بھارت پاکستانی میوزک کا مرہون منت ہے،ابراہیم فیض

بھارت پاکستانی میوزک کا مرہون منت ہے،ابراہیم فیض

لاہور ( فلم رپورٹر ) پاکستانی نژاد یونانی گلوکار ابراہیم فیض نے بتایاہے کہ بھارت ہمیشہ پاکستانی میوزک کا مرہون منت رہا ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ ان کا تعلق پاکستان سے ہے مگر وہ ایک لمبے عرصے سے یونان میں رہائش پذیر ہیں اور صحافت اور گلوکاری کے شعبے سے وابستہ ہیں۔ابراہیم فیض نے کہاکہ گلوکاری میں آنے کا ان کا مقصد پیسہ کمانا نہیں تھا کیونکہ اگر پیسہ ہی کمانا ہوتا تو وہ یونان میں ایک اچھا بزنس بھی کررہے ہیں گلوکاری ان کا شروع سے ہی شوق رہاہے۔اس لیئے انہوں نے اسے پروفیشن نہیں بنایا۔ابراہیم فیض نے کہاکہ اب تک وہ بہت سارے یورپ ممالک میں پرفارم کرچکے ہیں اور ان ملکوں میں انہوں نے ہمیشہ ملی نغمے سے اپنے شو کا آغاز کیا ہے کیونکہ وہ سمجھتے ہیں کہ وہ جہاں کہیں بھی جائیں گے ان کی پہچان پاکستان ہوگی۔اسی لیئے وہ اپنے شو کا آغاز پاکستانی ملی نغمے سے کرتے ہیں اور انہیں سب سے زیادہ خوشی تب ہوتی ہے جب انہیں سننے والے پاکستان زندہ باد کے نعرے لگاتے ہیں۔میوزک انڈسٹری کے حوالے سے ابراہیم فیض نے کہاکہ میں نہیں سمجھتا کہ پاکستانی میوزک انڈسٹری کو زوال کا سامنا ہے کیونکہ جس طرح ماضی میں پاکستانی میوزک نے دنیا بھر میں دھوم مچائی تھی اور بھارت ہمیشہ پاکستانی میوزک کا دلدادہ اورمرہون منت رہا ہے ماضی میں بھارت نے بہت سارے پاکستانی گلوکاروں اور موسیقاروں کو پذیرائی دی جن میں استاد نصرت فتح علیخان ، غلام اعلی اور استاد مہدی حسن شامل ہیںاور اب بھی اسی فن کے اعتراف میں انہوں نے راحت فتح علی خان،عاطف اسلم،علی ظفراور دیگر گلوکاروں کو بلا کر ان کی صلاحیتوں کا اعتراف کیا ہے اس لیئے میں نہیں سمجھتا کہ پاکستانی میوزک انڈسٹری زوال کا شکا رہے۔ابراہیم فیض نے مذید بتایاکہ ان کے اب تک 4 البم ریلیز ہوچکے ہیں اور پانچواں البم ان دنوں مکمل ہوچکا ہے جن کے ویڈیوزبنائے جارہے ہیں اور عید کے فوراً بعد ان البمز کو میوزک ورلڈ کمپنی پاکستان سمیت دیگر ممالک میں بھی ریلیز کررہی ہے۔

مزید : کلچر


loading...