حلقوں کی تعمیر و ترقی ، صوبائی اراکین اسمبلی کو کروڑوں روپے فنڈز پر دینے پر غور ، سکیموں بارے تجاویز طلب

حلقوں کی تعمیر و ترقی ، صوبائی اراکین اسمبلی کو کروڑوں روپے فنڈز پر دینے پر ...

ملتان(سپیشل رپورٹر،نیوزرپورٹر)حکومت پنجاب کی ہدایت پر صوبائی اراکین اسمبلی سے سالانہ ترقیاتی بجٹ2018-19میں نئے ترقیاتی منصوبوں بارے تجاویز طلب کر لی گئیں۔ تمام صوبائی اراکین اسمبلی کو حلقے کی تعمیر و ترقی کے لئے فی کس 10کروڑ روپے فنڈ دینے کا بھی عندیہ دے دیا گیا ۔ ممبران صوبائی اسمبلی سے ان کے حلقے میں جاری ترقیاتی سکیموں بارے بھی تجاویز طلب کرلیں۔ جن علاقون میں سالانہ ترقیاتی سکیموں کو شروع نہیں کیا گیا(بقیہ نمبر20صفحہ12پر )

وہاں ممبران صوبائی اسمبلی کو پرانی سکیمیں جاری رکھنے یا ختم کردینے کا بھی اختیار حاصل ہوگا۔اس سلسلے میں ملتان ڈویژن کی سالانہ ترقیاتی سکیموں 2018-19بارے اجلاس سرکٹ ہاؤس میں منعقد ہوا۔ جس میں ڈویژن بھر کے تمام ممبران صوبائی اسمبلی شریک ہوئے۔ اجلاس کی صدارت صوبائی وزیر ایم پی ڈی ڈی حسین جہانیاں گردیزی نے کی جبکہ معاون خصوصی وزیراعلیٰ پنجاب جاوید اختر انصاری بھی موجود تھے۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر ایم پی ڈی ڈی حسین جہانیاں گردیزی نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو تمام حلقوں کی حالت کا اندازہ ہے۔ وہ ہم سب کے نمائندہ ہیں او رچاہتے ہیں کہ عوام کی ہر سہولت تک سہل رسائی کو ممکن بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ نئے ترقیاتی منصوبوں کو اراکین اسمبلی کی مشاورت سے فائنل کیا جائے گا۔ منصوبوں میں معیار اور شفافیت کو ہر صورت یقینی بنانا حکومت کی ترجیح ہے۔کمشنر ملتان نے کہا کہ حکومت پنجاب نے اراکین اسمبلی کو ترقیاتی منصوبوں پر اعتماد میں لینے کی ہدایت کی ہے۔ جاری ترقیاتی منصوبوں پر کام کی رفتار کو تیز کیا جائے گا جبکہ گزشتہ مالی سال کے جن ترقیاتی سکیموں کو جاری رکھنے بارے ممبران صوبائی اسمبلی اتفاق کریں گے صرف ان کو جاری رکھا جائے گا۔کمشنر ملتان ڈویژن ندیم ارشاد کیانی نے کہا کہ ممبران صوبائی اسمبلی عوام کے نمائندے ہیں یہ عوام کی اصل مشکلات اور ان کے حل سے اچھی طرح واقف ہیں۔اس موقع پر بریفنگ دیتے ہوئے ڈپٹی سیکرٹری ساؤتھ سی ایم آفس جمشید حسین سیال نے بتایا کہ یہ تمام سکیمیں سالانہ ترقیاتی سکیموں کا حصہ ہے۔ جن کو پنجاب کے نئے بجٹ کا حصہ بنایا جائے گا۔ماضی کے جاری بڑے پراجیکٹس کو بھی مکمل کرنا ہے جبکہ نئی سکیموں کو بھی ساتھ لے کر چلنا ہے۔ سالانہ ترقیاتی بجٹ2018-19کے پیش نظر تمام ممبران صوبائی اسمبلی 10کروڑ روپے کے فنڈکی نئی سکیمیں دیں گے جن کو ان کی مشاورت سے فائنل کیا جائے گا۔اجلاس میں صوبائی وزیر جیل خانہ جات زواروڑائچ، نذیر احمد خان، سید خاور علی شاہ، رائے ظہور احمد، نادیہ ضیاء، بیرسٹر وسیم خان بادوزئی، ظہیر الدین علیزئی،میاں عبداللہ طارق، محمد سلیم لابر، ملک مظہر عباس راں، علی رضا خاکوانی، شاہدہ احمد، ایڈیشنل کمشنر سرفراز احمد، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ارشد گوپانگ، ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ طارق بخاری اور دیگر متعلقہ محکموں کے افسران بھی موجود تھے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر