نئے پاکستان کی پہلی ’’ففٹی ‘‘ عوام کیلئے قیامت سے کم نہیں : سردار حسین بابک

نئے پاکستان کی پہلی ’’ففٹی ‘‘ عوام کیلئے قیامت سے کم نہیں : سردار حسین بابک

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ نئے پاکستان کے حکمرانوں نے معاشی قتل عام اور سیاسی افراتفری شروع کر دی ہے اور مہنگائی کا طوفان کھڑا کر کے غریب عوام سے آخری نوالہ تک چھین لیا گیا ہے،پشاور پریس کلب کے سامنے مہنگائی کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نئے پاکستان کے پہلے 50دن عوام کیلئے قیامت سے کم نہیں اور مہنگائی کی چکی میں پسے عوام کی چیخیں نکال دی گئیں،روپے کی قیمت تاریخ کی کم ترین سطح پر آ گئی اور ٹیکسوں میں اضافے و نئے ٹیکسوں کے نفاذ نے عوام کو ذہنی مریض بنا دیا ہے ،سردار حسین بابک نے کہا کہ حکمران انتہائی غیر سنجیدگی اور غیر ذمہ داری کے ساتھ ملکی امور چلا رہے ہیں جس سے روزانہ کی بنیاد پر عوامی مشکلات میں اضافہ ہو رہا ہے ،انہوں نے اس امر پر بھی افسوس کا اظہار کیا کہ تبدیلی سرکار کے پاس نہ ٹیم ہے نہ وژن اور نہ ہی کوئی منصوبہ بندی ، نئے پاکستان کی شروعات انتہائی بھیانک ہے جبکہ حکمرانوں کی نااہلی کا ملبہ عوام پر گر رہا ہے،انہوں نے کہا کہ دوسروں پر الزامات لگانے، گالیاں دینے اور ملک میں سیاسی کلچر کو آلودہ کرنے والوں کی حکومت کی اصلیت سب پر عیاں ہو گئی ہے حکمرانوں کی تمام توجہ گورنر ہاؤسز کھولنے ،بھینسیں بیچنے ،لیٹرینیں صاف کرنے اور سیاسی مخالفین پر کیچڑ اچھالنے پر صرف ہو رہی ہے ، انہوں نے کہا کہ ناتجربہ کار وزرا کو عوامی مسائل کا کوئی ادراک نہیں اور ان کی غیر ذمہ داری سے ملک میں افراتفری کی صورتحال ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر