نیشنل بینک کی 70ویں سالگرہ پر ہیڈ آفس سمیت ریجنل دفاتر میں تقریبات کا انعقاد

نیشنل بینک کی 70ویں سالگرہ پر ہیڈ آفس سمیت ریجنل دفاتر میں تقریبات کا انعقاد

  



کراچی(اکنامک رپورٹر)نیشنل بینک آف پاکستان نے اپنے قیام کے ستر سال مکمل ہونے پر ہیڈ آفس ا ور ملک بھر کے ریجنل آفیسز میں تقریبات کا اہتمام کیا۔اس موقع پر ملک بھر میں کام کرنے والے نیشنل بینک کے ملازمین نے بھرپور شرکت کی ا ور نیشنل بینک کی ترقی و کامیابی کے لیے دعائیں کیں۔ این بی پی کے ہیڈ آفس میں منعقد ہونے والی تقریب میں بینک کے صدر عارف عثمانی کے علاوہ تمام سینئر عہدیدارو ملازمین نے بھرپور شرکت کی ا ور اس تاریخی موقع کو یادگار بنایا۔ اس موقع پر صدر بینک عارف عثمانی نے کہا کہ میری خوش قسمتی ہے کہ اللہ تعالیٰ نے مجھے آپ لوگوں کے ساتھ بینک کی سترہویں سالگرہ منانے کا موقع دیا۔ اس موقع پر میں بینک میں کام کرنے والے تمام ملازمین کو خراجِ تحسین پیش کرتا ہوں۔ جنہوں نے اپنی عمر بھر کی محنت سے بینک کو ترقی و کامیابی کے اس مقام پر پہنچایا۔ عارف عثمانی نے بینک کی ستر سالہ تاریخ پر روشنی ڈالی ا ور کہا کہ NBP کا قیام 1949 میں ایک آرڈنینس کے ذریعے عمل میں آیا۔ اپنے وجود میں آنے کے بعد بینک کے ملک کی ترقی کے لیے ہر ترقیاتی منصوبے میں اپنا حصہ ڈالا۔ زرعی شعبہ، صنعتی ترقی، توانائی، چھوٹے قرضہ جات، کارپوریٹ لون، اندرون و بیرون ملک ترسیلات یا اسلامک بینکنگ، غرض زندگی کے ہر شعبے میں نیشنل بینک نے فنانس کر کے ملک کی ترقی ا ور کامیابی کے لیے اپنا بھرپور کردار ادا کیا۔نیشنل بینک کے صدر نے اپنی مستقبل کی ترجیحات بھی بیان کرتے ہوئے بتایا کہ تمام بینک اب جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کر کے لوگوں کو زیادہ سے زیادہ سہولیتیں فراہم کر رہے ہیں۔ اس لیے نیشنل بینک بھی جدید تر ٹیکنالوجی کا استعمال بڑھائے گاا ور ڈیجیٹل بینکنگ کی راہ اپنائے گا۔ اس کے علاوہ بینک نوجوانوں کے لیے ”کامیاب جوان پروگرام“ جس سے ملک بھر کے نوجوان فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے پاؤں پر کھڑے ہو کر ملکی معاشی ترقی میں اپنا حصہ ڈالیں گے۔آخر میں انہوں نے تمام ملازمین کی محنت ا ور کاوشوں کی تعریف کی جن کی و جہ سے بینک آج اثاثہ جات ا ور منافع میں پاکستان کا سب سے بڑا بینک ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر