بینک الفلاح اور منی گرام میں ترسیلات زر کی وصولی کامعاہدہ

بینک الفلاح اور منی گرام میں ترسیلات زر کی وصولی کامعاہدہ

  

لندن(پ ر)بینک الفلاح منی گرام کے ساتھ پاکستان میں ترسیلات زر کے لئے نئی اکاؤنٹ ڈیپازٹ سروس متعارف کرانے پر خوشی محسوس کرتا ہے جس کے ذریعے اب بیرون ملک پاکستانی ملک میں کسی بھی بینک اکاؤنٹ میں ترسیلات زر کے فوری ڈیپازٹ کے لئے منی گرام کو استعمال کرسکتے ہیں۔ اس نئی سروس کے آغاز سے اسکی ایک دہائی پر مبنی طویل شراکت داری مزید مستحکم ہوگئی ہے اور اسکے نتیجے میں بینک الفلاح پاکستان میں صف اول کے بینکنگ پارٹنر کے طور پر بڑے پیمانے پر ادائیگی کے لئے ترسیلات زر کی مد میں منی گرام کی سہولت کے ذریعے خدمات فراہم کر رہا ہے۔ اس نئی سروس کے آغاز سے بینک الفلاح کی حکمت عملی کو جدید ترین ٹیکنالوجی کی وجہ سے سبقت حاصل ہوگی جس کے نتیجے میں بیرون ملک پاکستان اپنے وطن زیادہ آسانی اور باسہولت انداز سے ترسیلات زر بھیج سکیں گے۔ 200 ممالک میں پھیلے ہوئے منی گرام کے صارفین اس نئی سروس کو استعمال کرکے، وقت اور توانائی کے ساتھ بین الاقوامی بینک کے ذریعے اپنے وطن بھیجی جانے والی ترسیلات زر سے اکثر منسلک بھاری فیسوں سے بھی بچ سکتے ہیں۔ برطانیہ میں اس نئی سروس کے آغاز کے موقع پر بینک الفلاح کے گروپ ہیڈ برائے کارپوریٹ، انویسٹمنٹ بینکنگ اینڈ انٹرنیشنل بزنس ڈیویژن بلال اصغر نے کہا، "پاکستان کے لئے خصوصی طور پر منی گرام کی اکاؤنٹ ڈیپازٹ سروس کی شروعات پر ہم بہت پرجوش ہیں۔ فنانشل ٹیکنالوجی میں بہترین معیار او رقائدانہ کردار کے ساتھ بینک الفلاح نے ایک بار پھر ثابت کردیا ہے کہ وہ کامیابی کے راستے پر گامزن ہے۔ ہم پاکستان میں ترسیلات زر اقدام (پی آر آئی) کی ٹیم کے ساتھ کام جاری رکھیں گے تاکہ عالمی سطح پر اپنی کوریج میں اضافہ لانے کے ساتھ پاکستان میں ترسیلات زر بھیجنے کے لئے مزید جدت انگیز اور باسہولت خدمات پیش کریں۔"

بینک الفلاح کی گروپ ہیڈ برائے ریٹیل بینکنگ مہرین احمد نے اس پیش رفت پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا، "بینک الفلاح نے ہمیشہ کسٹمرکی سہولت کو سب سے زیادہ اور اولین ترجیح دی ہے۔ ہم ہمیشہ اپنی خدمات میں مزید بہتری لانے کے لئے کوشاں رہتے ہیں اور منی گرام کے ساتھ اشتراک پر خوش ہیں جس کے ذریعے بین الاقوامی ترسیلات زر پاکستان میں (تمام)بینک اکاؤنٹ ہولڈرز کے پاس زیادہ باسہولت انداز سے پہنچ سکیں گی۔"

منی گرام کے چیف ریونیو آفیسر گرانٹ لائنز نے کہا، "پاکستان خاص طور پر ترسیلات زر کی وصولی کے اعتبار سے اہم مارکیٹ ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ یہاں اپنی خدمات کو مزید باسہولت اور قابل رسائی بنائیں۔ بینک الفلاح وسیع اقسام کی مالیاتی خدمات کی فراہمی کے لئے مشہور ہے اور ہم اس شراکت داری پر کافی پرجوش ہیں۔ اس کی بدولت بینک الفلاح لوگوں کے لئے اپنے دوستوں اور اہل خانہ کو رقم بھیجنے کا عمل آسان بناسکے گا اور وہ پاکستان کی معاشی ترقی میں وسیع انداز سے حصہ بن سکیں گے۔"

بینک الفلاح کے ہیڈ آف فنانشل انسٹی ٹیوشنز، ہوم ریمیٹنسز اینڈ انٹرنیشنل بزنس فیصل راشد نے کہا، "اس اشتراک پر ہم انتہائی خوش ہیں۔ منی گرام کی جانب سے ہمیں پارٹنر منتخب کرنے سے ہمارے سسٹم اور پلیٹ فارمز کی خوبیاں ظاہر ہوتی ہیں اور بینک الفلاح کو اس پر فخر ہے۔ یہ لازمی سی بات ہے کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے پاکستان ترسیلات زر اقدام (پی آر آئی) نے ملک میں ترسیلات زر کے فروغ کے لئے نمایاں کردار ادا کیا ہے، بینک الفلاح کو ابتداء سے ہی اس اقدام کا حصہ بننے پر فخر ہے۔ یہ معاہدہ پاکستان ترسیلات زر اقدام (پی آر آئی) کی ٹیم کی مکمل معاونت اور تعاون کے بغیر ممکن نہیں ہوسکتا تھا۔"

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق مالی سال 2019 کے دوران بیرون ملک پاکستانیوں نے 21.84 ارب ڈالر بھیجے جو مالی سال 2018 کے مقابلے میں 9.7 فیصد زیادہ ہے جس کی بدولت پاکستان دنیا میں ترسیلات زر وصول کرنے والا دنیا کا ساتواں بڑا ملک بن گیا ہے۔ نئی بینک ڈیپازٹ سروس سے مارکیٹ کو استحکام میں مدد ملے گی۔ اس نئی سروس کی بدولت پاکستان میں تمام بینک اکاؤنٹ ہولڈرز بیرون ملک رہنے والے پاکستانیوں کی طرف سے بھیجی جانے والی رقومات تیزرفتار اور آسان انداز سے وصول کرسکیں گے۔

مزید :

کامرس -رائے -