وفاقی حکومت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ نواز شریف سے ضمانت لے ، معاون خصوصی برائے احتساب

وفاقی حکومت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ نواز شریف سے ضمانت لے ، معاون خصوصی برائے ...
وفاقی حکومت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ نواز شریف سے ضمانت لے ، معاون خصوصی برائے احتساب

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے کہاہے کہ انڈیمنٹی بانڈزکی شرط قانونی معاملہ ہے ، اس کو سیاسی رنگ نہ دیا جائے ، حکومت نواز شریف سے ضمانت مانگ رہی ہے ، کل عدالتیں اور عوام بھی سوال کرسکتے ہیں، وفاقی حکومت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ ضمانت لے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شہزاد اکبر نے کہا کہ حکومت نواز شریف سے انڈیمن بانڈ ز مانگ رہی ہے کیونکہ کل ہم سے عوام بھی سوال کرسکتے ہیں اور عدالتیں بھی سوال کرسکتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف ملک سے باہر جائیں اور ان کوعلاج کرواکے واپس آنا پڑے گا ،ان کو شورٹی دینا ہوگی ، نواز شریف کے خلاف میگا کرپشن کے مقدمات تھے جن میں ان کو سزا ہوچکی ہے اور کئی کیسز ابھی چل رہے ہیں۔ اس لئے ان کیسز میں نواز شریف کی موجودگی ضروری ہے اس لئے وہ جائیں اور علاج کروا کے واپس آئیں ۔

انہوں نے کہا کہ یہ سیاست کا معاملہ نہیں ہے ، اگر اس وقت ن لیگ کی حکومت بھی ہوتی تو اس کوبھی ایسے معاملات میں ایسا ہی کرنا پڑتا ۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو ون ٹائم اجازت علاج کیلئے دی جارہی ہے ، عدالتیں پوچھ سکتی ہیں کہ مجرم کوکس بنیاد پر باہر بھیجا گیا ، ماضی میں کئی بار ایسا ہوچکاہے کہ ملزمان ملک سے باہر گئے اور واپس نہیں آئے۔ اس لئے وفاقی حکومت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ ضمانت لے،قانون کے مطابق سزا یافتہ ملزم کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالا جاسکتا ، اہم معاملہ یہ ہے کہ شفافیت کا سوال رکھا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ کوئی سیاسی مسئلہ نہیں ہے اور نہ اس کوسیاسی مسئلے کا رنگ دینا چاہئے ، اس معاملے کو انسانی ہمدردی کے حوالے سے دیکھا گیاہے ۔انڈیمنٹی بانڈکی شرط قانونی معاملہ ہے ، اس کو سیاسی رنگ نہ دیا جائے ۔

مزید : قومی