ضلع بھر کے تھانیدار وں کو روزانہ 3گھنٹے بارودی حاضر ہونے کاحکم

  ضلع بھر کے تھانیدار وں کو روزانہ 3گھنٹے بارودی حاضر ہونے کاحکم

  



ملتان (وقائع نگار) تفتیشی افسروں کی موجیں ختم۔ضلع بھر کے تھانیدار اب روزانہ فریقین کی سماعت کیلئے روزانہ تین گھنٹے بارودی (بقیہ نمبر48صفحہ7پر)

حاضر ہونگے۔چھٹی پر جانے والا افسر باقاعدہ اپنی عدم دستیابی کے حوالے سے روزنامچہ میں رپٹ درج کرنے کا پابند ہوگا۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ضلعی پولیس افسران کو بار بار شکایت موصول ہوئیں تھیں۔کہ بیشتر تفتیشی افسران مقدمہ کے فریقین کی سماعت بروقت نہیں کرتے۔بلکہ انکو روزانہ پیشی پر پیشہ دیتے ہیں۔جسکی وجہ سے سائلین کو شدید پریشانی سے دوچار ہونا پڑتا ہے۔اسی حوالے سے ایس ایس پی آپریشنز نے تفتیشی افسران کو تھانے میں روزانہ چار سے لیکر شام سات بجے (تین گھنٹے) تک پابند کیا ہے۔کہ وہ اس دوران مقدمہ سے متلعق دونوں پارٹیوں کی سماعت کریں گے۔طے شدہ وقت سے دس منٹ قبل تھانیدار اپنی سیٹ پر باوردی موجود ہوا کریں گا۔اور اگر اس دوران تھانے سے باہر جانا اشد ضروری سمجھتا ہے تو اسکو اپنی عدم دستیابی سے قبل روزنامچہ میں وجوہات کے ساتھ رپٹ درج کرنی ہوگی۔تفتیشی افسراں کی مانیٹرنگ بھی کی جائے گی۔حکم عدولی کرنے والے کو غیر حاضر تصور کیا جائے گا۔جبکہ ڈویثرن افسر ڈیلی کی بنیاد پر رپورٹ مرتب کرکے متعلقہ افسر کو بھیجنے کا بھی پابند ہوگا۔

بارودی

مزید : ملتان صفحہ آخر