ملک میں 64 لاکھ افراد نشے کے عادی ہیں، بریگیڈیئر منصور جنجوعہ

      ملک میں 64 لاکھ افراد نشے کے عادی ہیں، بریگیڈیئر منصور جنجوعہ

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)ڈائریکٹر جنرل اینٹی نارکوٹکس فورس سندھ بریگیڈیئر منصور جنجوعہ نے کہا ہے کہ ملک میں 64 لاکھ افراد نشے کے عادی ہے۔جو لمحہ فکریہ ہے ہمیں اپنے نوجوانوں اور طالب علموں کو اس لعنت سے بچانے کے لیے بھر پور کردار ادا کرنا ہوگا پہلے صرف چرس او ر ہیرو ن کا استعمال ہوتا تھا اب آئس کا نشہ کرنے والوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے وہ مقامی ہوٹل میں روٹری کلب آف کراچی پلاٹینیم کی جانب سے ان کے اعزاز میں دئیے گئے عشائیے کے موقع پر خطاب کررہے تھے اس موقع پر روٹری کلب کے صدر رضوان آدھیا اور جنرل سیکریٹری نوین خان نے بھی خطاب کیا۔تقریب میں بحریہ کالج کے پرنسپل کیپٹن ارشد محی الدین سمیت روٹری کلب کے ممبران اور اعلی شخصیات نے شرکت کی اس موقع پر روٹری کلب کی جانب سے مہمان خصوصی ودیگر کو شیلڈ،پھول اور اجرک پیش کی گئی ڈی جی، اے این ایف نے کہا کہ ہمیں اس پروپیگنڈے کو ختم کرنا ہوگا کہ دنیا میں منشیات کی بھاری مقدار پاکستان سے جاتی ہے اے این ایف اپنے محدود وسائل کے باوجود منشیات کی روک تھام کے لیے پوری کوشش کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس لعنت کے خاتمے کی ذمہ داری صرف قانون نافذ کرنے والے اداروں نہیں ڈالی جاسکتی بلکہ سب کو کردار کرنا ہوگا۔بریگیڈئیر منصور نے کہا کہ اے این ایف منشیات کے کاروبار میں ملوث مجرموں کو کیفر کردار تک پہچانے کے لیے اہم کرادر ادا کررہا ہے انہوں نے کہا کہ وہ اکثر اسکول و کالجز کادورہ کرتے ہیں تاکہ طالب علموں کی زندگیوں کو محفوظ بنایا جائے انہوں نے کہا کہ موجودہ صورتحال می والدین پر سب سے زیاد ہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ بچوں کی سرگرمیوں پر نظر رکھیں انہوں نے کہا کہ اے این ایف کی جانب سے گھناو نے دھندے میں ملوث مجرموں کے خلاف ہر ماہ مقدمات درج کر کے عدالتوں میں چالان پیش کیے جاتے ہیں۔پاکستان کی جانب سے منشیات کی روک تھام کے لیے جو اقدامات کیے جارہے ہیں اس کو اقوام متحدہ نے بھی سراہا ہے انہوں نے کہا کہ اس لعنت کو معاشرے سے پاک کرنے کے لیے ہمیں بزنس کمیونٹی،گورنر سندھ،سی پی ایل سی اور حکومت سندھ کا مکمل تعاون حاصل ہے انہوں نے کہا کہ 2005 کے زلزلے میں سب سے اہم کردار کراچی کی تاجر برادری کا تھا جس سے سب سے زیادہ امداد فراہم کی تھی کراچی کے لوگوں نے ہر مشکل میں قوم کا ساتھ دیا ہے جسے فراموش نہیں کیا جاسکتا ہے۔صدر روٹری کلب رضوان آدھیا نے کہا کہ 10 افراد سے شروع ہونے والا یہ قافلہ اب سیکڑوں لوگو ں پر مشتمل ہے 2 سال قبل لگائے جانے والا یہ پودا اب تن آور درخت بن چکا ہے انہوں نے کہا کہ ان 2 سالوں میں ہم نے کراچی،حیدرآباد، اندرون سندھ میں کلین گرین پاکستان سمیت تعلیم وصحت کے شعبوں میں درجنوں منصوبے شروع کیے ہیں۔ہم ملک کو آلودگی سے پاک بناناچاہتے ہیں۔انہوں نے اس سلسلے میں بھی کمشنر کراچی،منتخب نمائندوں اور دیگر لوگوں کا تعاون حاصل ہے۔نورین خان نے مہمانوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اے این ایف نے لوگوں کو منشیات سے دور رکھنے کے لیے مثالی کام کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ معاشرے میں مقصد سب لوگوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ بچوں کے ہاتھوں میں سگریٹ دیکھیں توفوری اس کانوٹس لیں۔سگریٹ پینے والا ہی بچہ آگے جاکر منشیات کا آدھی بنتا ہے۔تقریب میں بریگیڈیئر منصور جنجوعہ،کیپٹن ارشد محی الدین کو روٹری کلب اعزازی ممبر شپ بھی دی گئی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر