آوارہ کتے مار مہم میں بھی کرپشن کا انکشاف

آوارہ کتے مار مہم میں بھی کرپشن کا انکشاف
آوارہ کتے مار مہم میں بھی کرپشن کا انکشاف

  

لاہور (ویب ڈیسک) ضلع لاہور میں آوارہ کتے مار مہم میں بھی کرپشن کا انکشاف ہوا ہے ، ڈھائی کروڑ کے بجٹ سے 10 روز میں 2997ءآوارہ کتے مارنے کا ریکارڈ قائم کردیا گیا جبکہ آوارہ کتوں کا غول درغول شہر میں گشت جاری ہے ۔تفصیلات کے مطابق ضلع لاہور میں آوارہ کتوں کو تلف کرنے کے لئے ڈی او پبلک ہیلتھ لاہور کو رواں سال حکومت پنجاب نے گزشتہ سال کی نسبت دگنے فنڈز جاری کئے جس سے گزشتہ 10 روز میں کرپٹ عملے نے 500 روپے فی کتے کے حساب سے 2997 آوارہ کتے مارنے کا کاغذی ریکارڈ قائم کردیا، روزانہ کی بنیاد پر 300 سے زائد فرضی آوارہ کتے مارنے کی جعلی رپورٹیں تیار کی جاری ہیں اور تمام فنڈز اس جعلی کاغذی کارروائی کی مد میں ہڑپ کیا جارہا ہے۔ قانون کے مطابق استعمال شدہ کارتوس کے خالی خول جمع کروانا ضروری ہے مگر قانون پر عملدرآمد کئے بغیر صرف کتے تلف کرنےکی رپورٹیں بنائی جارہی ہیں جبکہ دوسری جانب شہر بھر کی گلی محلوں میں آوارہ کتے غول درغول گشت میں مصروف ہیں۔

مزید : لاہور