تیتر کا شکار کرنے کے شوقین افراد کے لئے بڑی خوشخبری آ گئی ،پنجاب حکومت نے ایسا فیصلہ کر لیا کہ شکاریوں کی خوشی دیدنی ہو جائے گی

تیتر کا شکار کرنے کے شوقین افراد کے لئے بڑی خوشخبری آ گئی ،پنجاب حکومت نے ...
 تیتر کا شکار کرنے کے شوقین افراد کے لئے بڑی خوشخبری آ گئی ،پنجاب حکومت نے ایسا فیصلہ کر لیا کہ شکاریوں کی خوشی دیدنی ہو جائے گی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)محکمہ وائلڈلائف اینڈ پارکس پنجاب نے ایکٹ کے تحت صوبے کی 41 تحصیلوں میں کل سے 15فروری 2019ء تک تیتر کے شکار کی اجازت دیدی ہے ،شکار مستند شوٹنگ لائسنس کے ساتھ صر ف اتوار کے روز ہی کھیلاجاسکے گا ۔

تفصیلات کے مطابق اس امر کا فیصلہ ڈائریکٹر جنرل وائلڈلائف اینڈ پارکس پنجاب ثناء اللہ کی زیرصدارت اجلاس میں کیا گیا جس میں ڈپٹی ڈائریکٹر وائلڈلائف ہیڈ کوارٹرز محمد نعیم بھٹی ، ڈپٹی ڈائریکٹر وائلڈلائف لاہور ریجن ظفر الحسن ، ڈپٹی ڈائریکٹر پبلسٹی عامر مسعود ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر پلاننگ مدثر حسن کے علاوہ صوبہ بھر کے ریجنل افسران نے شرکت کی ۔جاری کردہ سرکلر کے مطابق تیتر اور سی سی کا شکار 15 نومبر2018ء تا 15فروری 2019ء صرف کلر سیداں ، گوجر خان ، جھنڈ ، پنڈی گھیپ ، سوہاوہ ، چکوال ، عیسیٰ خیل، سرگودھا، ساہیوال ،قائد آباد ، دریا خان ، جڑا نوالہ ، تاندلیانوالہ، گوجرہ ، پیر محل ، جھنگ ، لالیاں ، بھوانہ ، کامونکی، وزیر آباد ، پسرور ، سرائے عالمگیر ، پنڈی بھٹیاں ، نارووال ، ملک وال ، پھالیہ ، عارف والا ،دیپالپور ، لاہور کینٹ ، چونیاں ، صفدرآباد ، ننکانہ ، شجاع آباد ، کبیر والا، کہروڑ پکا ، میلسی ،کوٹ چٹھہ، کہروڑ لعل عیسن،علی پور ، جتوئی،چشتیاں کی تحصیلوں میں کھیلا جاسکتا ہے جبکہ صوبہ بھر کی بقیہ تمام تحصیلیں تیتر اور سی سی کے شکار کیلئے بند رہیں گی ۔ قانون کے مطابق شکار ایک گن سے یومیہ 6تیتر اور یومیہ 5سی سی شکار کئے جا سکتے ہیں ۔شکار کیلئے خو دکا ر ہتھیاروں ، گاڑی /جیپ کا استعمال منع ہے ۔وائلڈلائف سینگچوریز اور نیشنل پارکس میں ہر طرح کے شکار کی ممانعت ہے البتہ گیم ریزرو میں خصوصی پرمٹ کے ساتھ شکار کھیلا جا سکتاہے۔

ڈائریکٹر جنرل ثناء اللہ نے کہا ہے کہ شکارکے مروجہ قوانین کی خلاف ورزی کی صورت میں حسب ضابطہ قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ انہوں نے محکمہ کے تمام ریجنل اور ضلعی افسران کو ہدایت کی کہ شکار کیلئے ممنوع قرار دئیے گئے علاقوں پر کڑی نگاہ رکھیں اور شکار کی بیگ لمٹ سمیت جاری کردہ دیگر ہدایات پر ہرصورت عملدرآمد یقینی بنائیں ۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -