت سے خبرآگئی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان میں بنی گالہ بوٹینیکل گارڈن کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثارنے ریمارکس دیئے ہیں کہ ہاں جی لٹ پئی ہے لٹ کے لے جاﺅ،سی ڈی اے دیکھ لے کیا تعمیرات ریگولر ہو سکتی ہیں

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے بنی گالہ بوٹینیکل گارڈن کیس کی سماعت کی،وکیل متاثرین نے کہا کہ زون ون میں غریب لوگوں کی تعمیرات ہے،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ زون ون کی تعمیرات ریگولر نہیں ہو سکتیں،وکیل نے کہا کہ اس عدالت سے غریب کو ہمیشہ ریلیف ملا ہے ۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہاں جی لٹ پئی ہے لٹ کے لے جاﺅ،سی ڈی اے دیکھ لے کیا تعمیرات ریگولر ہو سکتی ہیں ،چیف جسٹس پاکستا ن نے استفسار کیا کہ بلائیں چیئرمین سی ڈی اے کو کدھر ہیں؟ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ چیئرمین شاہد نکل گئے ہیں،چیف جسٹس نے استفسار کیا کس کے ساتھ نکل گئے ہیں،اس پر کمرہ عدالت میں قہقہے لگ گئے،عدالت نے کسی کی سماعت 22 نومبرتک ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -