موجودہ معاشی صورتحال کے باعث جرائم میں اضافہ ہوا ہے،سماجی ماہرین

موجودہ معاشی صورتحال کے باعث جرائم میں اضافہ ہوا ہے،سماجی ماہرین

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)معاشرے سے جرائم کے خاتمے کے لئے اداروں کے درمیان باہمی روابط انتہائی ضروری ہیں۔ کرائم فری سوسائٹی کا قیام کے لئے تمام اداروں کو مل کر کام کرنا ہو گا۔ان خیالات کا اظہارسیو پاکستان فاؤنڈیشن اور شعبہ جرمیات جامعہ کراچی کے اشتراک سے منعقدہ سیمینار ”کرائم ان سوسائٹی“سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی ڈائریکٹرجنرل پاکستان میری ٹائم سیکورٹی ایجنسی کموڈورجواد احمدقریشی،سابق آئی جی جیل خانہ جات مظفرعالم صدیقی،قونصل جنرل تھائی لینڈ تھاتری چواچاٹا، سینیٹر عبدالحسیب خان،چیئرمین سیوپاکستان فاؤنڈیشن حاجی مرید ناظم چوہان،ایکسچینج کمپنیزایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری ظفرپراچہ، صدرشعبہ جرمیات جامعہ کراچی ڈاکٹرجی ایم برفت، پروفیسرڈاکٹرنائمہ سعیدودیگر مقررین کیا۔مقررین کا کہناتھا کہ کہ معاشی حالات بہتر کو بہتر بنائے بغیر جرائم پر قابو پانا ممکن نہیں۔ جرائم پر قابو پانے کیلئے تمام اداروں کو جہاں اپنا کردار اداکرنا چاہئے وہیں ان اداروں کے درمیان مضبوط روابط ہونا بھی ضروری ہے۔سیمینارکے مہمان خصوصی ڈپٹی ڈائریکٹرجنرل پاکستان میری ٹائم سیکورٹی ایجنسی کموڈورجواد احمدقریشی نے کہاکہ تعلیمی اداروں میں منشیات کا بڑھتا رجحان معاشرے کیلئے انتہائی خطرناک ہے۔تعلیمی اداروں کو منشیات جیسی لعنت سے پاک کرنے کیلئے سب کو ملکر کام کرناہوگا۔ تقریب میں مختلف شعبہ جات کے اساتذہ اور طلباء وطالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر