قصور میں ننھی بچیوں کو قتل کرنیوالے عمران کے بلیک وارنٹ جاری 17اکتوبر کو پھانسی دینے کا حکم

قصور میں ننھی بچیوں کو قتل کرنیوالے عمران کے بلیک وارنٹ جاری 17اکتوبر کو ...

لاہور(نامہ نگار )انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج سجاداحمد نے قصور کی ننھی زینب کے قاتل عمران کے ڈیتھ وارنٹ جاری کردیئے۔مجرم عمران کو کوٹ لکھپت جیل میں 17اکتوبرکو صبح 5بجے پھانسی دی جائے گی،عدالتی حکم میں کہا گیا ہے کہ مجرم کو تختہ دار پر اْس وقت تک لٹکا رہنے دیا جائے جب تک اس کا آخری سانس نہ نکل جائے۔انسداد دہشت گردی کی عدالت نے مجرم عمران خان کوزینب کو اغوا کرکے جنسی تشدد کا نشانہ بنانے اور قتل کرکے اسے پھینک دینے پر 4بار سزاے موت ایک بار عمرقید اور ایک جرم میں 7سال قید کی سزا سنائی تھی، یہ سزا 20مارچ 2018ء کو سنائی گئی تھی،جس کے بعد مجرم نے لاہورہائی کورٹ اور سپریم کورٹ فیصلے کے خلاف اپیل کی جو مسترد کردی گئی ،اس کے بعد مجرم نے صدرپاکستان سے رحم کی اپیل کی جو مسترد کردی گئی ۔تینوں اپیلیں مسترد ہونے پر وقافی حکومت نے سپرنٹنڈنٹ جیل کوٹ لکھپت کو آگاہ کیاجس پر سپرنٹنڈنٹ نے عدالت میں بلیک وارنٹ جاری کرنے کی درخواست دی جس پر عدالت نے مجرم کے ڈیتھ وارنٹ جاری کرتے ہوئے 17اکتوبر کو کوٹ لکھپت جیل میں اسے پھانسی دینے کا حکم جاری کردیاہے۔ عدالت نے اپنے حکم میں لکھا ہے کہ مجرم کو تحتہ دار پر اْس وقت تک لٹکا رہنے دیا جائے جب تک اس کا آخری سانس نہ نکل جائے۔مجرم کے خلاف قصور کی ننھی زنیب کیس کے بعد قصور پولیس نے ہی 6 مزیدمقدمات بداخلاقی اور تشدد کے دائر کئے، جن میں عدالت نے سماعت کرکے ان کیسوں میں بھی مجرم کو سزاے موت کی سزا سنائی جبکہ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے مجرم عمران علی کو نورفاطمہ، مہرین، لائبہ عمر، کائنات بتول اور عائشہ آصف ایمان فاطمہ سے بداخلاقی کے بعد قتل کرنے کے مقدمات میں بھی سزاے موت وجرمانے کی سزا سنائی ہے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول