بزنس کمیونٹی معاشی صورتحال سے خاصی پریشان ہے،ملک شاہد سلیم

بزنس کمیونٹی معاشی صورتحال سے خاصی پریشان ہے،ملک شاہد سلیم

راولپنڈی (سٹی رپورٹر)بزنس کمیونٹی موجودہ معاشی صورتحال سے خاصی پریشان ہے تاجر برادری اور تنظیموں کے ساتھ روابط بڑھائے جا رہے ہیں تاکہ مشترکہ لائحہ عمل اختیار کیا جائے، مہنگائی کی لہر کو قابو پانا ہو گا ، گیس بجلی اور پٹرولیم کی قیمت کم کرنی ہو گی ہمارا مطالبہ ہے کہ اقتصادی مشاورتی کونسل (ای اے سی)میں چیمبر آف کامرس اور تاجر برادری کو نمائندگی دی جائے، بزنس کمیونٹی اہم سٹیک ہولڈر ہے ان خیالات کا اظہار راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدرملک شاہد سلیم نے ایک مقامی ہوٹل میں ایف پی سی سی آئی کے اعزاز میں دیئے گئے ظہرانے سے خطاب کرتے ہوئے کیا جس میں فیڈریشن کے صدر غضنفر بلور، یونائیٹڈ بزنس گروپ کے پیٹرن انچیف ایس ایم منیر اور چیئرمین افتخار علی ملک، کوآرڈینیٹر ملک سہیل، راولپنڈی چیمبر کے سینئر نائب صدر بدر ہارون ، نائب صدر فیاض قریشی، گروپ لیڈر سہیل الطاف، سرحد چیمبر، گجرات، جہلم اور چکوال چیمبر کے عہدیداران، ویمن چیمبر کی صدر سمیت مجلس عاملہ کے اراکین اور سابق صدور اور اہم کاروباری شخصیات نے شرکت کی ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلور نے اپنے خطاب میں کہا کہ اس وقت ملک معاشی غیر یقینی صورتحال کا شکار ہے موجودہ معاشی عدم استحکام اور معاشی چیلنجز لمحہ فکریہ ہیں جس سے تاجر طبقہ براہ راست متاثر ہو رہا ہے۔تمام چیمبرز کی مشاورت کے ساتھ حکومت کو سفارشات بھیجی جائیں گروپ لیڈر سہیل الطاف نے کہا کہ بجلی، گیس اور ڈالر کی قیمت میں ہو شربا اضافے سے کاروبار پر منفی اثر پڑے گا، کاروباری لاگت بڑھے گی مہنگائی کا سیلاب آئے گا جس سے غریب طبقہ متاثر ہو گا ٹیکس دینے والے کو عزت دی جائے پہلے سے ٹیکس دینے والوں کو ٹیکس کولیکشن اور آڈٹ کے نام سے ہراساں نہ کیا جائے حکومت ٹیکس نیٹ میں اضافہ کرے معاشی پالیسی سازی میں ٹریڈ باڈیز کو شریک کیا جائے، انہوں نے افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اہم کونسل کی تشکیل میں نہ ہی فیڈریشن سے نمائندگی لی گئی اور نہ ہی چیمبر آف کامرس سے کسی کو شامل کیا گیا، انجمن تاجران کے کسی نمائندے کو بھی جگہ نہیں ملی حکومت تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے قومی مسائل کے حل اور معاشی استحکام کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھائے تاکہ معاشی حالات بہتری کی طرف جا سکیں۔ اسی طر ح روپے کی قدر میں کمی تشویش ناک ہے اسٹیٹ بنک مانیٹری نظام بہتر کرے ایسے اقدامات اٹھائے جائیں تاکہ روپے کی قدر بحال ہو اور ایکسپورٹ میں اضافہ ہواس موقع پر ایس ایم منیر اور افتخار علی ملک نے اپنے خطاب میں تجارتی سرگرمیوں کے فروغ کے لیے راولپنڈی چیمبر کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ برآمدات کے اہداف صرف نجی شعبے کو مراعات دے کر ہی پورے کیے جا سکتے ہیں انہوں نے کہا کہ ملک میں معاشی غیر یقینی کی فضا کا خاتمہ ہو نا چایئے تاکہ سرمایاکار کا اعتماد بحال ہو سکے.

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر