12 اکتوبر کو جمہوریت کا ”یوم سیاہ“منایا جاتا ہے،اختیارو لی

12 اکتوبر کو جمہوریت کا ”یوم سیاہ“منایا جاتا ہے،اختیارو لی

  

پشاور(سٹی رپورٹر)پاکستان مسلم لیگ ن کے صوبائی ترجمان اختیار ولی نے کہا ہے کہ 12 اکتوبر کو جمہوریت کا یوم سیاہ کے طور پرمنا یا جا تا ہے اسی دن ظالم آمریت نے عوامی مینڈیٹ اور جمہوریت پر زبردستی قبضہ کر کے جمہوریت کا جنازہ نکالا،اج ایک بار پھر سلیکٹیڈ حکمران نے دوسروں کے ایما پر جمہوریت پسند رہنماؤں کو بے گناہ اور جعلی اسکینڈل کے تحت مقدمات بنا کر پابند سلاسل کردیا گیا ہے قائد جمہوریت نواز شریف پر پانامہ کے بے بنیاد الزامات کی وجہ سے گرفتار کرکے کچھ ثابت نہ کیا گیا تو پھر اقامہ کا بہانہ بنا کر گرفتار کردیا گیا،مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ میں میں مسلم لیگ ن آپنے قائد کی حکم کے مطابق 27اکتوبر کو اسلام آباد کا رخ کرکے نااہل،جعلی اور سلیکٹیڈ حکومت کا خاتمہ کرکے دم لینگے نیازی اپنے وعدے کے مطابق کنٹینرز اور کھانا مہیا کرنے کے بجاے دھمکیوں پر اترآئے ہیں۔گزشتہ روز پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا جبکہ اس موقع پر ایم پی اے ثوبیہ شاہد اور دیگر پارٹی رہنما بھی موجود تھے اختیار ولی کا کہنا تھا کہ ملک پر نااہل حکومت مسلط کیاگیا ہے جو کہ سیاسی نابالغ ہے جبکہ نیازی اور انکے حواریوں سے ناجائز کام لیا جا تا ہے جو کہ ملک اور عوام کے مفاد میں نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ حکومت نیب کے زریعے سیاستدانوں کی پگڑیاں اچھالا جاتا ہے گزشتہ روز پارٹی کے رہنما حاجی نواب خان پر جھوٹے الزامات لگا کر پولیس کے زریعے گرفتار کر کے ہری پور جیل بھیجا گیا جبکہ اس کی غلطی یہ تھی کہ انہوں نے پارٹی کا جھنڈا گھر پر لہرایا تھا۔انہوں نے کہاکہ عمران خان نے نیب کے زریعے مریم نواز،شاہد خاقان عباسی،رانا ثنائاللہ اور دیگر قائدین کو گرفتار کیا لیکن آج تک ان پر ایک انا بھی ثابت نہ ہوسکا۔انہوں نے کہاکہ عمران خان پاکستان میں بھی سری نگر جیسا حالت ہونا بنانا چاہتے ہیں کیونکہ اب وہ اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے آزادی مارچ میں لاکھوں افراد سے خائف نظر آرہا ہے اور بہت جلد وہ اقتدار سے جانے والے ہیں۔انہوں نے نیب سے مطالبہ کیا ہے کہ آپ کو صرف ملک میں مسلم لیگ ن نظر آرہا ہے جبکہ صوبے میں پرویز خٹک،مالم جبہ اسکینڈل میں ملوث محمود خان اور بی آر ٹی میں اربوں روپے کے کرپشن نظر نہیں آرہے ہیں عوام نے نیب کے مکروہ چہرہ بھی دیکھ لیا ہے۔انہوں نے کہاکہ ہم مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ میں بھر پور شرکت کرینگے اور جعلی حکومت کا خاتمے تک اسلام آباد میں رہیینگے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -