دھنوٹ ردرل ہیلتھ سنٹر کا منصوبہ سرد خانے کی نذر مریضوں کو دھکے

دھنوٹ ردرل ہیلتھ سنٹر کا منصوبہ سرد خانے کی نذر مریضوں کو دھکے

دھنوٹ(نمائندہ خصوصی)دھنوٹ میں رورل ہیلتھ سنٹر کا منصوبہ کھٹائی میں پڑ گیاہے ۔ 50ہزار آبادی کیلئے صرف بنیادی مرکزِ صحت اونٹ کے منہ میں زیرے کے برابر ہے ۔بنیادی (بقیہ نمبر61صفحہ12پر )

مرکزِ صحت دھنوٹ میں سہہ پہرکے بعد مریضوں کو دوائی نہیں دی جاتی ۔جس کی وجہ سے مریضوں کو پرائیویٹ ہسپتالوں یا اتائیوں کے پاس جا کر اپنی جمع پونجی لٹانا پڑتی ہے۔غریب آدمی لودھراں یا بہاولپور جانے کی سکت نہیں رکھتا۔بار بار سیاسی وعدوں کے باوجود رورل ہیلتھ سنٹر کا قیام عمل میں نہیں لایا جا سکا۔ایکسرے یا الٹرا ساؤنڈ تو دور کی بات ہے مختلف ٹسٹوں تک کیلئے بھی مریضوں کو لودھراں یا بہاول پور جانا پڑتا ہے۔ایمرجنسی مریض تو اکثر راستے میں ہی دم توڑ جاتے ہیں۔شہریوں نے بنیادی مرکزِ صحت دھنوٹ کوآرایچ سی کا درجہ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ہیلتھ سنٹر منصوبہ

مزید : ملتان صفحہ آخر