ضمنی الیکشن کے نتائج آنے کے بعدنئی جماعت بنانے کا اعلان مناسب نہیں تھا:فار وق ستار

ضمنی الیکشن کے نتائج آنے کے بعدنئی جماعت بنانے کا اعلان مناسب نہیں تھا:فار وق ...
ضمنی الیکشن کے نتائج آنے کے بعدنئی جماعت بنانے کا اعلان مناسب نہیں تھا:فار وق ستار

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)ایم کیوایم کے رہنما فار وق ستار نے کہا ہے کہ ضمنی الیکشن کے نتائج آنے کے بعدنئی جماعت بنانے کا اعلان مناسب نہیں تھا، کامران ٹیسوری نے فنانشل خدمات کے علاوہ معاملات طے کروانے اور پاک سرزمین پارٹی کوفیل کروانے میں اہم کردار ادا کیا ،اگر ان کو کچھ نہیں دینا تھا تو پھر سعید غنی کے خلاف ان کو الیکشن کیوں لڑوایا گیا؟ مجھے کنوینئر بنائیں یا نہ بنائیں لیکن مسئلہ عزت کا ہے۔

جیونیوز کے پروگرام ”آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ“ میں گفتگو کرتے ہوئے فاروق ستار نے کہا کہ ایم کیو ایم نظریاتی بنے گی، ایم کیو ایم نظریاتی بنانے کا اعلان میں نے ضمنی نتائج کا انتظار کئے بغیر کیاہے ، ضمنی الیکشن کے نتائج کے آنے کے بعد نئی جماعت بنانے کا اعلان مناسب نہیں تھا ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی کا سربراہ کون ہوگا اس کا فیصلہ انٹرا پارٹی الیکشن کرے گا ۔ ایم کیو ایم میں خرابی آگئی ہے ، سات لاکھ ووٹ بینک کو برقرار رکھنے کیلئے میں نے ہرائے جانیوالے الیکشن میں حصہ لیا ،جولوگ میرے ساتھ کھڑے تھے ان کی عزت نہیں جارہی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ اس بار پولنگ ٹھیک ہوئی لیکن نتائج تبدیل کئے گئے۔ ایم کیو ایم اس دفعہ الیکشن سے باہر رہی کیونکہ یہ ہمارا الیکشن تھا ہی نہیں ، میں دھاندلی کا الزام تحریک انصاف پر نہیں لگا رہا کیونکہ پی ٹی آئی نے ہمارا مینڈیٹ نہیں چھینا بلکہ ان کو ہمارا مینڈیٹ دلوایا گیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ یہ ہے کہ مجھے کنوینئر بنائیں یا نہ بنائیں لیکن مسئلہ عزت کا ہے ، فیصلو ں میں حصہ ہو جو ہونا چاہئے ، 2013میں ہم نے اچھا خاصا سبق سیکھ لیا تھا اور یہ بات میں نے خالد مقبول صدیقی کو سمجھانے کی کوشش کی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ایم کیو ایم کے مینڈیٹ کو چار یا چھ سیٹوں پر لانا مقصود تھا تو ایسے میں ڈاکٹر فاروق ستار کی سربراہی میں ایسا کرنا شائد ممکن نہیں تھا ۔کامران ٹیسوری نے فنانشل خدمات کے علاوہ معاملات طے کروانے اور پاک سرزمین پارٹی کوفیل کروانے میں اہم کردار ادا کیا ۔اگر ان کو کچھ نہیں دینا تھا تو پھر سعید غنی کے خلاف ان کو الیکشن کیوں لڑوایا گیا ؟کامران ٹیسوری نے مشکل وقت میں پارٹی کا ساتھ دیا ،میں دس اگست تک مسلسل بہادر آباد جاتا رہاہوں اور اس کے بعد جانا کم کردیا ۔

مزید : قومی