آپ ؐ نے اسلام طاقت کے ذریعے نہیں بلکہ محبت اور پیار سے پھیلایا، علامہ اسلم صدیقی

آپ ؐ نے اسلام طاقت کے ذریعے نہیں بلکہ محبت اور پیار سے پھیلایا، علامہ اسلم ...


لاہور (پ ر) ممتاز مذہبی سکالر مفسر قرآن پروفیسر ڈاکٹر علامہ محمد اسلم صدیقی نے درس ہدایت کی نشست میں سورۃ العنکبوت‘‘ کی آیت نمبر53 کا خلاصہ بیان کرتے ہوئے کہا ہے کہ قرآن کریم میں واضح ہے کہ جب بھی اللہ کا عذاب آتا ہے تو اس کا وقت مقرر ہے آپ ؐ نے اسلام طاقت کے ذریعے نہیں پھیلایا بلکہ محبت اور پیار سے پھیلایا۔19 سال میں آپ ؐ پر اڑھائی ہزار لوگ اسلا م لائے جبکہ مکہ فتح کرنے کے وقت 10ہزار آدمی تھے کامیابی کا راستہ صلح ہے اللہ تعالیٰ نے ہر چیز کی حد مقرر کر رکھی ہے فرمایا: اے نبی ؐ آپؐ کی اُمت پر عذاب نہیں آ سکتا، کیونکہ آپ ؐ نے اپنی اُمت کے لئے اللہ تعالیٰ کے حضور بہت دُعائیں کیں انہوں نے مزید کہا کہ دین حق پر غلبہ ہے ۔ آپ ؐ کی محنت سے بدترین کافر بھی اسلام میں داخل ہوئے انہی لوگوں نے عراق اور شام فتح کیا۔ یقیناًجہنم کافروں کو گھیرے گی۔ فرمایا: کہ اگر تم اللہ اور اس کے رسولؐ کے احکامات نہیں مانو گے تو پھر تم پر اس کا عذاب آئے گا۔ جیسا پہلی قوموں پر آیا۔ فرمایا: اے لوگو تم اللہ پر ایمان لاؤ اور اس کے عذاب سے بچو۔ دوسرا عذاب قیامت (جہنم) کا ہے مگر منکرین اس کو نہیں مانتے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں صرف اپنے رب کی بندگی کرنی چاہئے اِسی سے مدد مانگنی چاہئے جو ہمارا کار ساز ہے۔ اللہ کی زمین بہت وسیع اور کشادہ ہے۔ بس تم اللہ پر بھروسہ کرتے رہو اِسی سے مدد مانگتے رہو۔

فرمایا: جو شخص اللہ کے راستے پر ہجرت کرتا ہے۔ دورانِ سفر اگر وہ فوت ہو جاتا ہے وہ جنت میں جائے گا۔ فرمایا: اللہ تمہیں رزق دیتا ہے یہ زمین اور آسمان چاند ستارے سورج یہ سب اللہ ہی کے ہیں، بے شک وہ ہر چیز پر قادر ہے۔ اس نے بارش کے ذریعے زمین کو زندہ کیا اور زمین سے ہی ہماری خوراک پیدا کی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4