پشاور اور اندرونی شہر میں بجلی کم وولٹیج اور ٹرپنگ سے مشکلات

  پشاور اور اندرونی شہر میں بجلی کم وولٹیج اور ٹرپنگ سے مشکلات

  

پشاور(سٹی رپورٹر)پشاو رکے اندرون شہر سمیت مضافاتی علاقوں میں مختلف بجلی فیڈرز پر اوور لوڈ کے باعث ٹرپنگ اور کم وولٹیج میں بجلی آنا معمول بن گیا ہے۔اندرون شہریکہ توت، ہشتنگری، کریم پورہ، پھندو روڈ، ہزار خوانی، نادرن بائی پاس سمیت مضافاتی علاقوں بڈھ بیر، متنی، اضاخیل، متھرا، ادیزئی اورچمکنی سمیت دیگر علاقوں میں بجلی کے کم وولٹیج اور فیڈرز کی ٹرپنگ میں اضافہ ہو چکا ہے جس کے باعث عوا م کو شدید مشکلات کاسامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ان کے مطابق ایک جانب بجلی کے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ میں بھی اضافہ ہوگیا ہے، تو دوسری طرف ہر گھنٹہ میں 10سے 15منٹ کے لئے بجلی ٹرپنگ کے باعث منقطع کی جاتی ہے جبکہ پھندو روڈ اور یکہ توت کے علاقوں میں 6سے8گھنٹے جبکہ ہزار خوانی فیڈر پر10گھنٹے تک اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا شیڈول بنایا گیا ہے ہزار خوانی میں ہر گھنٹہ بعد ایک گھنٹہ کے لئے بجلی منقطع کردی جاتی ہے۔ ان کے مطابق 10گھنٹے تک اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے باوجود فیڈر پر ٹرپنگ کے باعث بھی روزانہ کی بنیاد پر ہر گھنٹہ میں 10سے 20منٹ بجلی نہیں ہوتی جبکہ ہر ایک گھنٹہ میں صرف 40منٹ کے لئے بجلی فراہم کی جاتی ہے کبھی کبھار میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے۔ دوسری جانب رحمان بابا گرڈ سٹیشن میں ڈیوٹی پر مامور پیسکو حکام کا کہنا ہے کہ ہزار خوانی بجلی فیڈر پر لوڈ زیادہ ہونے کی وجہ سے ہر گھنٹہ میں ایک سے دو بار فیڈر ٹرپ کرجاتا ہے۔ اس حوالے سے وزیر اعلیٰ محمود خان‘ پیسکو کے اعلیٰ حکام اور دیگر متعلقہ اداروں کو بار بار کہنے کے باوجود فیڈر کو نہیں بدلا جارہا۔ پیسکو حکام کے مطابق بجلی فیڈر بار بار مرمت کے باعث صحیح طرح کام نہیں کر رہا اور لوڈ برداشت نہیں کرسکتا جس کے باعث ٹرپنگ کا مسئلہ سامنے آرہا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -