پشاور،سربند کے عمائدین کا ایس ایچ او کو معطل کرنے کا مطالبہ

  پشاور،سربند کے عمائدین کا ایس ایچ او کو معطل کرنے کا مطالبہ

  



پشا ور (سٹی رپورٹر)پشاور کے علاقہ سربند کے عمائدین اور جرگہ مشران نے مثالی پولیس کی جانب سے گھروں کا تقدس پامال کرنے اور اختیارا ت کے نا جائز استعمال کے خلاف اعلیٰ حکا م سے نوٹس لینے اور تین کے اندر اندر ایس ایچ او کو معطل کرنے کا مطالبہ کیا ہے بصورت دیگر علاقہ کے عوام اچینی چوک بند کر احتجاجی دھرنا دینگے۔گزشتہ روز پشاور پریس کلب میں سابقہ ناظم عاطف خلیل،کونسلر حاجی جاوید،کونسلر غلام حسین،حاجی جمال اور سابقہ کونسلر ہدایت اللہ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ چند روز قبل علاقہ میں لڑائی ہوئی جسمیں فریقین کی جانب سے فائرنگ ہوئی تاہم بطور علاقہ مشران اور پولیس مصالحتی کمیٹی کے ممبران ہم نے جائے وقوع پر پہنچ کر دونو ں فریقین کے مابین صلاح صفائی کارروائی جبکہ بعدازاں تھانہ سربند کے ایس ایچ او قیوم مروت نے بھاری نفری کیساتھ اکر جرگہ مشران اور فریقین کے گھروں پر دھوا بول دیا اور گھروں کی چار دیواری کا تقدس پامال کر کے عورتوں کو گالیاں دی جبکہ گھروں سے نقدی اور زیورات بھی اپنے قبضے میں لیکر چلے گئے۔انہوں نے کہا کہ مثالی پولیس کے ایس ایچ او نے قوانین اور اخلاقیات کی دھچیاں اڑا کر رکھ دی جسکی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔انہوں نے کہا کہ کہ پولیس نے بغیر وارنٹ اور لیڈیز کانسٹبل کی عدم موجود میں گھروں پر چھاپے مار کر معززین علاقہ کے عزتوں کیساتھ کھلواڑ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پولیس نے فریقین کے افراد کو گرفتار کیا جبکہ جرگہ مشران کے خلاف بعد میں پرچے درج کیے جو خود قانون کیساتھ ایک مذاق ہے۔انہوں نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا،آئی جی خیبر پختونخوا اور دیگر متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ پولیس گردی میں ملوث ایس ایچ او کے خلاف کارروائی کر کے معطل کیا جائے جبکہ پولیس میں موجود ایسے کالی بھیڑیوں کو عبرت کا نشان بنایا جائے بصورت دیگر تین دن کے بعد احتجاجی دھرنا دینگے۔واضح رہے کہ سربند کے عمائدن اور جرگہ مشران نے بعد ازاں پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ بھی کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر