ن لیگ کے لئے آئی ایم ایف کے پاس جانے کے علاوہ آپشن نہیں تھا،اسحاق ڈارکااس میں قصورنہیں: اسد عمر 

ن لیگ کے لئے آئی ایم ایف کے پاس جانے کے علاوہ آپشن نہیں تھا،اسحاق ڈارکااس میں ...
ن لیگ کے لئے آئی ایم ایف کے پاس جانے کے علاوہ آپشن نہیں تھا،اسحاق ڈارکااس میں قصورنہیں: اسد عمر 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آ ن لائن) وزیرخزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ ن لیگ کے لئے آئی ایم ایف کے پاس جانے کے علاوہ آپشن نہیں تھا،اسحاق ڈارکااس میں قصورنہیں ہے، 7 نومبرکوآئی ایم ایف ٹیم پاکستان آئے گی۔

تفصیلات کے مطابق پریس کانفرنس سے گفتگو کرتے ہوئے اسدعمر کا کہناتھا کہ کبھی نہیں کہاکہ آئی ایم ایف کے پاس نہیں جائیں گے، آئی ایم ایف کی جانب سے کڑی شرائط عائدنہیں ہوئیں،اگر شرائط ماننے والی نہ ہوئیں تونظرثانی کرسکتے ہیں جبکہ ہم سی پیک کی وجہ سے آئی ایم ایف کے پاس نہیں جارہے۔ آئی ایم ایف نے سی پیک کی شفافیت پر بات نہیں کی،آئی ایم ایف کاقرضہ سی پیک کی ادائیگی پرخرچ نہیں ہوگا اور چین کے قرضوں کی تفصیلات آئی ایم ایف کودینے میں کوئی حرج نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی،(ن) لیگ کے ادوارمیں آئی ایم ایف سے معاہدے ہو ئے، پاکستان 18 بار آئی ایم ایف کے پاس گیا جبکہ 7 نومبرکوآئی ایم ایف ٹیم پاکستان آئے گی ، اس وقت زرمبادلہ کے ذخائر 8 ارب ڈالرتک آگئے ہیں جبکہ سابق حکومت میں زرمبادلہ کے ذخائر 18ارب ڈالرتھے۔آئی ایم ایف جانے کی بڑی وجہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ہے، ہرماہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 2ارب ڈالربڑھ رہاہے، کیونکہ بیل آؤٹ پیکج معیشت کے لئے ناگزیرہے۔

اسد عمر کا کہناتھا کہ چین نے کہاقرض شفاف طریقے سے لیاگیا اور قرضوں کی واپسی کوچین کیساتھ جوڑنے کا امریکی الزام درست نہیں، ہم نے چین کو صرف 30 کروڑڈالراگلے 3 سال میں دینے ہیں جبکہ دوست ممالک کیساتھ بھی بات چیت جاری ہے۔ انہوں نے مزید کہاکہ ایران پرامریکی پابندیوں کی وجہ سے تیل کی قیمتیں بڑھیں اور تیل کی قیمتیں بڑھنے سے پا کستان کومزیدنقصان ہوگا۔

مزید : قومی