مردان ،صوبائی حلقہ پی کے 53 کے ضمنی انتخابات کے لئے کل میدان سجے گا

مردان ،صوبائی حلقہ پی کے 53 کے ضمنی انتخابات کے لئے کل میدان سجے گا

مردان (بیورورپورٹ ) صوبائی حلقہ پی کے 53 کے ضمنی انتخابات کے لئے کل میدان سجے گا ، اے این پی اور تحریک انصاف کے درمیان کانٹے کارن پڑے گا ،سیکورٹی اہلکار آج پولیس سٹیشنز سنبھالیں گے ، الیکشن کمیشن کی طرف سے رات گئے انتخابی سامان کی تقسیم کا عمل بھی مکمل کرلیاگیا حلقے میں حلقے میں کل131پولنگ سٹیشنز114انہتائی حساس جبکہ 17کو حساس قراردیاگیا ہے، سیکورٹی کے لئے1500پولیس اہلکار ڈیوٹی انجام دیں گے اے این پی کے صوبائی صدر امیرحیدرخان ہوتی کی خالی کردہ صوبائی اسمبلی کی سیٹ پی کے 53پر کل اتوار کو ضمنی انتخابات ہورہے ہیں اس حلقے میں رجسٹرڈ ووٹوں کی تعداد 1,52,328ہے جن میں مردوں کے ووٹ 88020اور64306خواتین ووٹرز شامل ہیں حالیہ عام انتخابات میں سابق وزیراعلیٰ امیرحیدرخان ہوتی نے 29208ووٹ لے کر کامیابی حاصل کی تھی جبکہ اس کے قریب ترین حریف تحریک انصاف کے امیدوار عمر فاروق کاکاخیل تھے جنہوں نے 22485ووٹ حاصل کئے تھے اس دفعہ ہونے والے ضمنی انتخابات میں تحریک انصاف کے ٹکٹ پر عبدالسلام آفریدی جبکہ اے این پی کی طرف سے احمدبہادرخان مقابلے کے میدان میں ہیں تین امیدوار جن میں مصورخان ،میجر (ر) اکبر شاہ اور ولایت خان شامل ہیں آزاد حیثیت سے قسمت آزمازئی کررہے ہیں تاہم اصل ٹاکرا پی ٹی آئی اور اے این پی کے امیدواروں کے درمیان ہوگا اے این پی کو اپوزیشن کی تمام جماعتوں کی حمایت بھی حاصل ہے امیداروں نے اپنے اپنے آخری جلسے منعقد کرکے بھرپور طاقت کا مظاہرہ کیا یہ حلقہ شہر ی علاقوں پر مشتمل حلقہ ہے ، اس حلقے میں کل11یونین کونسلز شامل ہیں جن میں باغ ارم ،بکٹ گنج ، مہو ڈھیر ی ،مردان خاص،چمتار،کس کورونہ ، منگا،بغدادہ ،ڈاگئی ، خزانہ ڈھیری اوربجلی گھر شامل ہیں اس حلقے میں کل پولنگ سٹیشنو ں کی تعداد131 ہے جن میں 114انتہائی حساس اور 17حساس پولنگ اسٹیشن جن میں مردوں کے 53خواتین کی49جبکہ کمبائنڈ 29پولنگ اسٹیشنز شامل ہیں پولنگ سٹیشنوں میں پندرہ سو پولیس نفری ڈیوٹی دیں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر