چیف جسٹس ثاقب نثار نے رواں سال کتنے مقدمات کے فیصلے کیے ؟ وہ کام ہوگیا جو آج تک کوئی چیف جسٹس نہ کرسکا، ناقدین کے منہ بند ہوگئے

چیف جسٹس ثاقب نثار نے رواں سال کتنے مقدمات کے فیصلے کیے ؟ وہ کام ہوگیا جو آج ...
چیف جسٹس ثاقب نثار نے رواں سال کتنے مقدمات کے فیصلے کیے ؟ وہ کام ہوگیا جو آج تک کوئی چیف جسٹس نہ کرسکا، ناقدین کے منہ بند ہوگئے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار پر تنقید کی جاتی ہے کہ وہ ایسے کام کر رہے ہیں جو ان کے کرنے کے نہیں ہیں اور اس وجہ سے سپریم کورٹ پر مقدمات کا بوجھ بڑھتا جارہا ہے، لیکن اب انکشاف ہوا ہے کہ چیف جسٹس ثاقب نثار پاکستان کی تاریخ میں سب سے زیادہ کیسز نمٹانے والے چیف جسٹس بن چکے ہیں۔

جمعہ کو ذیلی عدالتوں میں جلد کیسز نمٹانے کے حوالے سے کیس کی سماعت کے دوران یہ انکشاف ہوا کہ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کے بینچ نے رواں سال اب تک 7 ہزار کیسز نمٹائے ہیں۔ سپریم کورٹ کی تاریخ میں کسی بھی چیف جسٹس نے آج تک اتنے کیسز کے فیصلے نہیں کیے جتنے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کرچکے ہیں۔ اس کے علاوہ بھی چیف جسٹس میاں ثاقب نثار سپریم کورٹ کے انسانی حقوق سیل میں آنے والی ہزاروں درخواستیں نمٹا چکے ہیں جن کے اعدادو شمار فی الحال سامنے نہیں آسکے ہیں۔چیف جسٹس کی عدالت میں ہر روز 25 سے 30 کیسز روزانہ لگے ہوتے ہیں اور خواہ رات کو جو بھی ٹائم ہوجائے چیف جسٹس اس وقت تک نہیں اٹھتے جب تک تمام مقدمات کی سماعت مکمل نہیں ہوجاتی۔

نجی ٹی وی سے وابستہ سپریم کورٹ رپورٹر صدیق جان کا کہنا ہے کہ چیف جسٹس نے کیسز نمٹانے کے علاوہ بہت سے از خود نوٹسز بھی لیے ہیں جن سے قوم کو براہ راست فائدہ پہنچا ہے اور مظلوموں کی داد رسی ہوئی ہے۔ صدیق جان نے کہا کہ ان کے علم میں چیف جسٹس ثاقب نثار کے 69 اقدامات ایسے ہیں جن سے براہ راست پوری قوم اور مظلوم لوگوں کو فائدہ ہوا ہے۔

مزید : قومی /جرم و انصاف /علاقائی /اسلام آباد