بابا گورو نانک کی تعلیمات امن و شانتی، محبت اور بھائی چارے کا دوس دیتی ہیں: گورنر پنجاب 

  بابا گورو نانک کی تعلیمات امن و شانتی، محبت اور بھائی چارے کا دوس دیتی ہیں: ...

  



ننکانہ صاحب،لاہور(نمائندہ خصوصی)گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا کہ بابا گورونانک کی تعلیمات امن و شانتی، پیارو محبت اور بھائی چارے کا درس دیتی ہیں بابا گورونانک نے حق کی تلاش کیلئے بغداد، مکہ اور مدینہ کے سفر کیے، بابا گورونانک کا سفر ننکانہ صاحب سے شروع ہو کر کرتار پور میں ختم ہوا۔باباگورونانک کی جائے پیدائش گورودوارہ جنم استھان سمیت پاکستان میں موجودسکھوں کے مقدس مقامات ہمیں ورثے میں ملے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سکھ مذہب کے بانی بابا گورونانک دیوجی کے 550ویں جنم دن کی تقریبات کے آخری روز گورودوارہ جنم استان ننکانہ صاب میں منعقدہ مرکزی تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب میں وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈیئر (ر)اعجاز احمد شاہ، وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری،صوبائی پارلیمانی سیکرٹری سردار مہندر پال سنگھ، چیئر مین وقف املاک بورڈ ڈاکٹر عامر احمد، ریجنل پولیس آفیسر شیخوپورہ رینج سہیل حبیب تاجک، پردھان پاکستان گوروردوارہ پربندھک کمیٹی سردار ستونت سنگھ، بھارتی سکھ یاتریوں کے جتھہ دارسردار گورومیت سنگھ، ڈپٹی کمشنر ننکانہ راجہ منصور احمد، ڈی پی اواسماعیل الرحمن کھاڑک،سابقہ پردھان دہلی سکھ گورودوارہ پربندک کمیٹی سردار پرم جیت سنگھ سرنا، سیکرٹری متروکہ وقف املاک بورڈطارق وزیر، ڈپٹی سیکرٹری عمران گوندل، کیئر ٹیکر عتیق گیلانی کے علاوہ اندرو ن ملک اور دنیا بھر سے آئے سکھ یاتریوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا کہ ہم نے وعدہ کیا تھا کہ 550ویں جنم دن کے موقع پر کرتار پور کوریڈور کو کھولا جائے گا۔ جب انسان نیکی کے کام کا فیصلہ کر لے تو اللہ بھی اس کی مدد کرتا ہے۔ سکھ قوم 70سال سے اس بات کا انتظار کر رہی تھی اور کرتارپور کوریڈوردنیا بھر کے سکھوں کے لئے بابا گورونانک کے جنم دن پر پاکستانی حکومت کی طرف سے ایک تحفہ ہے، پاکستان میں سکھ گورودوارہ پربندھک کمیٹی کا قیام عمل میں آیا کرتارپور کوریڈور کی تعمیر کے وقت اس بات کا خیال رکھا گیا کہ بابا جی 104ایکڑ رقبہ کھیتی باڑی کے لئے تھا اس کو اسی طرح کھیتی باڑی کے لئے مختص رکھا جائے۔ اس لئے 42ایکڑ پر گورودوارہ اور62ایکڑ کھیتی باڑی کے لئے چھوڑ دیا گیا۔ہم سکھوں سے یاری کا حق ادا کر رہے ہیں۔  میرا پوری دنیا کے سکھوں سے ساتھ محبت پیار اور خلوص کا رشتہ قائم ہے اور انہیں دل کی اتھاہ گہرائیوں سے خوش آمدید کہتا ہوں انہوں نے کہا کہ گورنر ہاؤس کے دروازے سکھوں کے لئے کھول دئیے ہیں ویزہ کے معاملات پر ہمارا پورا فوکس ہے اس لئے ہم نے 45دن کے ملٹی پل ویزے دینے کا فیصلہ کیا ہے۔صوبائی پارلیمانی سیکرٹری سردار مہندر سنگھ نے کہا کہ 72سال کی ارداس کے بعد کرتار پور کا راستہ کھول کر اور بابا گورونانک  یونیورسٹی کا قیام عمل میں لاکر دنیا بھر کے سکھوں کے دل جیت لئے ہیں۔اب دنیا بھر کے بارہ کروڑ سکھ پاکستان کے سفیر بن کردنیا میں پاکستان کا امن کے بارے میں تشخص بیان کریں گے۔پردھان پاکستان سکھ گورودوارہ پربندھک کمیٹی سردار ستوند سنگھ نے کہا کہ 1999میں بننے والی پاکستان سکھ گورودوارہ پربندھک کمیٹی میں جس طرح گورودواروں کی سیوا سنبھال کی ہے اور جس طرح مسلمان بھائیوں اور حکومت پاکستان نے ہمیں  550ویں جنم دن کے موقع پر سہولیات میسر کی ہیں اس پر سکھ قوم آپ کی شکر گذار ہے اور ہمیں پاکستان میں جتنا پیار اورعزت ملی ہے ہم اپنے آپ کو کبھی بھی پاکستان میں اقلیت محسوس نہیں کرتے۔چیئر مین متروکہ وقف املاک بورڈ ڈاکٹر عامر احمد نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کے ویژن اور ہدایت کے مطابق ہم دنیا بھر سے آنے والی سکھ سنگتوں کی سیوا میں مصروف ہیں۔ اگر کوئی کمی بیشی ہو تو معذرت چاہتے ہیں۔ اس موقع پر وفاقی وزیر مذہبی امور نوراللہ قادری نے کہا کہ میں پاکستانی سرکاراور وزیر اعظم پاکستان کی طرف سے تمام سکھ سنگتوں کو 550ویں جنم دن کی مبارکباد دیتا ہوں۔وزیر اعظم عمران خان جس جذبہ اور لگن سے مذہبی آزادی کا پیغام دیا ہے اور پاکستان میں تمام مذاہب بلا خوف و جھجک اپنے مذہب پر کاربند ہیں کیوں کہ قرآن پاک بھی ہمیں  اپنے دین کی پیروی کرنے کا حکم دیتا ہے۔اس موقع پر ممبران پاکستان سکھ گورودوارہ جنم استھان نے کہا کہ ہم پاکستان میں اقلیت نہیں اکثریت ہیں اور ہم وزیر اعظم پاکستان عمران خان،آرمی چیف  جنرل قمر جاوید باجوہ، وفاقی اور صوبائی وزراء اور چیئر مین وقف املاک بورڈ پاکستان کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے بابا گورونانک کے 550ویں جنم دن کے موقع پر سکھوں کے لئے کرتارپور کوریڈور بابا گورونانک یونیورسٹی کاسنگ بنیاد 550روپے کا سکہ اور اسی مالیت کا ڈاک ٹکٹ جاری کیا اور لاہور میوزیم میں خالصہ لائبریری کا قیام عمل میں لائے۔ننکانہ صاحب کی ضلعی انتظامیہ، پولیس، رینجرز، ایمگریشن کا عملہ، سکیورٹی، میڈیا، محکمہ تعلیم کا شکریہ ادا کیا اور ضلعی انتظامیہ کی طرف سے ساتوں گورودواروں کی یاترہ کے لئے شٹل سروس چلانے پر بھی ان کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پروفاقی وزیر داخلہ بریگیڈیئر(ر) اعجاز احمد شاہ نے کہا کہ میں نے بابا گورونانک کا پانچ سو سالہ میلہ بھی دیکھا ہوا ہے اور 2005میں ننکانہ صاحب کو ضلع بنانے کا بنیادی تصور یہ تھا کہ امرتسر سے صبح یاتری آئیں اور شام کو متھا ٹیکی کے بعد واپس اپنے گھروں میں چلے جائیں لیکن حکومتوں کی تبدیلی کی وجہ سے یہ بیل منڈے نہ چڑھ سکی۔ بابا گورونانک ہمارا ہے اور بابا جی کے گورودواروں کی سیوا کرنا ہمارا فرض ہے آپ ہمارے مہمان ہیں اور ہم نے پوری لگن سے آپ کی مہمانداری کر رہے ہیں۔انشااللہ آنے والے وقت میں ایک کمیٹی بنا دی ہے جو کمی کوتاہی کی نشاندہی کرے گی اور انتظامات میں بہتری آئے گی۔  بابا گورونانک کی تعلیمات اور ان کے سفر سب کچھ امن اور سچائی کے لئے ہے۔انہوں نے کہا کہ مخلوق خدا سے نفرت نہ کریں۔ہم سب ایک ہیں۔ موجودہ گورنمنٹ سکھوں کے لئے بہت کچھ کرنا چاہتی ہے لیکن بھارتی حکومت کی پابندیوں کی وجہ سے ہمارے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں۔وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا ہے کہ مولانا صاحب بادشاہ ہیں، ملک میں جہاں چاہیں دھرنا دیں، حکومت نے ان کو آرام سے رکھا ہوا، کہیں اور دھرنا دیں گے وہاں بھی آرام سے رکھیں گے،  نواز شریف کے لیے بورڈ فیصلہ کرے گا، اگر مریم نواز بیمار ہوجائیں گی تو انہیں بھی باہر جانے کی اجازت مل جائیگی،سکھ یاتریوں کو پہلے اور آج کے ننکانہ میں فرق محسوس ہوگا، ننکانہ کو ضلع بنانے کا نظریہ تھا، صبح امرتسر سے یاتری چلے ماتھا ٹیکے اور شام کو واپس امرتسر جاسکے۔ننکانہ صاحب میں تقریب سے خطاب کے دوران وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان جلد جانے والے نہیں، ہم نے انہیں پانی بجلی اور طبی امداد بھی دی ہے، ہم مولانا فضل الرحمان کے ساتھ اتنا اچھا سلوک کررہے ہیں کہ یہاں ان کا دل لگ گیا ہے، انہیں اتنا پیار دے رہے ہیں کہ وہ وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ بھول جائیں گے۔ ہم مولانا فضل الرحمان کو بٹھائے رکھیں گے۔ حکومت یہ پانچ سال اور اگلے پانچ سال بھی پورے کرے گی۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ عمران خان اس قسم کے آدمی نہیں کہ کسی کو ڈیل یا ڈھیل دیں، نواز شریف کو انسانی ہمدردی کی بنیاد پر بیرون ملک علاج کی اجازت دی جا رہی ہے ڈاکٹروں کے مطابق نواز شریف کی حالت تشویش ناک ہے، پاکستان میں ان کا علاج ممکن نہیں، سارے وزرا کی یہی رائے ہے کہ نواز شریف کو علاج کے لیے بیرون ملک جانا چاہئے۔مریم نواز کے حوالے سے اعجاز شاہ نے کہا کہ مجھے تو نہیں پتا کہ مریم نواز بیمار ہیں، اللہ انہیں صحت دے وہ ٹھیک ہیں، اگر مریم نواز بیمار ہوجائیں گی تو انہیں بھی باہر جانے کی اجازت مل جائے گی۔دوسری طرف گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور اور صدر آزادکشمیر مسعود احمد خان کے در میان اہم ملاقات منگل کے روز گور نر ہاؤس لاہور میں منعقد ہوئی۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ پنجاب کے مشیر برائے ہیلتھ ایم پی اے حنیف پتافی بھی موجود تھے۔گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا ہے کہ بھارت کی ایک اور سازش بے نقاب ہوگئی، بھارت نے مقبوضہ کشمیرکے مسلم علاقوں کے نام تبدیل کرنیکی منصوبہ بندی شروع کر دی جبکہ گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور اور صدر آزادکشمیر مسعود احمد خان نے بھارتی سازش، مقبوضہ کشمیر میں 100روز کر فیواور دیگر بھارتی مظالم کے خلاف دنیا بھر میں اراکین پار لیمنٹ،سیاسی وانسانی حقوق کے تنظیموں اور حکومتی عہدیداروں کیساتھ رابطوں کو تیزکر نے کا اعلان کر دیا۔ 

گورنرپنجاب

مزید : صفحہ اول